البرٹ آئنسٹائن کا دماغ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
البرٹ آئنسٹائن کے دماغ کو اس کی موت کے بعد 1955 میں محفوظ کیا گیا تھا لیکن یہ بات 1978 میں منظر عام پر آئی۔

البرٹ آئنسٹائن کے دماغ کو اس کی موت کے ساڑھے سات گھنٹے کے اندر نکال لیا گیا تھا۔ ماہرین کو اس کے 20 ویں صدی کا جینیس ہونے کی وجہ سے اس کے دماغ سے بہت دلچسپی تھی۔ آئنسٹائن کی آٹوپسی پرنسٹن ہسپتال میں ہوئی تھی۔ یہ آٹوپسی پیتھالوجسٹ تھامس سٹولز ہاروے نے کی۔[1] اس کے بعد دماغ کو پنسلوینیا یونیورسٹی کی لیب میں لے جایا گیا۔ یہاں آئنسٹائن کے دماغ کے کئی ٹکڑے کیے گئے۔ کچھ ٹکڑے ہاروے نے اپنے پاس رکھے اور باقی دوسرے پیتھالوجسٹس کو دے دیے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "The strange afterlife of Einstein's brain"۔ BBC۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔

بیرونی روابط[ترمیم]