اسامو اکاساکی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search


اسامو اکاساکی
(جاپانی میں: 赤﨑勇 ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Isamu Akasaki 201111.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 30 جنوری 1929 (91 سال)[1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش کاگوشیما پریفیکچر  ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Japan.svg جاپان[5]  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکن انسٹی ٹیوٹ برائے الیکٹریکل اور الیکٹرانکس انجینئرز  ویکی ڈیٹا پر (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مقام_تدریس Meijo University
Nagoya University
مادر علمی کیوٹو یونیورسٹی  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ڈاکٹری طلبہ ہیروشی امانو  ویکی ڈیٹا پر (P185) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ طبیعیات دان،  پروفیسر،  سائنس دان،  انجینئر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل طبیعیات دان  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
نوبل انعام برائے طبیعیات  (2014)[6][7]
ایڈیسن میڈل (2011)
JPN Bunka-kunsho BAR.svg آرڈر آف کلچر (2011)
JPN Kyokujitsu-sho 3Class BAR.svg دی آرڈر اوف رائزنگ سن، گولڈ ریز وِد نیک رِبن  ویکی ڈیٹا پر (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

سامواکاساکی پیدائش 1929جاپانی سائنس دان ہیں انھوں نے 2014 میں طبیعیات میں نوبل انعام حاصل کیا۔ پروفیسرز اسامو اکاساکی، ہیروشی امانو اور شوجی نکامورا کی ایجاد سے کم توانائی کے استعمال سے تیز روشنی پیدا کرنے والے نیلی روشنی پیدا کرنے والے ڈیوڈز کے ایجاد کرنے میں کامیابی حاصل ہوئی تھی۔

  1. Encyclopædia Britannica
  2. Isamu Akasaki - Facts — اخذ شدہ بتاریخ: 7 مئی 2020 — ناشر: نوبل فاونڈیشن
  3. Munzinger person ID: https://www.munzinger.de/search/go/document.jsp?id=00000030150 — بنام: Isamu Akasaki — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. Brockhaus Enzyklopädie online ID: https://brockhaus.de/ecs/enzy/article/akasaki-isamu — بنام: Isamu Akasaki — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. Science in Action, Nobel Prizes 2014 — ناشر: بی بی سی — شائع شدہ از: 13 اکتوبر 2014
  6. The Nobel Prize in Physics 2014 — اخذ شدہ بتاریخ: 7 مئی 2020 — ناشر: نوبل فاونڈیشن
  7. Table showing prize amounts — اخذ شدہ بتاریخ: 7 مئی 2020 — ناشر: نوبل فاونڈیشن — شائع شدہ از: اپریل 2019