اطالیہ میں مذہب

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

اطالیہ (اٹلی) مسیحیت کی وجہ سے شہرت رکھتا ہے، جہاں پر کاتھولک کلیسیا کا مرکز ویٹیکن سٹی ہے اس کے علاوہ دیگر کئی مسیحی فرقے اور کئی دوسرے مذاہب کے ماننے والوں کی بھی قابل ذکر تعداد موجود ہے۔ اطالیہ میں مذہبی رسومات، عقائد اور بڑھتی ہوئی فرقوں کی تعداد میں تنوع ہے۔

ملک کی کیتھولک سرپرست مسیحی علما سینا کے اسیسی اور کیتھرین کے فرانسس ہیں ۔[1]

اطالیہ میں مذہب (2006)
کیتھولک
  
87.8%
اسلام
  
1.9%
آرتھوڈکس
  
1.6%
پرٹیسٹنٹ
  
1.4%
دیگر
  
1.5%
لا مذہب
  
5.8%

اعدادوشمار[ترمیم]


اطالوی عوام کی مذہبی تشکیلی ساخت (58,751,711 – 2006ء کے اندازے کے مطابق):

تصاویر[ترمیم]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Breve Pontificio con il quale San Francesco d'Assisi e Santa Caterina da Siena vengono proclamati Patroni Primari d'Italia (18 giugno 1939) | PIO XII
  2. Italy, Statistics by Diocese, by Catholic Population [Catholic-Hierarchy]
  3. ^ ا ب پ ت Caritas Dossier Immigrazione 2007
  4. Chiesa Evangelica Valdese - Unione delle chiese Metodiste e Valdesi
  5. http://www.chiesabattistadiconversano.it/i_protestanti_in_italia.html
  6. Italy - LDS Statistics and Church Facts | Total Church Membership
  7. NRI Sikhs in Italy
  8. "Most Baha'i Nations (2005)"۔ QuickLists> Compare Nations> Religions>۔ The Association of Religion Data Archives۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2010-01-30۔