اقرا عزیز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پیدائش 24 نومبر 1997ء (عمر 22 سال)[1][2][3]
کراچی، سندھ، پاکستان
قومیت پاکستانی
مادر علمی جامعہ کراچی
پیشہ اداکارہ، ماڈل
سالہائے فعالیت ۲۰۱۴ء–موجود
ساتھی یاسر حسین (۲۰۱۹ء–تاحال)[4]
رشتے دار صدرا عزیز (بہن)

اقراء عزیز (پیدائش : 24 نومبر 1997ء) ایک پاکستانی اداکارہ ہیں۔ اُنہوں نے 2018ء میں مومِنہ دُرید کی تمثیل سُنو چندا میں اجیہ کا کردار ادا کیا، جس پر اُنہیں لکس سِجل اعزازات کی جانب سے بہترین بعید نمائی اداکارہ کا تمغا عطا کیا گیا۔ اُنہیں اُردوُ تمثیلات میں اپنی اداکاری کے باعث ہم ایوارڈز کی جانب سے بھی 2 تمغات موصُول۔

اقراء نے اس شعبے میں اپنی رَوِش کا آغاز سٹرس ٹیلینٹ ایجنسی کے زیرِ سایہ ایک تجارتی نمائندہ کی حیثیت سے کیا۔ اُنہوں نے اپنی اداکاری کا آغاز 2014ء میں ہم ٹی وی کے ڈرامے کسے اپنا کہیں میں ایک معاون کردار سے کیا اور اپنا پہلا مرکزی کردار 2015ء میں ہم ٹی وی کے ڈرامے مقدس میں نبھایا۔ بعد ازاں اُنہیں اپنی ڈرامےات مول (2015ء)، دیوانہ (2016ء)، لاج (2016ء)، سوچا نہ تھا (2016ء)، چھوٹی سی زندگی (2016ء)، ناٹک (2016ء)، گستاخ عشق (2017ء)، غیرت (2017ء)، قربان(2017ء)، تعبیر(2018ء) اور رانجھا رانجھا کردی (2018ء) میں اپنی جاندار اداکاری کے باعث ناقابلِ فراموش شہرت موصول ہوئی۔[5][6]

ابتدائی زندگی[ترمیم]

اقراء عزیز 24 نومبر 1997ء کو ایک سندھی گھرانے میں عبد العزیز اور آسیہ عزیز کے گھر پیدا ہوئیں۔ اُن کے خاندان میں 3 افراد شامل ہیں یعنی اُن کی والدہ، اُن کی ہمشیرہ اور وہ خود۔[7] کم سنی میں والد کے انتقال کے بعد اُن کی کفالت اُن کی والدہ نے ہی کی۔ اُنہوں نے کئی جگہوں پر اپنی والدہ کی بے پناہ جد و جہد کی وضاحت بھی کی۔ اقراء عزیز اپنی والدہ کے ساتھ ہی کراچی میں مُقیم ہیں۔[8][9] اُن کے پاس جامعہ کراچی سے تجارت بحقُ الرّوایہ کی ایک نامُکمّل سند بھی موجود ہے جسے وہ تا بہ مقدور جلد از جلد مُکمّل کرنے کی خواہاں ہیں۔[7][10][11]

رَوِش[ترمیم]

اقراء عزیز نے تماش کاری میں اپنی رَوِش کا آغاز 14 سال کی عمر میں کیا۔ وہ اپنے ایک انٹرویو میں بیان کرتی ہیں کہ اُن کی والدہ کی شدید خواہش تھی کہ اُن کی بیٹی اداکاری سے قبل اپنی تعلیم مُکمّل کرلے۔ اقراء پہلی بار ایک تجارتی نمائندہ کی صورت میں نظر آئیں اور سٹرس ٹیلنٹ ایجنسی نے اُنہیں موقع فراہم کیا[7]۔ بعد ازاں ہم ٹی وی کی ڈراماتی تخلیق کار مومنہ درید کو اُن سے التفات ہوا اور اُنہوں نے اقراء کو اپنا ڈراما کسے اپنا کہیں میں ایک کردار پیش کیا، جس میں اُنہوں نے دانش تیمور، اریج فاطمہ، شبیر جان اور دیگر تجربہ کار اداکاروں کے ہمراہ کام کیا۔[7][12]

تماش کاری میں اپنی رَوِش جاری رکھتے ہوئے اُنہوں نے ہم ٹی وی کے ڈرامے مُقدّس میں نور حسن کے ہمراہ مرکزی کردار ادا کیا جو عدیل رزّاق کے ناول سے ماخوذ تھا۔[13] یہ کردار اُن کی کیریئر میں خاصی پیش رفت کا باعث بنا اور اس کے لیے اُنہیں ہم ٹی وی کی جانب سے بہترین تماش کاری انگیخت (زن) کا خطاب دیا گیا۔[14] اس کے بَجُز اس ڈراما کو سالانہ لکس اسٹائل ایوارڈز میں بہترین ٹیلی ویژن ڈراما کے تمغے کے لیے بھی نامزد کیا گیا۔ اُسی سال اُنہوں نے الیاس کشمیری کی ڈراما مول میں بھی ایک مُتوازی-مرکزی کردار ادا کیا۔[13]

2016ء میں اُنہیں ہم ٹی وی کے ڈرامے سوچا نہ تھا میں مرکزی کرداروں میں پایا گیا- بعد ازاں اُنہوں نے دیوانہ میں ایک شرارتی جن فلک (شہروز سبزواری) کی دوست مہر سلطانہ (مہرُو) کا کردار ادا کیا۔ اس کے بعد اُنہوں نے احمد بھٹّی کے ڈرامے کسے چاہوں میں معاون کردار مرینہ زمان اور ایک ڈراما لاج میں منّت چوہدری کا کردار ادا کیا۔ ہم ٹی وی کے ڈرامے چھوٹی سی زندگی میں اداکار شہزاد شیخ سے اُن کے ڈرامےی ہم آہنگی کو خوب سراہا گیا اور اُنہیں بہترین تمثیلی جوڑے کے تمغے کے لیے نامزد کیا گیا۔[15][16][16] اسی ڈراما کے باعث اُنہیں ہم ٹی وی کی جانب سے بہترین اداکارہ کا تمغا بھی موصول ہوا۔[16]

2017ء میں اُنہوں نے اُردُو ۱ کے ڈرامے میں مرکزی کردار اور ہم ٹی وی کے ڈرامے دلِ جانم میں مہمان اداکار کی حیثیت سے کام کیا۔[17] بعد ازاں اُنہوں نے اے آر وائی ڈیجیٹل کے ڈرامے غیرت(ناموسی قتل پر مبنی ڈراما) میں سیّد جبران اور عبدالمُنیب بٹ کے ہمراہ اور ہم ٹی وی کے ڈرامے خاموشی میں زارا نُور عبّاس، عفّان وحید اور بلال خان کے ہمراہ مرکزی کردار ادا کیے۔[18][19]خاموشی میں اُنہوں نے ایک مغرُور، لالچی اور مُخالف لڑکی نعیمہ کا کردار ادا کیا۔[20] مینگوباز کے ایک تجزیہ کار لکھتے ہیں کہ، "اُنہوں نے جس حُسنِ عمل سے نعیمہ کا کردار پیش کیا، تمام ناظرین نعیمہ سے نفرت کرنے پر مجبور ہو گئے۔"[21] اُنہوں نے ہم ٹی وی کے برائیڈل کوچور ویک میں بھی عائشہ فرید کے ملبوساتی مجموعے کی نمائندگی کی۔[22]

جنوری 2018ء میں اُنہوں نے حمزہ ملک اور راحت فتح علی خان کے موسیقی منظرے "او جاناں"[23] اور عاصم اظہر کے موسیقی منظرے "جو تو نی ملا" میں کام کیا جو جولائی 2018ء میں شائع ہوئی۔[24][25] اس سے چند ماہ قبل اُنہوں نے شہزاد شیخ، بلال عبّاس خان اور عُمیر رانا کے ہمراہ اے آر وائی ڈیجیٹل کے ڈرامے قُربان میں ایک چُلبُلی اور معتمد لڑکی ہیر کا کردار ادا کیا۔[26] رمضان 1440ھ بمُطابق مئی 2018ء میں اُنہوں نے فرہان سعید کی ہمراہ ہم ٹی وی کے ڈرامے سُنو چندا میں اجیہ نزاکت علی کا کردار ادا کیا جس میں اُن دونوں کو اپنی ڈرامےی ہم آہنگی کے باعث خوب سراہا گیا۔[27][28] اسی ڈراما کے باعث اُنہیں لکس سٹائل ایوارڈز کی جانب سے بہترین "بعید نمائی اداکارہ" کا تمغا بھی موصول ہوا۔[29] اُنہوں نے ہم ٹی وی کے ڈرامے تعبیر میں مرکزی کردار ادا کیا۔ دی ایکسپریس ٹریبیون کے احمد صارم فرماتے ہیں کہ، "اقراء عزیز نے انتہائی کم عمری میں اپنے اداکارانہ جواہر کو ایک خوشحال جیہ سے مُبتذل نعیمہ تک اور ایک مختوب کردار تعبیر تک، مُختلف اقسام کے کرداروں کے ذریعے ثابت کیا ہے۔"[30]

پھر اُنہیں فائزہ افتخار کی مرقومہ ڈراما رانجھا رانجھا کردی میں دیکھا گیا۔ اُن کے خاکروبین سے مُتعلقہ کردار "نُوری کو ناقدین نے بھی خوب سراہا۔[31] اُن کے دیگر ڈرامای منصوبات میں ہم ٹی وی کے ڈرامے سُنو چندا بھی شامل ہے جو دو مُختلف سلسلوں پر مُشتمل ہے۔ اس کے ہدایت کار احسن طالش اور تخلیق کار مومنہ دُرید ہیں۔[32][33]

ذرائع ابلاغ میں شبیع[ترمیم]

اقراء عزیز نے پاکستانی صنعتِ ڈراما میں اپنی حیثیت ایک مرکزی اداکارہ کے طور پر قائم کرلی ہے۔ وہ مُختلف مُذاکراتی تقاریب کی مہمان بھی بن چُکی ہیں۔ اُنہوں نے اوّلاً 2015ء میں ندا یاسر کے مارننگ شو جاگو پاکستان جاگو میں شرکت فرمائی، پھر 2018ء میں یاسر حُسین کی مُذاکراتی تقریب "دی آفٹرمُون شو" میں مہمان بنیں۔ مئی 2018ء میں سٹرس ٹیلنٹ ایجنسی سے مُعاہدے کے بعد وہ صحافیوں کے سوالات کی نذر ہوگئیں۔[34][35][15]

سٹرس ٹیلنٹ ایجنسی کے سربراہ، فہد حُسین فرماتے ہیں کہ، "اقراء عزیز نے ہم سے مُعاہدہ کیا تھا کہ وہ ہم سے غیر تصدیق شُدہ اشتہارات کی نُمائندگی نہیں کریں گی، جس کے برعکس، اُنہوں نے ایک اور پی آر ایجنسی سے تعلُّقات استوار کر لیے۔"[34][36][35][37] جواباً اُنہوں نے ان تمام الزامات سے انکار کرتے ہوئے فرمایا کہ، "فہد نے کبھی مُجھے مُعاہدہ نامے کی نقل فراہم نہ کی اور اس کے علاوہ وہ کئی مہینوں سے میرے مُعاوضوں کی ادائیگی میں بھی تاخیری حربے استعمال کر رہے ہیں۔"[38][39][40][41] بعد ازاں اُن دونوں کے وُکلاء نے یہ تنازع حل کر دیا، جس پر اُن دونوں نے کہا کہ،

“ہم اپنے وُکلاء کے مشکُور ہیں، جنہوں نے ہمارے مابین تناقصِ ربط اور غلط فہمی کے سبب پیدا ہونے والے تنازعات کو ہمارے درمیان ثالثہ کرکے حل کردیا۔ اور اب ہم نے باہنی رضامندی سے مُستقبل میں دوبارہ ایک ساتھ کام کرنے کا بھی فیصلہ کرلیا ہے۔”[42]

ستمبر ۲۰۱۸ء میں اُنہیں ہم اسٹائل ایوارڈز کی جانب سے "سجیلی ترین اداکارہ" کا تمغہ عطا کیا گیا۔[43] وہ ۷ اپ، نیسلے اور کیڈبری سمیت کئی تجارتی کاروانوں کی سفیر بھی ہیں۔ نومبر ۲۰۱۸ء میں ماڈل حسنین لہری کے ہمراہ پاکستان میں اوپو اے ۷ کی تشہیر میں شرکت کی اور اس کاروان کی بھی سفیر رہیں۔[44] رانجھا رانجھا کردی اور سُنو چندا کی کامیابی کے بعد ناقدین نے اُنہیں صنعتِ ڈراماِ پاکستان کی سب سے مُتاثر کُن اداکارہ کا خطاب عطا کیا۔[45]

ذاتی زندگی[ترمیم]

اُن کی والدہ پاکستان میں کریم کی پہلی خاتُون گاڑی بان ہیں۔

اُن کی بڑی بہن صدرہ عزیز پیشے کے اعتبار سے ایک اُستانی ہیں۔

۷ جولائی ۲۰۱۹ء کو اٹّھارہویں سالانہ لکس اسٹائل ایوارڈز کی تقریب کے دوران اداکار یاسر حُسین سے اُن کی باقاعدہ منگنی کا اعلان کردیا گیا۔

تمثیلات[ترمیم]

ٹیلی ویژن[ترمیم]

سال اسماء کردار اختتامیہ
۲۰۱۴ء کسے اپنا کہیں شانزے
۲۰۱۵ء مُقدّس مُقدّس
۲۰۱۵ء مول سجل بہترین ڈرامای انگیخت (زن)[15]
۲۰۱۶ء سوچا نہ تھا شفق
۲۰۱۶ء دیوانہ مہر سُلطانہ
۲۰۱۶ء کسے چاہوں مرینہ زمان
۲۰۱۶ء لاج منّت
۲۰۱۶ء تا ۲۰۱۷ء چھوٹی سی زندگی امینہ
۲۰۱۶ء ناٹک شفق
۲۰۱۷ء جُدائی زُنیرہ (زُونی) ٹیلی فلم
۲۰۱۷ء گستاخ عشق نجف
۲۰۱۷ء دلِ جانم سمیرہ مہمان اداکار
۲۰۱۷ء غیرت صباء
۲۰۱۷ء خاموشی نعیمہ صابر
‌ ۲۰۱۷ء قُربان ہیر
۲۰۱۸ء سُنو چندا جیا [30]
۲۰۱۸ء تعبیر تعبیر
۲۰۱۸ء تا ۲۰۱۹ء رانجھا رانجھا کردی نُور بانو (نُوری) [46]
۲۰۱۹ء جھُوٹی TBA تخلیق جاری ہے[47]
۲۰۱۹ء میرا ٹیڑھا یار TBA شائع ہو چُکا[48]

موسیقی منظرے[ترمیم]

سال گیت فنکار اختتامیہ
۲۰۱۸ء "او جاناں" راحت فتح علی خان, حمزہ ملک [23]
۲۰۱۸ء "جو تُو نہ ملا" عاصم اظہر [24]

تمغات میں نامزدگی[ترمیم]

سال ڈراما تمغہ زمرہ انجام Ref
2016ء مول ہم اعزازات بہترین ٹیلی ویژن انگیخت اداکارہ فاتح [15]
2016ء ہم اعزازات بہترین معاون اداکارہ نامزد [15]
2017ء چھوٹی سی زندگی ہم اعزازات بہترین اداکارہ مشہور نامزد [49]
2017ء ہم اعزازات بہترین ٹی وی جوڑا ہمراہ شہزاد شیخ نامزد [49]
2018ء None ہم سجل اعزازات سجیلی ترین اداکارہ فاتح [43]
2019ء سُنو چندا لکس سجل اعزازات بہترین ٹی وی اداکارہ – ناظرین فاتح [29]
2019ء لکس اسٹائل اعزاز بہترین ٹی وی اداکارہ – ناقدین فاتح [29]
2019ء ہم اعزازات بہترین اداکارہ نامزد [50]
2019ء ہم اعزازات بہترین ٹی وی جوڑا ہمراہ فرہان سعید نامزد [50]
2019ء تعبیر بہترین اداکارہ نامزد [50]
2019ء ہم اعزازات بہترین ٹی وی جوڑا ہمراہ شہزاد شیخ نامزد [50]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Madeeha Syed (12 اگست 2018)۔ "The icon interview: will the real Iqra Aziz please stand up?"۔ Dawn۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2019۔
  2. "I've turned 20 not 21"" (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-17۔
  3. "Iqra Aziz and Yasir Hussain celebrated their birthdays together last night"۔ Daily Pakistan Global (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-06۔
  4. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ :1 نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  5. "Iqra Aziz eyes good script for silver screen debut"۔ دنیا نیوز (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-17۔
  6. "Women need to respect other women: Iqra Aziz - Daily Times"۔ Daily Times (انگریزی زبان میں)۔ 2018-07-19۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-17۔
  7. ^ ا ب پ ت Madeeha Syed (2018-08-12)۔ "I love that Suno Chanda united families, says Iqra Aziz"۔ Dawn (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-17۔
  8. "Daughter of a Careem driver"۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-31۔
  9. "Daughter of the first female Careem driver - Iqra Aziz"۔ Good Times۔
  10. "The fierce actor | TNS - The News on Sunday"۔ The News International (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-23۔
  11. "Iqra Aziz's Transformation Pictures And Our Haww Hayee"۔ دنیا نیوز (انگریزی زبان میں)۔ 2018-06-27۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-23۔
  12. "Kinetic Iqra underlines team work as the key to success"۔ Gulf Times (عربی زبان میں)۔ 2018-08-29۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-23۔
  13. ^ ا ب Buraq Shabbir۔ "TV actors we want to see in cinema"۔ دی نیوز (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-04-30۔
  14. "Lux Style Awards 2016 nominations revealed at star-studded event | The Express Tribune"۔ The Express Tribune (انگریزی زبان میں)۔ 2016-05-31۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-07-04۔
  15. ^ ا ب پ ت ٹ "TV actor Iqra Aziz served with legal notice"۔ پاکستان ٹوڈے (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-17۔
  16. ^ ا ب پ "Hum Awards 2017 reveals nominations"۔ The Nation (انگریزی زبان میں)۔ 2017-04-09۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-07-04۔
  17. Saira Khan (2017-06-13)۔ "Zahid Ahmed and Iqra Aziz will star together in 'Gustakh Ishq'"۔ HIP (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-04-30۔
  18. Yusra Jabeen (2017-07-24)۔ "TV drama Ghairat explores the aftermath of an honour killing"۔ Dawn (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-07-03۔
  19. "Bilal Khan on his upcoming play Khamoshi, starring Zara Noor and Iqra Aziz"۔ دی نیوز (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-07-07۔
  20. Instep Desk۔ "Women and the art of playing negative roles on TV"۔ The News International (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-06۔
  21. "Here's Why Naeema From Drama "Khamoshi" Is THE Most Hated Character Of 2018"۔ MangoBaaz (انگریزی زبان میں)۔ 2018-05-16۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-17۔
  22. "Demesne Couture steals the show on PHBCW Day 2"۔ پاکستان ٹوڈے (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-22۔
  23. ^ ا ب "Hamza Malik, Iqra Aziz's mesmerizing clips from 'O Jaana' will melt your heart"۔ روزنامہ پاکستان (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-17۔
  24. ^ ا ب "Iqra Aziz , Asim Azhar coming up with something very exciting!"۔ روزنامہ پاکستان (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-10-17۔
  25. "Karan Johar loves Asim Azhar's new song"۔ www.pakistantoday.com.pk (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-23۔
  26. "'Qurbaan' Drama Gets a Release Date"۔ روزنامہ پاکستان (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-07-07۔
  27. "7 game changers of 2018 that revolutionised Pakistan's drama industry"۔ The Express Tribune (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-06۔
  28. "'Suno Chanda' is a Ramadan hit in Pakistan"۔ Gulf News (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-06۔
  29. ^ ا ب پ "Who won at the mega Lux Style Awards 2019?"۔ The News International (انگریزی زبان میں)۔ 2019-07-08۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-07-08۔
  30. ^ ا ب "I didn't expect such a massive response to 'Suno Chanda': Iqra Aziz | The Express Tribune"۔ دی ایکسپریس ٹریبیون (انگریزی زبان میں)۔ 2018-07-04۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-07-07۔
  31. "Iqra Aziz returns to TV with spunky role"۔ Gulf News (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-10۔
  32. "'Suno Chanda' sequel in works, confirms Iqra Aziz | The Express Tribune"۔ دی ایکسپریس ٹریبیون (انگریزی زبان میں)۔ 2018-08-06۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-07۔
  33. "'Suno Chanda' is returning for a second season"۔ Daily Times (انگریزی زبان میں)۔ 2018-08-07۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-06۔
  34. ^ ا ب "Actress Iqra Aziz served with a legal notice from her talent agency"۔ Business Recorder۔
  35. ^ ا ب "Actress Iqra Aziz in trouble after getting a legal notice"۔ Daily Pakistan Global (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-01۔
  36. "Iqra Aziz's legal woes take an ugly turn"۔ www.pakistantoday.com.pk (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-01۔
  37. "Iqra Aziz gets legal notice for allegedly breaching contract | The Express Tribune"۔ The Express Tribune (انگریزی زبان میں)۔ 2018-05-07۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-01۔
  38. "Iqra Aziz denies allegations made by Fahad Hussain | The Express Tribune"۔ The Express Tribune (انگریزی زبان میں)۔ 2018-05-10۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-01۔
  39. "Iqra Aziz denies all allegations made by 'Citrus Talent' agency"۔ Daily Pakistan Global (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-01۔
  40. "Iqra Aziz and Fahad Hussain settle dispute involving breach of contract"۔ www.pakistantoday.com.pk (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-01۔
  41. "Iqra Aziz, Fahad Hussain fued resolved – Daily Times"۔ Daily Times (انگریزی زبان میں)۔ 2018-05-29۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-01۔
  42. "Iqra Aziz, Fahad Hussain resolve issue of alleged breach of contract | The Express Tribune"۔ The Express Tribune (انگریزی زبان میں)۔ 2018-05-28۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-01۔
  43. ^ ا ب "Hum style Awards 2018"۔ Daily Times (انگریزی زبان میں)۔ 2018-09-06۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-09-06۔
  44. Sponsor (2018-11-20)۔ "This campaign pairs up Iqra Aziz and Hasnan Lehri on screen for the first time ever"۔ DAWN (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-23۔
  45. Instep (2019-03-10)۔ "Inspirational female characters on television"۔ TNS – The News on Sunday (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-03-13۔
  46. "Ranjha Ranjha Kardi to go on air from today"۔ The Nation (انگریزی زبان میں)۔ 2018-11-02۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-11-10۔
  47. Irfan Ul Haq (2019-07-06)۔ "Ahmed Ali Butt and Iqra Aziz will be seen together for the first time in Jhooti"۔ DAWN (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-09-22۔ Unknown parameter |url-status= ignored (معاونت)
  48. sidra (2019-09-19)۔ "Iqra Aziz and Ahmad Ali Akbar's Poster made Fans Curious"۔ Reviewit (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-09-22۔ Unknown parameter |url-status= ignored (معاونت)
  49. ^ ا ب "Hum Awards 2017 reveals nominations"۔ دی نیشن (پاکستان) (انگریزی زبان میں)۔ 2017-04-09۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-05-01۔
  50. ^ ا ب پ ت "IQRA AZIZ🇵🇰 on Instagram: "Allah tera Shukriya🌺 @humtvpakistanofficial 🌟""۔ Instagram (انگریزی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-07-13۔