احمد بن سعید

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
احمد بن سعید
معلومات شخصیت
پیدائش 20 مارچ 1694[1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ادم، عمان  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 15 دسمبر 1783 (89 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رستاق، عمان  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد سعید بن احمد،  سلطان بن احمد  ویکی ڈیٹا پر (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
خاندان آل سعید  ویکی ڈیٹا پر (P53) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دیگر معلومات
پیشہ امام  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

احمد بن سعید البوسعیدی (1710ء - 15 دسمبر 1783ء) آل سعید خاندان کے عمان کے پہلے حکمران تھے۔ وہ اس دور میں اقتدار میں آئے جب عمان خانہ جنگی کی وجہ سے تقسیم ہو گیا تھا، اور فارسیوں نے ملک کے بڑے حصوں پر قبضہ کر لیا تھا۔ امام کی حیثیت سے ان کی طویل حکمرانی کے دوران ملک نے ترقی کی اور خلیج فارس میں اپنا اہم مقام دوبارہ حاصل کیا۔

ابتدائی سال[ترمیم]

احمد بن سعید بن محمد بن خلف بن سعید البوسعیدی 1710ء میں آدم، عمان میں پیدا ہوئے، سعید بن محمد البوسیدی کے بیٹے تھے۔[2] احمد بن سعید کا تعلق عمان کے اندرونی علاقے سے تعلق رکھنے والے ایک چھوٹے سے حناوی قبیلے البو سعید سے تھا۔[3]

آل یعرب کے عمان کے چھٹے امام سیف بن سلطان دوم تھے، جو خانہ جنگی کے دور میں برسراقتدار آئے اور اپنے خوش مزاج طرز زندگی کی وجہ سے مقبولیت کھو بیٹھے۔ سیف نے فارس سے فوجی مدد طلب کی اور 1737ء میں نادر شاہ کی قیادت میں فارسی فوجیں پہنچیں۔ انہوں نے ملک کو فتح کرنا شروع کیا۔[4] فارسی 1738ء میں چلے گئے لیکن 1742ء سے 1744ء تک واپس آئے۔[5] 1742ء تک ملک کے بیشتر حصے پر فارسیوں کا کنٹرول تھا۔ سیف کو ایک ضیافت میں نشے کی حالت میں مسقط میں الجلالی اور المیرانی کے کلیدی قلعوں کو لے جانے کا فریب دیا گیا تھا۔ اس کے بعد جلد ہی اس کا انتقال ہو گیا، جو اس کے خاندان کا آخری امام تھا۔ فارسیوں نے مسقط پر قبضہ کر لیا اور پھر شمال میں صحارا پر حملہ کیا۔[4] نو ماہ کے محاصرے کے بعد احمد بن سعید نے باعزت ہتھیار ڈالنے کے لیے بات چیت کی۔ فارسی کمانڈر تقی خان نے خراج کی ادائیگی کے بدلے میں اسے صحارا اور برکاء کا گورنر بنانے کی تصدیق کی۔[4]

احمد بن سعید کو ملک کو فارس کے قابضین سے آزاد کروانے والے شخص کے طور پر وسیع پیمانے پر عوامی حمایت حاصل تھی۔

خاندان[ترمیم]

احمد بن سعید کے سات بیٹے اور تین بیٹیاں تھیں۔ ان کے بڑے بیٹے ہلال کو نابینا ہونے کی وجہ سے جانشینی کے لیے نااہل قرار دیا گیا تھا۔ ان کے دوسرے بیٹے سعید بن احمد ان کے وارث تھے۔ اس کا تیسرا بیٹا قیس بن احمد بعد میں سہر کا گورنر بنا۔ اس کے چوتھے اور پانچویں بیٹے سیف اور سلطان بن احمد تھے، جو ان کی چوتھی بیوی کے دونوں بچے تھے، جو ظہریہ کے شیخ محمد بن ناصر الجبری الغفیری کی بہن تھیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://www.omaninfo.om/module.php?m=pages-showpage&CatID=161&ID=780
  2. Buyers 2012, p. 3.
  3. Kechichian 1995, p. 29.
  4. ^ ا ب پ Thomas 2011, p. 223.
  5. Davies 1997, p. 52.
شاہی القاب
ماقبل  عمان کے حکمرانوں
1744--1783ء
مابعد