احمد بشیر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
احمد بشیر
معلومات شخصیت
پیدائش 24 مارچ 1923  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
گوجرانوالہ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 25 دسمبر 2004 (81 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لاہور  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ صحافی،  فلم ہدایت کار،  ادبی تنقید نگار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات

معروف دانشور، مصنف اور نقاد۔ ممتاز مفتی اور اشفاق احمد کے دوست رہے۔ کئی کتب تصنیف کیں۔ جن میں خاکے اور ناول وغیرہ شامل ہیں۔ ان کی مشہور تصانیف میں خاکوں پر مبنی کتاب ’جو ملے تھے راستے میں‘ اور ’ دل بھٹکے گا‘ شامل ہیں۔ ناول ’ منزل منزل دل بھٹکے گا‘ اور انگریزی ناول ’ رقص کرتے بھیڑیے ‘(ڈانسنگ وولف)شامل ہیں۔ خود انہوں نے ایک فلم نیلا پربت بنائی تھی جو کامیاب نہیں ہو سکی تھی۔ ان کی دو بیٹیاں سنبل اور نیلم بشیر مصنفہ ہیں جب کہ ایک بیٹی بشریٰ انصاری ٹی وی کی معروف فنکارہ ہیں۔ اردو اور پنجابی کی ممتاز ادیبہ اور سفرنامہ نگار پروین عاطف، احمد بشیر کی ہمشیرہ تھیں۔ کینسر کے عارضے کی وجہ سے احمد بشیر کا لاہور میں انتقال ہوا۔

حوالہ جات[ترمیم]