اطہر بلڈ بینک

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اطہر بلڈ بینک
اطہر بلڈ بینک
Athar Blood Bank logo.jpg
شعار انسانیت کی خدمت
بانی سید شہاب الدین سلفی فردوسی
قسم بلڈ بینک
قانونی حیثیت غیر سرکاری تنظیم
مقام
  • پہلی منزل، جامعہ کمپلیکس، سماچار چوک کے قریب، سولاپور، مہاراشٹر
Region
مہاراشٹر
Services خون کی فراہمی
دفتری زبان
انگریزی، مراٹھی
مولانا سید شہاب الدین سلفی فردوسی، مشتاق چودھری، عبدالرزاق کامبلے، اعظم شیخ، ڈاکٹر نیلوفر بوہری، عثمان منصوری، عبدالقیوم انعامدار، مختارہمنابادی
کلیدی لوگ
مولانا سید شہاب الدین سلفی فردوسی، مشتاق چودھری، اعظم شیخ
اسٹاف
18

اطہر بلڈ بینک مہاراشٹرکے شہر سولاپور میں "اطہراقلیتی سماجی اور ویلفیئر ایسوسی ایشن" کے زیراہتمام قایم کردہ ادارہ ہے۔[1] بلڈ بینک کا افتتاح جناب سشیل کمار شندے (وزیر براے ء توانایء ہندوستان) کے ہاتھوں 02 جون 2012ء کوہوا۔ اطہر بلڈ بینک کے بانی مولانا سید شہاب الدین سلفی فردوسی نے "انسانیت کی خدمت" بلڈ بینک کے نعرہ طور پرمنتخب کیا۔ مستقبل میں "اطہراقلیتی سماجی اور ویلفیئر ایسوسی ایشن" کے ذریعے نئے زچگی خانے کی تعمیر قریب تر ہے۔ بینک کامیابی سے چل رہا ہے اور ریاست بھر میں خون کے عطیہ کیمپ کا انعقاد کرتا ہے اور انسانیت کی فلاح و بہبود میں مدد گارثابت ہو رہا ہے۔[2]

اطہر بلڈ بینک افتتاحی تصویر(بایئں سے دایئں) مولانا سید شہاب الدین سلفی فردوسی اورجناب سشیل کمار شندے
اطہر بلڈ بینک افتتاحی تصویر(بایئں سے دایئں) الکا راٹھور، پرنیتی شندے، مولانا سید شہاب الدین سلفی فردوسی، جناب سشیل کمار شندے، دلیپ راو مانے وعبدالقیوم انعامدار

پس منظر[ترمیم]

مولانا سید شہاب الدین سلفی فردوسی جو معروف عالم دین، مصنف اورسماجی خدمتگار ہیں نے 2012ء میں بلڈ بینک قائم کیا۔[3][4]

خون کا جمعکاری مرکز(بلڈ کلیکشن سینٹر)[ترمیم]

پہلی منزل، جامعہ کمپلیکس، سماچار چوک کے قریب، سولاپور، مہاراشٹرمیں واقع خون کاعطیہ مرکزتمام تازہ ترین آلات سے لیس ہے اور بیک وقت ایک سے زائد خون کے عطیات کی میزبانی کر سکتا ہے۔[5] مرکز میں 3 ایم - ڈی ڈاکٹروں سمیت 18 افراد کام کرتے ہیں اور700 یونٹس ذخیرہ کرنے کی صلاحیت ہے۔ بینک ہمہ وقت کھلا رہتا ہے اورسرکاری سول اسپتال اور نجی ہسپتالوں کو خون فراہم کرتا ہے۔ تھلیسیمیا اور ایچ آئی وی کے مریضوں کو مفت خون کی سہولت دی جاتی ہے۔ مالی طور پر کمزور طبقوں کو رعایتی شرح بھی دی جاتی ہے اور بہت دفعہ مفت ہی خون فراہم کیا جاتا ہے۔

کیمپ[ترمیم]

اطہر بلڈ بینک مختلف گروہوں , انجمن سے خون جمع کرتا ہے مثال کے طور پر کالجوں اور عوامی یا نجی اداروں سے جہاں کوئی بھی خون کا عطیہ کر سکتا ہے۔ بینک اوسطً ایک مہینہ میں 7 دفعہ عطیہ کیمپوں کا انعقاد کرتا ہے۔ خون ایک ایمبولینس کے ذریعے منتقل کیا جاتا ہے جو موبائل طبی سہولت بھی فراہم کرتا ہے۔ حال ہی میں جمعیت اہیل حدیث کی طرف سے سوشل اسکول، سولاپور میں منعقدہ ایک کیمپ میں 200 افراد نے خون کا عطیہ دیا ہے۔[6]

خون کا تجزیاتی عمل (خون کی پروسیسنگ)[ترمیم]

مرکز یا کیمپوں سے جمع ہونے کے بعد خون جدید ترین آلات سے لیس تجزيہ گاہ (ليبارٹری) میں عملدرآمد کیا جاتا ہے۔ ابتدائی چھان بین کے بعد خون کو تین بڑے اجزاء سرخ خلیات، پلازما اورپلیٹلیٹس میں علاحدہ کیا جاتا ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://www.cdsco.nic.in/writereaddata/BLOOD%20BANKS%20INDIAfeb2015.pdf
  2. News – Syed Shahabuddin Salfi Firdausi
  3. "Muslim scholars support ban on triple talaq, polygamy | Latest News & Updates at Daily News & Analysis"۔ dna (انگریزی زبان میں)۔ 2017-05-10۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2017-05-11۔
  4. TwoCircles.net۔ "Maulana Syed Shahabuddin Salfi Firdausi: A cleric who built a Blood Bank in Solapur | TwoCircles.net"۔ twocircles.net (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2017-06-06۔
  5. گوگل (7 اپریل 2017)۔ https://goo.gl/maps/vcdxaBjTGZR2 |mapurl= missing title (معاونت) (Map)۔ گوگل نقشہ جات۔ گوگل۔ اخذ شدہ بتاریخ 7 اپریل 2017۔
  6. "'Social' madhya 200 janacha raktdaan"۔ Lokmat (Marathi زبان میں)۔ Solapur۔ 2017-04-06۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2017-04-07۔