اسما سلطان (دختر عبد العزیز اول)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اسما سلطان (دختر عبد العزیز اول)
Istanbul 2009 Yeni Camii.JPG
 

معلومات شخصیت
پیدائش 21 مارچ 1873  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
استنبول  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 22 اکتوبر 1899 (26 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
استنبول  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجہ وفات ز چگی  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن ینی مسجد  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the Ottoman Empire (1844–1922).svg سلطنت عثمانیہ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد عبد العزیز اول  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ گوہری قادین افندی  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
امینہ سلطان،  محمد شوکت افندی،  ناظمہ سلطان،  محمد سیف الدین افندی  ویکی ڈیٹا پر (P3373) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
خاندان عثمانی خاندان  ویکی ڈیٹا پر (P53) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

اسما سلطان ( عثمانی ترکی زبان: اسما سلطان ; 21 مارچ 1873ء - 7 مئی 1899ء) ایک عثمانی شہزادی تھیں، جو سلطان عبدالعزیز اور کوہری قادین افندی کی بیٹی تھیں۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

اسما سلطان 21 مارچ 1873ء کو ڈولماباہی محل میں پیدا ہوئیں۔ [1][2] ان کے والد عبدالعزیز تھے، جو محمود دوم اور پرتیونیال سلطان کے بیٹے تھے۔ ان کی ماں کوہری قادین افندی تھیں۔ [3] وہ اپنے باپ کی سب سے چھوٹی بیٹی اور ماں کی سب سے بڑی اولاد تھیں۔ وہ شہزادے محمد سیف الدین کی بڑی بہن تھیں۔ [4] [5]

اسما، جو اس وقت تین سال کی تھی، اپنے بڑے سوتیلے بھائی، ولی عہد شہزادہ یوسف عزالدین کی نگرانی میں پلی بڑھی تھیں۔ ان کی جھکی ہوئی بھنویں، بڑی سیاہ آنکھیں، لمبا چہرہ، سفید جلد اور چھوٹے بال، اور لمبا تھا۔ [5] انھوں نے اپنی تعلیم کا آغاز 1879ء میں اپنے بھائیوں شہزادے محمد سیف الدین اور شہزادے محمد شوکت اور سلطان عبدالحمید ثانی کے بچوں شہزادے محمد سلیم اور زکیہ سلطان کے ساتھ، احلامور پویلین میں کیا۔ [6]

شادی[ترمیم]

1889ء میں سلطان عبدالحمید نے اپنی دو بہنوں شہزادی صالحہ سلطان اور ناظمہ سلطان کے ساتھ ساتھ اس کی اپنی بیٹی ذکیئے سلطان کے ساتھ مل کر ان کے جہیز اور شادی کا اہتمام کیا۔ [3]

20 اپریل 1889ء کو سولہ سال کی عمر میں، انھوں نے یلدز محل میں کباسکل کرکس محمد پاشا سے شادی کی۔ وہ سلطان عبدالمجید اول کی بیٹی نائل سلطان سے شدہ شدہ تھے، بیوی کی موت کے بعد، اسما سلطان سے شادی کی۔ وہ اپنے محل میں چلی گئیں جسے " اسما سلطان مینشن " کہا جاتا ہے، جس میں پہلے محمد پاشا اور نائل سلطان رہتے تھے۔ [5]

موت[ترمیم]

اسما سلطان کا انتقال 7 مئی 1899 ءکو چھبیس سال کی عمر میں ہوا اور انہیں استنبول کی نیو مسجد ایمنونی میں شاہی خواتین کے مقبرے میں دفن کیا گیا۔ [3] [7] [5] [4] ان کی موت کے بعد، سلطان عبدالحمید نے سلطان مراد پنجم کی بیٹی خدیجہ سلطان کو اپنے شوہر محمد پاشا سے شادی کرنے کا فیصلہ کیا۔ تاہم شادی کبھی نہیں ہوئی۔ [8]

شجرہ نسب[ترمیم]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. The Encyclopædia Britannica، Vol.7, Edited by Hugh Chisholm, (1911)، 3; Constantinople, the capital of the Turkish Empire.۔۔
  2. Britannica, Istanbul آرکائیو شدہ (Date missing) بذریعہ concise.britannica.com (Error: unknown archive URL):When the Republic of Turkey was founded in 1923, the capital was moved to Ankara, and Constantinople was officially renamed Istanbul in 1930.
  3. ^ ا ب پ Brookes 2010.
  4. ^ ا ب Uluçay 2011.
  5. ^ ا ب پ ت Sakaoğlu 2008.
  6. Uru، Cevriye (2010). Sultan Abdülhamid'in kızı Zekiye Sultan'in Hayati (1872–1950). صفحہ 6. 
  7. "Brıef Hıstory: The Legendary Origin Of The Dynastic Family, The Osmanlis, G – Ödevsel". Odevsel.com. 12 جنوری 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 22 اکتوبر 2018. 
  8. Örik، Nahid Sırrı (2002). Bilinmeyen yaşamlarıyla saraylılar. Türkiye İş Bankası. صفحہ 40. ISBN 978-9-754-58383-0. 

ماخذ[ترمیم]

  • Brookes، Douglas Scott (2010). The Concubine, the Princess, and the Teacher: Voices from the Ottoman Harem. University of Texas Press. ISBN 978-0-292-78335-5. 
  • Sakaoğlu، Necdet (2008). Bu mülkün kadın sultanları: Vâlide sultanlar, hâtunlar, hasekiler, kadınefendiler, sultanefendiler. Oğlak Yayıncılık. ISBN 978-9-753-29623-6. 
  • Uluçay، Mustafa Çağatay (2011). Padişahların kadınları ve kızları. Ankara: Ötüken. ISBN 978-9-754-37840-5.