الزبیتھ سٹینٹن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
الزبیتھ سٹینٹن
(انگریزی میں: Elizabeth Cady Stanton ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Elizabeth Stanton.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 12 نومبر 1815[1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جونزٹاؤن (سٹی)، نیو یارک  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 26 اکتوبر 1902 (87 سال)[1][2][3][4][5][6][7]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
نیویارک شہر  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجہ وفات عَجزِ قلب  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن ووڈ لان قبرستان  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت ریپبلکن پارٹی  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات ہینری براؤسٹر سٹینٹن (1 مئی 1840–14 جنوری 1887)  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد تھیوڈور سٹینٹن،  ہیرٹ ایٹن سٹینٹن  ویکی ڈیٹا پر (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد ڈانیئل کیڈی  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ مارگیرٹ چن کیڈی  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی ایما والرڈ اسکول  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ مصنفہ[8]،  خواتین کے حق رائے دہی کی حامی،  حامی حقوق نسواں،  انسدادیت پسند[8]  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[9]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل انسدادیت پسندی  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
نیشنل وومنز ہال آف فیم (1973)[10]  ویکی ڈیٹا پر (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Elizabeth Cady Stanton.svg
 

الزبیتھ سٹینسن (انگریزی: Elizabeth Cady Stanton) انیسویں صدی کے وسط سے آخیر تک کی معروف امریکی حقوق نسواں تحریک کی رہنما تھیں۔ جنھوں نے جذبوں کا اعلامیہ (Declaration of Sentiments) لکھی۔[11] 1848ء میں لکریشیاموٹ اور بہت سے دوسری عورتوں میں کے ساتھ کر سنیکا فالز اجتماع منعقد کیا۔

بچپن، تعلیم، شادی[ترمیم]

الزبیتھ سٹینسن کی ولادت 12 نومبر 1815ء کو جونزٹاؤن (سٹی)، نیو یارک میں ہوئی۔ 1832ء میں ایما ولارڈ اسکول جسے اصل میں ٹرائے فیمل سیمینری (Emma Willard School) کہا جاتا ہے، سے گریجوایشن کی اور اپنی خالہ زاد، مشہور مصلح گیرٹ سمتھ سے متاثر ہو کر عورتوں کی تحریک کی طرف مائل ہوئیں۔ 1840ء میں ہینری سٹینسن سے شادی کی[12] While uncommon, this practice was not unheard of; Quakers had been omitting "obey" from the marriage ceremony for some time.[13] اور شادی کے فوراً بعد دونوں نے لندن میں منعقدہ عالمی غلامی مخالف اجلاس (World Anti-Slavery Convention) میں شرکت کی۔

حقوق نسواں سے وابستگی[ترمیم]

1840ء میں الزبیتھ سٹینسن نے لندن میں منعقدہ عالمی غلامی مخالف اجلاس (World Anti-Slavery Convention) میں شرکت کی۔ وہاں الزبیتھ سٹینسن نے دوسری عورتوں کے ساتھ مل کر اسمبلی میں عورتوں کو شامل نہ کرنے کے حوالے سے احتجاج میں حصہ لیا۔ الزبیتھ سٹینسن نے 1848ء میں لکریشیاموٹ اور بہت سے دوسری عورتوں کے ساتھ کر سنیکا فالز اجتماع منعقد کیا اور اس کے بعد کتاب جذبوں کا اعلامیہ (Declaration of Sentiments) لکھی جو عورتوں کے حق رائے دہی تحریک کا نقطۂ آغاز تھا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb119925713 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  2. ^ ا ب دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Elizabeth-Cady-Stanton — بنام: Elizabeth Cady Stanton — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  3. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6hh6n2p — بنام: Elizabeth Cady Stanton — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/memorial/974 — بنام: Elizabeth Stanton — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. بنام: Elizabeth Cady Stanton — FemBio ID: https://www.fembio.org/biographie.php/frau/frauendatenbank?fem_id=25909 — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Банк інформації про видатних жінок
  6. Brockhaus Enzyklopädie online ID: https://brockhaus.de/ecs/enzy/article/stanton-elizabeth — بنام: Elizabeth Stanton — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  7. گرین انسائکلوپیڈیا کیٹلینا آئی ڈی: https://www.enciclopedia.cat/EC-GEC-0064049.xml — بنام: Elisabeth Cady Stanton — عنوان : Gran Enciclopèdia Catalana
  8. عنوان : The Feminist Companion to Literature in English — صفحہ: 1022
  9. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb119925713 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  10. https://www.womenofthehall.org/inductee/elizabeth-cady-stanton/
  11. Quoted in McMillen, p. 239
  12. Stanton, Eighty Years & More، p. 72
  13. McMIllen, p. 96

بیرونی روابط[ترمیم]