الایمان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

الایمان : مدینہ منورہ کے بہت سے ناموں میں سے ایک نام الایمان بھی ہے جس کے معنی ہیں امن کی جگہ(امن دینے والی جگہ)

  • Ra bracket.png وَالَّذِينَ تَبَوَّؤُوا الدَّارَ وَالْإِيمَانَ مِن قَبْلِهِمْ يُحِبُّونَ مَنْ هَاجَرَ إِلَيْهِمْ وَلَا يَجِدُونَ فِي صُدُورِهِمْ حَاجَةً مِّمَّا أُوتُوا وَيُؤْثِرُونَ عَلَى أَنفُسِهِمْ وَلَوْ كَانَ بِهِمْ خَصَاصَةٌ وَمَن يُوقَ شُحَّ نَفْسِهِ فَأُولَئِكَ هُمُ الْمُفْلِحُونَ Aya-9.png La bracket.png
  • اور ان لوگوں کے لیے بھی جو مہاجرین سے پہلے ہجرت کے گھر مدینہ میں مقیم اور ایمان میں مستقل رہے اور جو لوگ ہجرت کر کے ان کے پاس آتے ہیں ان سے محبت کرتے ہیں۔ اور جو کچھ ان کو ملا اس سے اپنے دل میں کچھ خواہش اور خلش نہیں پاتے اور ان کو اپنے آپ سے مقدم رکھتے ہیں خواہ وہ خود ضرورت مند ہوں اور جو شخص نفس کی حرص سے بچا لیا گیا تو ایسے ہی لوگ مراد پانے والے ہیں

انصار کی ان خصوصیات پرور گھر کی دائمی علامت قرار دیتے ہوئے مدینہ منورہ کو یہ نام دیا گیا [1]
ابن ابی شیبہ والبخاری وابن مردویہ نے حضرت عمر سے روایت کیا کہ انہوں نے فرمایا کہ میں اپنے بعد آنے والے خلیفہ کو مہاجرین اولین کے بارے میں وصیت کرتا ہوں کہ ان کے حقوق کو پہچانے اور ان کی عزت کی حفاظت کرے اور میں اسے ان انصار کے بارے میں وصیت کرتا ہوں جو نبی مکرم (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کی ہجرت سے پہلے دار الہجرت میں مقیم رہے اور ایمان میں ثابت قدم رہے کہ وہ ان کی نیکیوں اور اعمال خیر کو قبول کرے اور ان کی خطاؤں اور غلطیوں کو معاف کرے۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. مدینہ منورہ ،صفحہ 25 محمد مسعود عبدہ،مشربہ علم و حکمت (دارالشکر) لاہور
  2. تفسیر الدر المنثور جلال الدین سیوطی