امداد نظامی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

بلوچستان کے نامور ادیب۔ دانشور اور صحافی آپ اردو۔فارسی۔سرائیکی۔اور پنجابی کے شاعر تھے اس کے علاوہ آپ نے فارسی۔سرائیکی۔پنجابی۔سندھی۔پشتو اور بلوچی زبانوں کی شاعری اور لوک گیتوں کے نہایت رواں داوں منظوم اردو ترجمے بھی کیے اور سرائیکی اور انگریزی میں بھی ترجمے کا کام کیا،

14 اگست 1935ء کو ڈیرہ غازی خان میں محمد شفیع کے گھر پیدا ہوئے، امداد نظامی کا بچپن شہر فرید مٹھی کوٹ شریف میں گذرا، اسی وجہ سے آپ نے کلام فرید کے تراجم کاسلسلہ شروع کیا کہ تراجم ملک کے اہم ادبی رسائل میں شائع ہوتے تھے۔[1] ابتدائی تعلیم ڈیرہ غازی خان سے ہی حاصل کی 1953 میں میٹرک کا امتحان پنجاب یونیورسٹی سے پہلی پوزیشن میں پاس کیا۔آپ نے ایم اے اور بعد میں جامعہ کراچی سے اطلاقی نفسیات میں ایم اے کیا عملی زندگی کا آغاز بطور صحافی مختلف اخبارات سے کیا۔ 1973ء میں کوئٹہ آئے اور جنگ کوئٹہ سے منسلک ہو گئے، آپ نے اس کے بعد روزنامہ زمانہ کوئٹہ میں کام کیا، آپ نے نمکدان اور وجدان دو رسالوں کا اجرا کیا 1998 میں آپ کو صدارتی تمغا حسن کارکردگی سے نوازا گیا۔[2] امداد نظامی کی ایک بیٹی ارجمند نظامی(لاہور) دانش نظامی (لاہور) ثقافت نظامی (کراچی) اور تحسین نظامی (پشاور ) میں ہیں آپ روزنامہ زمانہ کوئٹہ میں قطعات بھی لکھتے تھے بعض اوقات احباب نے انہیں عین موقع پر تقریر کے لیے کھڑا کر دیا تو آپ بے تکلف بولتے چلے گئے۔ان کا مطالعہ بہت وسیع تھا اور آپ ایک منجھے ہوئے صحافی تھے۔ان کا 2004 میں ایک ہائیکو مجموعہ (سورج تھا سو ڈوب گیا) شائع ہوا جو بہت سراہا گیا ان کے اخبارات و رسائل میں سینکڑوں کی تعداد میں مضامین شائع ہوتے رہے، ان کی شاعری پر ڈاکٹر فرحان فتح پوری تبصرہ کرتے تھے۔[3] ان کی بیگم یاسمین نظامی روزنامہ نعرہ حق میں مضامین لکھا کرتی تھیں

تصانیف[ترمیم]

  • فرید رنگ فرید انگ(2003)
  • ہارٹ اٹیک اور اس کے بعد (2002) ۔
  • دوستوں کے درمیان۔(سفرنامہ)2002۔
  • اقبال کے کولمبس (2003)
  • عین النعیم
  • سورج تھا سو ڈوب گیا۔ہائیکو مجموعہ(2003)
  • کھیم کرن تا مونا باد
  • زونگ (غزلیات)۔
  • سنگ و رنگ( نظم وغزل) 2004۔
  • چشمہ کی سات(نظم وغزل) 2005۔

وفات[ترمیم]

ان کا انتقال 18اپریل 2008ء کو 73 سال کی عمر میں ہوا۔[4]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. حوالہ از ۔ ( باغ بلوچستان۔ڈاکٹر انعام الحق کوثر۔ص250)۔
  2. حوالہ از( بلوچستان میں اردواز آغا محمد ناصر۔ص235)۔
  3. حوالہ ( مشاہر بلوچستان۔سید خورشید افروز۔ص50)۔
  4. رشید آزاد، کوئٹہ