اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کی قرارداد 68/262

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اقوام متحدہ جنرل اسمبلی
قرارداد 68/262
تاریخ 27 مارچ 2014
اجلاس نمبر 80ویں کلی کانفرنس
کوڈ A/RES/68/262 (دستاویز)
موضوع یوکرین کی علاقائی سالمیت
رائے شماری کا خلاصہ
100 ووٹ حق میں
58 احتراز
نتیجہ قرارداد منظور کر لی گئی
Results of the United Nations General Assembly vote about the territorial integrity of Ukraine.
  حمایت میں
  مخالفت کی
  احتناب کیا
  رائے شماری سے غیر حاضری
  غیر رکن ممالک
A map showing the vote for the United Nations General Assembly resolution 68/262 in Europe.
  حمایت میں
  مخالفت کی
  احتناب کیا
  غیر حاضری
  غیر رکن ممالک
A map showing the United Nations General Assembly resolution 68/262 vote in Africa.
  حمایت میں
  مخالفت کی
  احتناب کیا
  غیر حاضری
  غیر رکن ممالک

اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کی قرارداد 68/262 کو 27 مارچ 2014ء کو اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کے 68ویں اجلاس میں کریمیا کے روسی الحاق کے جواب میں باعنوان یوکرین: علاقائی سالیمت کا حقدار ہے منظور کیا گیا تھا۔

رائے شماری[ترمیم]

ووٹ[1] تعداد ریاستیں دنیا کی آبادی کا فیصد کا فیصد ووٹ اقوام متحدہ کے رکن ممالک کا فیصد

اقوام متحدہ کے رکن ممالک

منظور 100 البانیا، انڈورا، آسٹریلیا، آسٹریا، آذربائیجان، بہاماس، بحرین، بارباڈوس، بلجئیم، بینن، بھوٹان، بلغاریہ، کیمرون، کینیڈا، کیپ ورڈی، وسطی افریقی جمہوریہ، چاڈ، چلی، کولمبیا، کوسٹاریکا، کرویئشا، قبرص، چیک جمہوریہ، جمہوری جمہوریہ کانگو، ڈنمارک، جمہوریہ ڈومینیکن، استونیا، فن لینڈ، فرانس، Georgia، جرمنی، یونان، گواتیمالا، جمہوریہ گنی، ہیٹی، ہونڈوراس، مجارستان، آئس لینڈ، انڈونیشیا، جمہوریہ آئرلینڈ، اطالیہ، جاپان، اردن، کیریباتی، کویت، لٹویا، لائبیریا، لیبیا، لیختینستائن، لتھووینیا، لکسمبرگ، جمہوریہ مقدونیہ، مڈغاسکر، ملاوی، موریشس، ملائیشیا، مالدیپ، مالٹا، جزائر مارشل، میکسیکو، ریاستہائے وفاقیہ مائکرونیشیا، مالدووا، موناکو، مونٹینیگرو، نیدرلینڈز، نیوزی لینڈ، نائجر، نائجیریا، ناروے، پلاؤ، پاناما، پاپوا نیو گنی، پیرو، فلپائن، پولینڈ، پرتگال، قطر، رومانیہ، سامووا، سان مارینو، سعودی عرب، سیچیلیس، سیرالیون، سنگاپور، سلوواکیہ، سلووینیا، جزائر سلیمان، صومالیہ، ہسپانیہ، جنوبی کوریا، سویڈن، سویٹزرلینڈ، تھائی لینڈ، ٹوگو، ٹرینیڈاڈ و ٹوباگو، تونس، ترکی، یوکرین، مملکت متحدہ، ریاستہائے متحدہ امریکا 33.80% 59.17% 51.81%
مسترد 11 آرمینیا، بیلاروس، بولیویا، کیوبا، نکاراگوا، شمالی کوریا، روس، سوڈان، سوریہ، وینیزویلا، زمبابوے 4.49% 6.51% 5.70%
اجتناب 58 افغانستان، الجزائر، انگولہ، اینٹیگوا و باربوڈا، ارجنٹائن، بنگلہ دیش، بوٹسوانا، برازیل، برونائی دار السلام، برکینا فاسو، برونڈی، کمبوڈیا، چین، اتحاد القمری، جبوتی، ڈومینیکا، ایکواڈور، مصر، ایل سیلواڈور، ارتریا، ایتھوپیا، فجی، گیبون، گیمبیا، گیانا، بھارت، عراق، جمیکا، قازقستان، کینیا، لیسوتھو، مالی، موریتانیہ، منگولیا، موزمبیق، میانمار، نمیبیا، نیپال، ناورو، پاکستان، پیراگوئے، روانڈا، سینٹ کیٹز و ناویس، سینٹ لوسیا، سینٹ وینسینٹ و گریناڈائنز، ساؤ ٹومے و پرنسپے، سینیگال، جنوبی افریقا، جنوبی سوڈان، سری لنکا، سرینام، سوازی لینڈ، تنزانیہ، یوگنڈا، یوراگوئے، ازبکستان، ویت نام، زیمبیا 58.15% 34.32% 30.05%
غیر حاضر 24 بیلیز، بوسنیا و ہرزیگووینا، جمہوریہ کانگو، آئیوری کوسٹ، استوائی گنی، گھانا، گریناڈا، گنی بساؤ، ایران، اسرائیل، کرغیزستان، لاؤس، لبنان، مراکش، سلطنت عمان، سربیا، تاجکستان، مشرقی تیمور، ٹونگا، ترکمانستان، تووالو، متحدہ عرب امارات، وانواتو، یمن 3.56% 12.44%
کل 193 100% 100%

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Voting Record on Draft Resolution A/68/L.39 یوکرین کی علاقائی سالمیت"۔ پیپر سمارٹ۔ اقوام متحدہ۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2014-04-11۔

left