احمد بن طولون

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
احمد بن طولون
(عربی میں: أحمد بن طولون ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
معلومات شخصیت
پیدائش 20 ستمبر 835  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بغداد  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 14 مئی 884 (49 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Black flag.svg دولت عباسیہ
Flag of Egypt.svg مصر[1]  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
خاندان طولون شاہی سلسلہ  ویکی ڈیٹا پر (P53) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دیگر معلومات
پیشہ فوجی افسر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

والئی مصر۔ اس کا باپ طولون ایک ترک غلام تھا جسے خلیفہ مامون الرشید نے عباسی فوج میں شامل کر لیا تھا۔ احمد سامرا کی فوجی چھاونی میں پیدا ہوا۔ فوجی تربیت پانے اور علم کی تکمیل کے بعد بیس سال کی عمر میں مصر کے والئی امیر بایکباک کی فوج میں شامل ہوا۔ 868ء میں عباسی خیلفہ مہدی کے عہد میں مصر کا والی مقرر ہوا اور 871ء میں مصر کا خود مختار فرمانروا بن گیا۔ 877ء میں اس نے طرسوس پہنچ کر رومیوں کو شکست دی اور شام پر بھی قبضہ کر لیا۔ برقہ سے فرات تک اس کی مملکت وسیع ہوچکی تھی۔ 904ء تک اس کا خاندان بر سر اقتدار رہا۔ بڑا بہادر، منصف مزاج، مردم شناس، علم دوست اور فیاض حکمران تھا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://libris.kb.se/katalogisering/dbqsm9wx0cff71w — اخذ شدہ بتاریخ: 24 اگست 2018 — شائع شدہ از: 25 ستمبر 2012