اسٹاک ہوم سنڈروم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
سابقہ کریڈٹ بینکن، سٹاکہوم سویڈن جو سٹاکہوم سنڈروم سے منسوب ہے

نفسیات میں اسٹاکہوم سنڈروم ایک ایسی نفسیاتی بیماری کا نام ہے جس میں مغوی اغوا کنندہ یا جنسی زیادتی کا شکار، زیادتی کرنے والے کا ہمدرد اور بعض حالات میں اسُ کے عشق میں گرفتار ہوجاتا ہے اور کبھی اس کا دفاع بھی کرنے لگتا ہے۔۔[1][2] مغربی دنیا میں یہ اصطلاح اس وقت وجود میں آئی جب 1973میں سٹاک ہوم ۔ سویڈن کے ایک شہر میں جیل سے فرار قیدی ایک بنک میں داخل ہوا، گارڈ کو گولی ماری اور چار لوگوں کو ایک کمرے میں بند کر کے یرغمال بنا لیا۔ اور انتطامیہ کو پیسوں اور محفوظ راستہ دینے کی شرائط رکھ دیں۔ ایک ہفتہ کے محاصرے کے بعد اس کو گرفتار کر کے یرغمالیوں کو رہا کروا لیا گیا۔ لیکن انتطامیہ اور نفیسات کے ماہرین کے لیے اس وقت عجیب صورتحال پیدا ہو گئی جب چاروں یرغمالیوں نے اس ملزم کی حمایت میں بیان دے دیا کہ وہ ایک بہت اچھا انسان ہے۔ نہ صرف اس کی حمایت کی بلکہ انہوں نے مل کر اس کی رہائی کے لیے باقاعدہ مہم چلائی اور چندہ بھی جمع کیا اور باقاعدہ اس کا ساتھ دیا۔ دنیا بھر کے ماہرین نفسیات کو اس دماغی کیفیت اور بیماری کا پہلی بار پتہ چلا اور یوں اسے سٹاک ہوم سینڈورم کا نام دیا گیا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. de Fabrique، Nathalie؛ Romano، Stephen J.؛ Vecchi، Gregory M.؛ van Hasselt، Vincent B. (July 2007). "Understanding Stockholm Syndrome" (PDF). FBI Law Enforcement Bulletin. Law Enforcement Communication Unit. 76 (7): 10–15. ISSN 0014-5688. 24 دسمبر 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2010. 
  2. "'Stockholm syndrome': psychiatric diagnosis or urban myth?". Department of Psychiatry and Behavioural Sciences, Hampstead Campus (بزبان London and uk.). Royal Free and University College Medical School. 2007 November 19. PMID 18028254.  Cite uses deprecated parameter |coauthors= (معاونت); |coauthors= بحاجة لـ |author= (معاونت)