اردو نظم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اردو زبان
اردو زبان

یہ مضمون اردو زبان پر مضامین کا تسلسل ہے
اصناف ادب

اردو ادب کی دو اصناف ہیں، اردو نثر اور اردو نظم یعنی اردو شاعری۔ پھر اردو شاعری کی کئی قسمیں ہیں جن میں نظم، غزل، مثنوی، قصیدہ، مرثیہ، رباعی، مخمس، مسدس، مثمن، قطعہ، نعت وغیرہ شامل ہیں۔ ان میں سب سے مشہور صنف غزل ہے جسے ہر خاص و عام نے قبول کیا اور سراہا ہے مگر اردو شاعری کی سب سے وسیع قسم اردو نظم ہے۔ اردو نظم میں بہت زیادہ تجربے کیے گئے ہیں اور یہی اس کی وسعت کی دلیل ہے۔ نظیر اکبر آبادی، الطاف حسین حالی، اکبر الہ آبادی اور اقبال، جوش ملیح آبادی، ساحر لدھیانوی، فیض احمد فیض، علی سردار جعفری، ن م راشد، اسماعیل میرٹھی، نظم طباطبائی نظم کے بڑے شاعروں میں سے ہیں۔ اردو میں نظم کی صنف انیسویں صدی کی آخری دہائیوں کے دوران میں انگریزی کے اثر سے پیدا ہوئی جو دھیرے دھیرے پوری طرح قائم ہو گئی۔ نظم بحر اور قافیے میں بھی ہوتی ہے اور اس کے بغیر بھی۔ اب نثری نظم بھی اردو میں مستحکم ہو گئی ہے۔[1]

نثری نظم کے حوالے سے میراں جی.ن م راشد . ہوتے ہوئے احمد ہمیش سے ہوتے ہوئےجواز جعفری تک سلسلہ آتا ہے۔لیکن ایک اور بات ...! اس سارے سلسلے میں ڈاکٹر وحید احمد آج بھی نمایا ہیں..

موجودہ دور میں بھی نثری نظم کے بہت سے شاعر موجود ہیں۔جن میں ایک نام منصف ہاشمی کا بھی ہے۔اس کی اس حوالے سے پہلی کتاب کا نام"مٹھی میں ستارے لیے" اور دوسری کتاب "عشق " نام سے منظر عام پر آئیں. منصف ہاشمی کی نثری نظموں کو ریاض مجید.علامہ ضیاء حسین ضیاء.ناصر علی سید.ڈاکٹر جعفر حسن مبارک.اخلاق حیدر آبادی.ڈاکٹر اسحاق وردگ.محمود سرور نے ادبی معاشرے میں خوبصورت اضا فہ قرار دیا ہے.


تعریف[ترمیم]

نظم شاعری کی ایک ایسی قسم ہے جو کسی ایک عنوان کے تحت کسی ایک موضوع پر لکھی جاتی ہے۔ [2]، نظم کی ایک خاص بات یہ ہے کہ اس میں ہیئت کی کوئی قید نہیں ہے۔ یہ بحر اور قافیہ سے پابند بھی ہوتی ہے اور ان قیود سے آزاد بھی۔ اس میں مضامین کی وسعت ہوتی ہے۔ نظم زندگی کے کسی بھی موضوع پر کہی جا کتی ہے۔

ارتقا[ترمیم]

اردو نظم کی ابتدائی مثالیں قلی قطب شاہ کے دیوان میں ہی مل جاتی ہیں۔ بلکہ اردو ادب کا سب سے پہلا شہ پارہ مثنوی کدم راو پدم راو دراصل اردو نظم کی ہی قسم ہے۔ اس لیے یہ کہنا بیجا نہ ہو گا کہ اردو نظم کی تاریخ بہت پرانی ہے بلکہ ادب کی ابتدا ہے۔ بعد میں نظیر اکبرآبادی (1735–1830) نے اردو نظم کو مقام عروج عطا کیا۔ انہوں نے مختلف موضوعات پر بیشتر نظمیں لکھی ہیں۔ نظیر میر تقی میر کے ہم عصر ممتاز شاعر تھے جنہوں نے ہندوستانی ثقافت اور تہواروں پر نظمیں لکھیں ، ہولی ، دیوالی اور دیگر موضوعات پر نظموں کے لیے مشہور ہیں۔[3]، ان کی آدمی نامہ، بنجارا نامہ، راکھی، روٹیاں مشہور نظموں میں سے ہیں۔ ان کی اکثر نظمیں مشہور ہیں۔

محمد حسین آزاد (1830–1910) اور حالی نے اردو نظم میں مغربیت کا تعارف کروایا اور یوں اردو نظم میں جدت پسندی کی ابتدا ہوئی جس سے موضوعات میں وسعت پیدا ہوئی۔ اب ملکی حالات، اجتماعی خیالات و احساسات پر نظمیں لکھی جانے لگیں۔ پھر اسماعیل میرٹھی(1844–1917)، شبلی نعمانی(1857–1914)، اکبر الہ آبادی (1846–1921) اور چکبست(1882–1926) کا دورآتا ہے جنہوں نے اردو نظم کے ارتقا میں نمایاں کردار ادا کیا۔ مگر اردو نظم کی ہیئت ابھی تک تبدیل نہیں ہوئی تھی۔ ان میں حسین آزاد اور اسماعیل میرٹھی نے آسان زبان میں بچوں کے لیے نظمیں لکھی ہیں۔ اردو نظم کی ہیئت میں تبدیلی کی پہلی کوشش عبد الحلیم شرر (1860–1926) نے کی۔ انہوں نے نظم معرا کو رائج کرنے کی کوشش کی۔ اسی کو آگے بڑھانے کا ذمہ نظم طباطبائی (1854–1933)نے لیا جنہوں نے اس کی ہیئت میں مزید تبدیلی کی۔ چونکہ اس دور میں مغربی ادب کے تراجم ہونے لگے تھے لہذا مغرب کا اثر اردو نظم پر بھی ہوا اور نظم کے اسلوب اور ہیئت میں خاصی تبدیلیاں دیکھنے کو ملیں۔ اقبال (1877–1938) نے اردو نظم میں کافی کچھ لکھا اور نت نئے تجربے کیے۔ ان کے بعد سیماب، حفیظ، ساغر، جمیل مظہری، افسر، جوش، احسان دانش، اختر شیرانی اور ن م راشد نے مختلف موضوعات پر نظمیں لکھیں۔

ہیئت اور اسلوب کے سلسلے میں جن شعرا نے تجربہ کرنے کی کوشش کی ان میں عظمت اللہ خان کا نام اہمیت کا حامل ہے۔ انہوں نے ہندی کے سبک الفاظ، بحریں اور علامتیں استعمال کر کے اپنی نظموں میں انفرادیت پیدا کی۔ آگے چل کر میر اجی نے آزاد نظموں کے سلسلے میں عظمت اللہ خان کے طرز سے فائدہ اٹھایا۔ [4]، اردو شاعری اور خاص طور پر اردو نظم میں ترقی پسند تحریک نے انقلاب پیدا کر دیا۔ ادب اسلوب، ہیئت، موضوع، سانچہ اور تعداد اشعار میں وسعت دیکھنے کو ملی۔ آزاد نظم کو ایک الگ مقام ملا۔ ن م راشد، تصدق حسین، ضیا جالندھری اور مجید امجد اس دور کے قابل ذکر شاعر ہیں۔

اہم نظمیں[ترمیم]

اردو نظم کے شعرا اردو ادب کو کچھ ایسی نظمیں دے گئے ہیں جو رہتی دنیا تک اردو ادب اور خاص طور پر اردو شاعری کو لوگوں کی زبان اور دل میں جگہ بنانے کا موقع عنایت کرتی رہے گی۔ علامہ اقبال کی بچوں کی دعا (لب پہ آتہ ہے دعا بن کے تمنا میری)، حالی کی مسدس مد و زجر اسلام (مسدس حالی، نظیر اکبرآبادی کی آدمی نامہ اور بنجارہ نامہ، حفیظ جالندھری کی شاہنامہ اسلام:، اختر شیرانی کی او دیس سے آنے والے بتا، ساحر لدھیانوی کی نظم:تاج محل، جوش ملیح آبادی کی نظم: کسان اردو نظم کے شاہکار نمونے ہیں۔ ذیل میں منیر نیازی کی نظم میں اور میرا خدا:


لاکھوں شکلوں کے میلے میں تنہا رہنا میرا کام

بھیس بدل کر دیکھتے رہنا تیز ہواؤں کا کہرام

ایک طرف آواز کا سورج ایک طرف اک گونگی شام

ایک طرف جسموں کی خوشبو ایک طرف اس کا انجام

بن گیا قاتل میرے لیے تو اپنی ہی نظروں کا دام

سب سے بڑا ہے نام خدا کا اس کے بعد ہے میرا نام

[5]

اقسام[ترمیم]

ہیئت کی بنیاد پر اردو نظم کی اقسام مندرجہ ذیل ہیں:

  • پابند نظم
  • طویل نظم
  • معرا نظم
  • آزاد نظم
  • نثری نظم

پابند نظم[ترمیم]

پابند نظم غزل کی طرح بحر و قافیہ کی پابند ہوتی ہے۔ ابتدائی دور میں زیادہ تر پابند نظمیں ہی لکھی جاتی تھیں۔ چکبست، اقبال، نظیر اور جوش نے پابند نظمیں کہی ہیں۔

  • اقبال: مکڑی اور مکھی، پرندہ اور جگنو، مکڑا اور مکھی، ماں کا خواب،لا الہ الا اللہ،
  • الطاف حسین حالی: مٹی کا دیا، مناجات بیوہ
  • نظیر اکبرآبادی: آدمی نامہ، روٹیاں

طویل نظم[ترمیم]

قصیدہ،مرثیہ یا مثنوی طویل نظم کی مثالیں ہیں، مثنوی، قصیدے اور مرثیہ کی بہ نسبت طویل ہوتی ہے اور بیک وقت ایک ہی مثنوی میں کئی ساری کہانیاں بیان کی جاتی ہیں مگر چونکہ مرکزی کہانی ایک ہوتی ہے اس لیے مثنوی مختصر کہانیوں کا مجموعہ نہ ہو کر ایک طویل نظم ہوتی ہے۔ یہ ضروری نہیں کہ طویل نظم صرف مثنوی، مرثیہ یا قصیدہ ہی ہے۔ اردو نظم میں فکری نظموں نے بھی جگہ بنائی ہے۔ علامہ اقبال، حالی جوش، علی سردار جعفری، ساحر لدھیانوی نے بہت معیاری طویل نظمیں لکھی ہیں۔ اقبال کی شکوہ جواب شکوہ، ابلیس کی مجلس شوری کافی مشہور ہوئیں۔

  • اقبال: شکوہ، جواب شکوہ، ابلیس کی مجلس شوری، ساقی نامہ
  • حالی:برکھا رت، حب وطن، نشاط امید
  • علی سردار جعفری: نئی دنیا کو سلام، میرے خواب، بمبئی،
  • ساحر لدھیانوی: اے شریف انسانو، پرچھائیاں،

دیگر طویل نظم کے شاعروں میں حرمت الاکرام، ن۔م۔راشد، اختر الایمان، وزیر آغا، جعفر طاہر، رفیق خاور، عبد العزیز خالد، عمیق حنفی، قاضی سلیم قابل ذکر ہیں۔

معرا نظم[ترمیم]

معرا نظم کسی مخصوص بحر میں کہی جاتی ہے مگر اس میں قافیہ نہیں ہوتا ہے۔ اس کو انگریزی میں (blank verse) کہتے ہیں۔ اس نظم کا ایک عنوان بھی ہوتا ہے۔ اردو میں نظم معرا کی روایت انگریزی شاعری سے منتقل ہوئی، شروع میں اسے "غیر مقفی نظم" کہا جاتا تھا لیکن بعد میں عبد الحلیم شرر نے مولوی عبد الحق کے مشورے سے "نظم معرا" کی اصطلاح استعمال کی جو اب مقبول ہے۔ [6] معرا نظم کے اہم شعرا میں تصدق حسین، میر اجی، ن۔م۔راشد، فیض احمد جیض، اختر الایمان، یوسف ظفر، مجید امجد، ضیا جالندھری قابل ڈکر ہیں۔

آزاد نظم[ترمیم]

آزاد نظم کو انگریزی میں (free verse) کہتے ہیں اور یہ پہلی مرتبہ فرانس غیر مساوی مصرعوں پر لکھی گئی ایک نظم تھی۔ حالانکہ اردو میں آزاد نظم میں بھی عروض کی پاپندی کی جاتی ہے مگر اس کو قافیہ و ردیف سے آزاد رکھا جاتا ہے۔ میر اجی، ن۔م۔راشد، فیض احمد فیض، سردار جعفری اور اختر الایمان آزاد نظم کے قابل ذکر شاعر ہیں۔

نثری نظم[ترمیم]

یہ صنف مکمل آزاد صنف ہے اور اس میں وزن، ردیف اور قافیے کی پابندی نہیں کی جاتی ہے۔ لیکن شعریت کا عنصر ضرور موجود ہوتا اسی لیے اسے نظم کے درجے میں رکھا جاتا ہے۔ ہر نظم کا ایک مرکزی خیال ہوتا جسے چھوٹی بڑی لائنوں میں پیش کیا جاتا ہے۔ یہ نظم آج کل بہت مقبول ہو رہی ہے۔ سجاد ظہر، زبیر رضوی، کمار پاشی، عتیق اللہ صادق اس صنف کے چند اہم شاعر ہیں۔

دیگر اقسام[ترمیم]

اردو نظم کی اشعار کی تعداد و ترتیب کے اعتبار سے بھی قسمیں کی جاتی ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ریختہ۔ صفحہ نظمیں https://rekhta.org/nazms?lang=ur۔ اخذ شدہ بتاریخ 19 جولائی 2018ء۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  2. قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان۔ قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان۔ نئی دہلی۔ آئی ایس بی این ISBN 978-93-5007-4 Check |isbn= value: invalid character (معاونت)۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  3. ۔ نا معلوم۔ Unknown parameter |wor= ignored (معاونت); Unknown parameter |autho= ignored (معاونت); Unknown parameter |urlhttps://www.rekhta.org/poets/nazeer-akbarabadi?lang= ignored (معاونت); Check date values in: |accessdate=, |date= (معاونت); |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت); |url= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت); |access-date= requires |url= (معاونت)
  4. قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان۔ نئی دہلی۔ آئی ایس بی این ISBN 978-93-5007-4 Check |isbn= value: invalid character (معاونت)۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  5. ریختہ (نا معلوم)۔ صفحہ میں اور میرا خدا۔ Check date values in: |accessdate=, |date= (معاونت); |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت); |url= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت); |access-date= requires |url= (معاونت)
  6. اردو کے اصناف شعری

بیرونی روابط[ترمیم]