الامالی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

الامالی :املا کی جمع ہے وہ کتاب جس میں شیخ کے املا کرائے ہوئے فوائد ونکاتِ حدیث جمع ہوں۔
پہلے زمانے میں طریقہ یہ ہوتا کہ استاذ اپنی یاد کی ہوئی حدیثیں اپنے شاگردوں کو املا کراتا املا یہ ہے کہ اس کے شاگرد قلم دوات کے ساتھ بیٹھتے اور جو استاذ بولتا لکھتے جاتے اس طرح شاگرد کے پاس کئی مجالس کے بعد مجموعہ تیار ہوجاتا اسے وہ شیخ کی امالی کہتا۔ اس کی مثال حافظ ابن حجر کی امالی
اورامالی امام محمد ہے۔

جس وقت طباعت کا کام عام ہوا تو لکھوانے املاءکا طریقہ مفقود ہوتا گیا[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. مرقاۃ المفاتیح شرح مشکوۃ المصابیح،ملا علی قاری جلد اول صفحہ51 مکتبہ رحمانیہ لاہور