اقتصادی تعاون تنظیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش


{{{مقامی_نام}}}
[[Image:{{{پرچم_تصویر}}}|125px| {{{عمومی_نام}}} کا پرچم]] [[Image:{{{نشان_امتیاز_تصویر}}}|110px|{{{عمومی_نام}}} کا نشان_امتیاز]]
[[{{{عمومی_نام}}} کا پرچم|پرچم]] [[{{{عمومی_نام}}} کی نشان_امتیاز |نشان_امتیاز]]
شعار: {{{قومی_شعار}}}
ترانہ: {{{قومی_ترانہ}}}
[[Image:{{{نقشہ_تصویر}}}|250px|center| {{{عمومی_نام}}} کا محل وقوع]]
دارالحکومت {{{دار_الحکومت}}}
[[{{{عمومی_نام}}} کی آبادیاتی خصوصیات|عظیم ترین شہر]] {{{عظیم_شہر}}}
دفتری زبان(یں) {{{دفتری_زبانیں}}}
نظامِ حکومت
{{{راہنما_خطاب}}}
{{{حکومت_قسم}}}
{{{راہنما_نام}}}
{{{خودمختاری_قسم}}}
{{{تسلیمشدہ_واقعات}}}
{{{تسلیمشدہ_تواریخ}}}
رقبہ
 - کل
 
 - پانی (%)
 
{{{رقبہ_مقدار}}}  مربع کلومیٹر ({{{رقبہ_درجہ}}})
{{{areami²}}} مربع میل
{{{فیصد_پانی}}}
آبادی
 - کثافتِ آبادی
 

{{{آبادی_کثافت}}} فی مربع کلومیٹر({{{آبادی_کثافت_درجہ}}})
{{{population_densitymi²}}} فی مربع میل
خام ملکی پیداوار
     (م۔ق۔خ۔)

 - مجموعی
 - فی کس
تخمینہ: [[{{{جی_ڈی_پی_پی_پی_پی_سال}}}ء]]

{{{جی_ڈی_پی_پی_پی_پی}}} ({{{جی_ڈی_پی_پی_پی_پی_درجہ}}})
{{{جی_ڈی_پی_پی_پی_پی_فیکس}}} ({{{جی_ڈی_پی_پی_پی_پی_فیکس_درجہ}}})
انسانی ترقیاتی اشاریہ
   (تخمینہ: [[{{{ایچ_ڈی_آئی_سال}}}ء]])
{{{ایچ_ڈی_آئی}}}
({{{ایچ_ڈی_آئی_درجہ}}}) – {{{ایچ_ڈی_آئی_زمرہ}}}
سکہ رائج الوقت {{{سکہ_}}} ({{{سکہ_کوڈ}}})
منطقۂ وقت
 - عمومی
۔ موسمِ گرما (د۔ب۔و)
{{{منطقۂ_وقت}}}
(یو۔ٹی۔سی۔ {{{یو_ٹی_سی_تفریق}}})
ملکی اسمِ ساحہ
    (انٹرنیٹ)
{{{cctld}}}
رمزِ بعید تکلم
  (کالنگ کوڈ)
+{{{کالنگ_کوڈ}}}

اقتصادی تعاون کی تنظیم (انگریزی: Economic Cooperation Organization) یا ای سی او ایک بین الاقوامی تنظیم ہے جس میں 10 ایشیائی ممالک شامل ہے۔ یہ رکن ممالک کے درمیان تجارت اور سرمایہ کاری کے مواقع ترتیب دے کر انہیں ترقی کی شاہراہ پر گامزن کرنے کے لئے ایک پلیٹ فارم مہیا کرتی ہے۔ اس کے رکن ممالک میں افغانستان، آذربائیجان، ایران، قازقستان، کرغزستان، پاکستان، تاجکستان، ترکی، ترکمانستان اور ازبکستان شامل ہیں۔ ای سی او کا صدر دفتر ایران کے دارالحکومت تہران میں واقع ہے۔ اس تنظیم کا مقصد یورپی اقتصادی اتحاد کی طرح اشیاء اور خدمات کے لئے واحد مارکیٹ تشکیل دینا ہے۔

ای سی او کے رکن ممالک

یہ تنظیم 1985ء میں ایران، پاکستان اور ترکی نے مل کر قائم کی تھی۔ اس تنظیم نے علاقائی تعاون برائے ترقی (انگریزی:Regional Cooperation for Development) یعنی آر سی ڈی کی جگہ لی جو 1962ء میں قائم ہوئی اور 1979ء میں اس کی سرگرمیاں ختم ہوگئیں۔ 1992ء کے موسم خزاں میں افغانستان سمیت وسط ایشیا کے 7 ممالک آذربائیجان، قازقستان، کرغزستان، تاجکستان، ترکمانستان اور ازبکستان کو بھی تنظیم کی رکنیت دی گئی۔

رکن ممالک کے درمیان 17 جولائی 2003ء کو اسلام آباد میں اقتصادی تعاون تنظیم تجارتی معاہدہ (ECOTA) پر دستخط کئے گئے۔

اس تنظیم کے تمام رکن ممالک موتمر عالم اسلامی (او آئی سی) کے بھی رکن ہیں جبکہ 1995ء سے ای سی او کو او آئی سی میں مبصر کا درجہ بھی حاصل ہے۔

رکن ممالک[ترمیم]

سرکاری نام
دارالحکومت
رقبہ (کلومیٹر²)
آبادی
(2010)
کثافت
(فی کلومیٹر²)
خام ملکی پیداوار (2010)(معمولی)[1]
خام ملکی پیداوار (2010)
(فی کس)[2]


کرنسی
سرکاری زبانیں
Flag of افغانستان اسلامی جمہوریہ افغانستان کابل &10000000000647500000000647,500 &1000000002966200000000029,662,000 &1000000000000004600000046 $&1000000000002174700000021,747 ملین $&10000000000000695000000695 افغانی مشرقی فارسی, پشتو
Flag of آذربائیجان جمہوریہ آذربائیجان باکو &1000000000008660000000086,600 &100000000090400000000009,040,000 &10000000000000104000000104 $&1000000000006232100000062,321 ملین $&1000000000001078200000010,782 منات آزربائیجانی
Flag of ایران اسلامی جمہوریہ ایران تہران &100000000016481950000001,648,195 &1000000007535000000000075,350,000 &1000000000000004600000046 $&10000000000402700000000402,700 ملین $&100000000000051600000005,160 ریال فارسی
Flag of قازقستان جمہوریہ قازقستان آستانہ &100000000027249000000002,724,900 &1000000001558400000000015,584,000 &100000000000000060000006 $&10000000000224415000000224,415 ملین $&1000000000001350900000013,509 ٹینگے قازق, روسی
Flag of کرغیزستان جمہوریہ کرغیزستان بشکیک &10000000000199900000000199,900 &100000000054440000000005,444,000 &1000000000000002700000027 $&100000000000051220000005,122 ملین $&10000000000000940000000940 سوم کرغیز, روسی
Flag of پاکستان اسلامی جمہوریۂ پاکستان اسلام آباد &10000000000796095000000796,095 &10000000180440005000000180,440,005 &10000000000000207000000207 $&10000000000236518000000236,518 ملین $&100000000000012950000001,295 روپیہ اردو, انگریزی
Flag of تاجکستان جمہوریہ تاجکستان دوشنبہ &10000000000143100000000143,100 &100000000065360000000006,536,000 &1000000000000004600000046 $&100000000000054990000005,499 ملین $&10000000000000841000000841 سومونی تاجک فارسی
Flag of ترکی جمہوریہ ترکی انقرہ &10000000000783562000000783,562 &1000000007142800000000071,428,000 &1000000000000009100000091 $&10000000000731144000000731,144 ملین[3] $&1000000000001317800000013,178 ترکی لیرا ترکی
Flag of ترکمانستان ترکمانستان اشک آباد &10000000000488100000000488,100 &100000000054390000000005,439,000 &1000000000000001100000011 $&1000000000002023200000020,232 ملین $&100000000000037200000003,720 منات ترکمان
Flag of ازبکستان جمہوریہ ازبکستان تاشقند &10000000000447400000000447,400 &1000000002824600000000028,246,000 &1000000000000006300000063 $&1000000000003729000000037,290 ملین $&100000000000013200000001,320 سوم ازبک
Flag of ترک جمہوریہ شمالی قبرص ترک جمہوریہ شمالی قبرص (مشاہد) شمالی نیکوسیا &100000000000033550000003,355 &10000000000294906000000294,906 &1000000000000008600000086 $&100000000000039000000003,900 ملین $&1000000000001615800000016,158 ترکی لیرا ترکی

دیگر تنظیموں کے ساتھ تعلقات[ترمیم]

عرب لیگ او آئی سی رکن ممالک کا پارلیمانی اتحاد تنظیم تعاون اسلامی مغرب عربی اتحاد اغادیر معاہدہ عرب اقتصادی اتحاد کونسل مجلس تعاون برائے خلیجی عرب ممالک مغربی افریقی اقتصادی و مالیاتی اتحاد اقتصادی تعاون تنظیم ترکی کونسل لپتاکو-گوورما اتھارٹی لپتاکو-گوورما اتھارٹی اقتصادی تعاون تنظیم البانیہ ملائشیا افغانستان لیبیا الجزائر تونس مراکش لبنان مصر صومالیہ آذربائیجان بحرین بنگلہ دیش بینن برونائی برکینا فاسو کیمرون چاڈ اتحاد القمری جبوتی گیمبیا جمہوریہ گنی گنی بساؤ گیانا انڈونیشیا ایران عراق کوت داوواغ اردن قازقستان کویت کرغیزستان مالدیپ مالی موریتانیہ موزمبیق نائجر نائجیریا سلطنت عمان پاکستان قطر سوڈان فلسطین سرینام شام تاجکستان ٹوگو ترکی ترکمانستان یوگنڈا متحدہ عرب امارات ازبکستان يمن سینیگال گیبون سیرالیون مغرب عربی اتحاد اغادیر معاہدہ سعودی عرب
تنظیم تعاون اسلامی کے اندر مختلف کثیر القومی تنظیموں کے درمیان تعلقات۔ ایک کلک پزیر اویلر تصویر مبت



بیرونی روابط[ترمیم]

ای سی او کی ویب سائٹ

حوالہ جات[ترمیم]