اشوک کے کتبے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اشوک کے کتبات کی تقسیم[1]

اشوک کے کتبے (Asokan Edicts) اشوک اعظم کے ذریعے کندہ کروائے کتبے ہیں جو برصغیر کے مختلف علاقوں میں پائے گئے۔ ان کتبوں میں اشوک نے گوتم بدھ کی تعلیمات اور اپنے سیاسی اصولوں اور بعض واقعات کو پتھروں اور ستونوں پر کندہ کروایا ہے۔ مورخین کے مطابق ان کتبوں کی تعداد کئی ہزار تھی جن میں سے صرف 42 کتبے ہی امتدادِ زمانہ سے بچ گئے۔

شہباز گڑھی کے قریب قراقرم شاہراہ میں پایا گیا اشوک کا کتبہ

تاریخ[ترمیم]

موريا بادشاہ اشوک اعظم (جس نے 232ء تا 273ء صدی قبل مسیح حکومت کی) تھیرواد بدھ مت کا معین و مویّد تھا۔ اپنی حکومت کے اواخر میں اس نے مہارکّھیا کی قیادت میں گندھارا کی طرف ایک تھروادی وفد روانہ کیا۔ جنوب میں واقع قندھار کی دوری تک، اس مشن نے "اشوک کے ستون" کھڑے کروائے جن پر بدھ مت کے اصولوں کے ترجمان کتبے موجود تھے۔ ان مبلغوں کے ذریعے تھرواد نے افغانستان میں اپنی معمولی سی موجودگی قائم کرلی۔[2]

اشوک کا دولسانی کتبہ جو یونانی اور آرامی زبانوں میں ہے۔

ایوانِ عکس[ترمیم]

مزید دیکھیے[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]