اروند گھوش

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اروند گھوش
(بنگالی میں: অরবিন্দ ঘোষ ویکی ڈیٹا پر مقامی زبان میں نام (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Sri aurobindo.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (بنگالی میں: অরবিন্দ ঘোষ ویکی ڈیٹا پر پیدائشی نام (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 15 اگست 1872[1][2][3][4][5]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 5 دسمبر 1950 (78 سال)[1][2][3][4][5]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پانڈچیری  ویکی ڈیٹا پر مقام وفات (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت[6]
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی کنگز  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ماہرِ لسانیات، شاعر، مترجم، فلسفی، مضمون نگار، مصنف، ادبی تنقید نگار، پروفیسر، سیاست دان، سرکاری ملازم، انقلابی  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان بنگلہ  ویکی ڈیٹا پر مادری زبان (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان بنگلہ، انگریزی  ویکی ڈیٹا پر زبانیں (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل فلسفہ  ویکی ڈیٹا پر شعبۂ عمل (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مؤثر ویدانت[7]، ہنری برگساں[7]  ویکی ڈیٹا پر مؤثر (P737) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Sri-Aurobindo-Signature-Transparent.png 
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر باضابطہ ویب سائٹ (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

اروند گھوش (بنگالی: অরবিন্দ ঘোষ تلفظ: اوروبندو گھوش) (15 اگست 1872ء – 5 دسمبر 1950ء) ایک ہندوستانی فلسفی، یوگی، گرو، شاعر اور قوم پرست تھے۔[8] تحریک آزادی ہند میں شامل ہو کر کچھ عرصے اس کے سرگرم رہنما رہے۔ بعد ازاں روحانی اصلاح کا راستہ اختیار کیا اور انسانی ترقی اور روحانی ارتقا کے تئیں اپنے افکار پیش کیے۔

اروند گھوش نے کنگز کالج، کیمبرج، انگلینڈ میں موجود انڈین سول سروس سے تعلیم حاصل کی۔ ہندوستان واپس آنے کے بعد ریاست بڑودا کے مہاراجا کے تحت متعدد شہری خدمات انجام دیں اور تیزی سے قوم پرست سیاسیات اور بنگال کی انقلابی تحریک میں دلچسپی لینے لگے۔ برطانوی حکومت سے غداری کے جرم میں انہیں قید کیا گیا تھا لیکن جرم ثابت نہ ہو سکا چنانچہ برطانوی حکومت کے خلاف مضامین لکھنے کی سزا سنائی گئی۔ جب کوئی ثبوت نہ مل سکا تو انہیں رہا کر دیا گیا۔ اسیری کے دوران میں انہیں کچھ روحانی تجربات ہوئے۔ رہائی کے بعد وہ پونڈیچری میں رہے اور سیاسیات کو چھوڑ کر روحانیت سے وابستہ ہو گئے۔

پونڈیچری میں قیام کے دوران میں اروند گھوش نے روحانی تجربہ کا ایک نیا طریقہ ایجاد کیا جسے وہ "مکمل یوگا" کہا کرتے تھے۔ ان کے افکار کا مرکزی نقطہ یہ تھا کہ انسانی زندگی ارتقا کرتے کرتے خدائی زندگی میں تبدیل ہو جاتی ہے۔ وہ اس روحانی احساس کے قائل تھے جو مرد کو نہ صرف آزاد کرتا ہے بلکہ اس کی فطرت تبدیل کرکے اسے زمین پر الوہی زندگی کے قابل بھی بناتا ہے۔ سنہ 1926ء میں اپنے روحانی معاون میرا الفیسا کے ساتھ مل کر انہوں نے شری اروند آشرم کی بنیاد رکھی۔

ان کی قابل ذکر تصنیفات حسب ذیل ہیں: "دی لائف ڈیوائن" جس میں مکمل یوگا کے مختلف پہلوﺅں پر گفتگو کی گئی ہے۔ "سنتھیسز آف یوگا" جس میں مکمل یوگا کی عملی رہنمائی کی گئی ہے۔ "ساوتری: اے لیجنڈ اینڈ اے سمبل" ایک رزمیہ نظم ہے۔ ان کی تصنیفات میں فلسفہ، شاعری، تراجم، ویدوں، اپنشد اور بھگوت گیتا کی تشریحات شامل ہیں۔ اروند گھوش کو 1943ء میں ادب کے اور 1950ء میں امن کے نوبل انعام کے لیے نامزد کیا گیا۔[9]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب اجازت نامہ: CC0
  2. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6gt66x9 — بنام: Sri Aurobindo — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. ^ ا ب دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Shri-Aurobindo — بنام: Shri Aurobindo — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  4. ^ ا ب InPhO ID: https://www.inphoproject.org/2572 — بنام: Sri Aurobindo — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. ^ ا ب Brockhaus Enzyklopädie online ID: https://brockhaus.de/ecs/enzy/article/aurobindo — بنام: Aurobindo
  6. https://libris.kb.se/katalogisering/42gjdqnn4v4hbzx — اخذ شدہ بتاریخ: 24 اگست 2018 — شائع شدہ از: 26 ستمبر 2012
  7. ISBN 978-0-415-06043-1
  8. Ghose A., McDermott, R.A. – Essential Aurobindo, SteinerBooks (1994) ISBN 0-940262-22-3
  9. Nomination database Nobel.org accessed 28 January 2016

مزید پڑھیے[ترمیم]

  • Heehs، Peter (2011). "The Kabbalah, the Philosophie Cosmique, and the Integral Yoga. A Study in Cross-Cultural Influence". ARIES (Brill) 11 (2): 219–247. http://peterheehs.net/wp-content/uploads/2012/09/ARIES_011_02_04Heehs.pdf. 
  • K. R. Srinivasa Iyengar۔ Sri Aurobindo: a biography and a history۔ Sri Aurobindo International Centre of Education۔ (2 volumes, 1945) – written in a hagiographical style
  • Syamala Kallury۔ Symbolism in the Poetry of Sri Aurobindo۔ Abhinav Publications۔ آئی ایس بی این 978-81-7017-257-4۔
  • Kitaeff، Richard. "Sri Aurobindo". Nouvelles Clés (62): 58–61. 
  • Arvind Krishna Mehrotra۔ A History of Indian Literature in English۔ Columbia University Press۔ آئی ایس بی این 978-0-231-12810-0۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  • Manoj Kumar Mishra۔ Young Aurobindo's Vision: The Viziers of Bassora۔ Bareilly: Prakash Book Depot۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  • Prithwindra Mukherjee۔ Sri Aurobindo۔ Paris: Desclée de Brouwer۔
  • Satprem۔ Sri Aurobindo, or the Adventure of Consciousness۔ Pondicherry, India: Sri Aurobindo Ashram Press۔
  • K. D. Sethna، Vision and Work of Sri Aurobindo
  • Ramdhari Singh۔ Sri Aurobindo: Meri Drishti Mein۔ New Delhi: Lokbharti Prakashan۔
  • Georges van Vrekhem۔ Beyond Man – The Life and Work of Sri Aurobindo and The Mother۔ New Delhi: HarperCollins۔ آئی ایس بی این 81-7223-327-2۔
  • Raychaudhuri, Girijashankar.۔.۔.Sri Aurobindo O Banglar Swadeshi Joog (published 1956)۔.۔this book was serially published in the journal Udbodhan and read out to Sri Aurobindo in Pondicherry while he was still alive.۔.۔.۔Sri Aurobindo commented, " he will snatch away smile from my face"
  • Ghose, Aurobindo, Nahar, S.، & Institut de recherches évolutives. (2000)۔ India's rebirth: A selection from Sri Aurobindo's writing, talks and speeches Paris: Institut de recherches évolutives.

بیرونی روابط[ترمیم]