اسم موصول

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

اسم موصول اسم معرفہ کی ایک قسم ہے۔ اسم موصول ایسا اسم ہوتا ہے جب تک اس کے ساتھ کوئی جملہ نہ ملایا جائے اس کے پورے معنی سمجھ میں نہیں آتے جیسے جو کچھ، جو کوئی، جس کو، جس نے، جیسے، جس کا، جس کی، جیسا، جن کا، جونسا وغیرہ۔

اسم موصول[ترمیم]

اسم موصول کا مفہوم[ترمیم]

اسم موصول وہ اِسم ہے جب تک اُس کے ساتھ کوئی جملہ نہ ملایا جائے تب تک اُس کے پورے معنی سمجھ میں نہیں آتے۔

یا

اسم موصول وہ اسم ہوتا ہے کہ اُس سے بننے والے نامکمل جملے کے ساتھ جب تک دوسرا جملہ نہ ملائیں، جملہ کا مفہوم واضع نہیں ہوتا۔

یا

وہ اسم ہے جب تک اُس کے ساتھ دوسرا جملہ نہ پڑھا جائے جملہ پورے معنی نہیں دیتا۔

اسم موصول کی مثالیں[ترمیم]

جو کچھ، جو کوئی، جس کو، جس نے، جیسے، جس کا، جس کی، جیسا، جن کا، جونسا وغیرہ

جملوں کی مثالیں[ترمیم]

اسم موصول کے چند جملوں کے نمونے درج ذیل ہیں۔

جسے بلائو گے وہ آاجائے گا۔

جو چوری کرے گا اُس کا خانہ خراب ہوگا۔

جیسا کرو گے ویسا بھرو گے۔

جونسی کتاب چاہو لے لو

جس نے محنت کی کامیاب ہوا۔

اِن مثالوں میں جسے، جو، جیسا، جونسی، جس اسم موصول ہیں۔

صلہ[ترمیم]

صلہ کا مفہوم[ترمیم]

اسم موصول کے بعد جو جملہ آتا ہے اُسے صلہ کہتے ہیں۔

مثالیں[ترمیم]

جو کچھ بوئو گے، وہی کاٹو گے۔

جس نے محنت کی، کامیاب ہوا۔

ان جملوں میں بوئو گے اور محنت کی صلہ ہیں۔

جواب صلہ[ترمیم]

جواب صلہ کا مفہوم[ترمیم]

اسم موصول اور صلہ کے بعد جو اگلا جملہ بات کو مکمل کرنے کے لیے آتا ہے اُسے جواب صلہ کہتے ہیں۔

مثالیں[ترمیم]

جو کچھ بوئو گے، وہی کاٹو گے

جس نے محنت کی، کامیاب ہوا۔

اِن جملوں میں وہی کاٹو گے اور کامیاب ہوا جواب صلہ ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

[1][2]

  1. آئینہ اردو قواعد و انشاء پرزادی
  2. آئینہ اردو