امر شونار بنگلہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
আমার সোনার বাংলা
اردو: میرا سونے جیسا بنگال ــ
آمر سونار بنگلہ ــ
Amar Sonar Bangla Music.svg

قومی ترانہ Flag of Bangladesh.svg بنگلادیش
مصنفرابندر ناتھ ٹیگور، 1905
موسیقیگگن ہارکارا، نامعلوم
منتخب1971
نمونہ موسیقی

امر شونار بنگلہ (میرا سونے کا بنگال یا میرا سونے جیسا بنگال), بنگلہ دیش کا قومی ترانہ ہے , جسے رابندرناتھ ٹیگور نے لکھا تھا۔ یہ بنگالی زبان میں ہے۔ رابندرناتھ ٹیگور نے اسے بنگال کی پہلی تقسیم کے وقت 1906ء میں لکھا تھا جب مذہب کے بنیاد پر یا انتظامی طور انگریزوں نے بنگال کو دو حصوں میں تقسیم کر دیا تھا۔ یہ ترانہ بنگال کو یکجا کرنے کے لیے لکھا گیا تھا۔ بنگال کو اپنی حکومت ملنے پر بنگال نے اس ترانہ کو قومی ترانے کے روپ میں اپنا لیا۔

ترانہ کا متن[ترمیم]

بنگالی ہجوں میں نقل حرفی اردو ترجمہ
আমার সোনার বাংলা

আমার সোনার বাংলা،
আমি তোমায় ভালবাসি।

امر شونار بنگلہ

امر شونار بنگلہ،
آمی تومائے بھالو باشی۔

میرا عزیز بنگال

میری سنہری بنگال. میں تم سے پیارا ہوں۔

চিরদিন তোমার আকাশ،
তোমার বাতাস،
আমার প্রাণে বাজায় বাঁশি।

چرودن تومار اکاش،
تومار بتاش،
امار پرانے بجائے باشی۔

ہمیشہ تمہارے آسمان. تمہاری ہوا میرے دل میں بانسری بجاتی ہیں

ও মা،
ফাগুনে তোর আমের বনে،
ঘ্রানে পাগল করে،
মরি হায়، হায় রে،
ও মা،
অঘ্রানে তোর ভরা খেতে،
আমি কি দেখেছি মধুর হাসি।

او ماں،
پھاگونے تورامیر بونے
گھرانے پاگول کورے،
موری ہے، ہے رے،
او ماں،
اوگھرانے تور بھورا کھیتے
امی کی دیکھچھی مودھور ہاشی

اے ما، پھاگن کے آم کے مہک سی خوشبو مجھے جذباتی بنا دیتی ہیں
اے ما، کیا میں مر جاؤ! اگہن کی بھری زمین میں کیا مسکراہٹ دیکھا ہوں

কি শোভা কি ছায়া গো،
কি স্নেহ কি মায়া গো،
কি আঁচল বিছায়েছ،
বটের মূলে،
নদীর কূলে কূলে।

کی شوبھا، کی چھایا گو،
کی سنیہو، کی مایا گو،
کی اچول بیچھائیچھو،
بوتیر مولے،
نودیر کولے کولے!

تم کیا سجاوٹ کیا سایہ کیا محبّت کیا وہم کیا! کیا رقبہ  تم بچھائی ہیں بانیان کی جڑے، ندیاں کی کنارے میں

মা، তোর মুখের বাণী،
আমার কানে লাগে،
সুধার মতো،
মরি হায়، হায় রে،
মা، তোর বদনখানি মলিন হলে،
আমি নয়ন জলে ভাসি।

ماں، تور موکھیر بانی
آمر کانے لاگے،
شودھار موتو،
موری ہے، ہے رے،
ماں، تور بودوناکھانی مولین ہولے،
آمی نوین جولے بھاشی۔

اے ما، تیری منہی لفظوں میرے کانوں میں .      سودھا جیسی ہی

اے ما، کیا میں مر جاؤ!

ما تیرے چہرہ گندا ہو جاتے تو میں روتا ہوں۔