امیر الملک مینگل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
امیر الملک مینگل
Chief Justice of Balochistan
مدت منصب
17 November 1996 – 21 April 1999
معلومات شخصیت
پیدائش 4 مارچ 1945 (77 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
چاغی  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب Islam
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ کراچی  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ وکیل  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

بلوچستان کے ممتاز وکیل، جج اور دو مرتبہ صوبے کے گورنر رہے۔

پیدائش[ترمیم]

جسٹس امیر الملک مینگل 13 اپریل 1945ء کو نوشکی میں پیدا ہوئے ۔

تعلیم[ترمیم]

جامعہ کراچی سے ایم اے سیاسیات اور ایل ایل بی اسلامیہ لا کالج کراچی سے 1968 میں کیا ۔

ماہر قانون[ترمیم]

1972 میں بلوچستان ہائی کورٹ میں وکالت کرنے لگے بار ایسوسی ایشن سے بھی وابستہ رہے 17 نومبر 1996 تا 12 اپریل 1999 تک چیف جسٹس بلوچستان ہائی کورٹ رہے

گورنر بلوچستان[ترمیم]

دو مرتبہ صوبے کے گورنر رہے۔ پہلی مرتبہ 1997ء میں اور پھر 25 اکتوبر 1999 تا 29 جنوری 2003 تک گورنر بلوچستان کے عہدے پر فائز رہے ۔

ادبی زندگی[ترمیم]

جسٹس ریٹائرڈ امیر الملک مینگل کا شمار براہوئی کے ترقی پسند ادیبوں میں ہوتا ہے امیر الملک مینگل براہوئی ادب کے دوسرے دور کی پہلی لڑی کے ادیب اور شاعر ہیں ۔ ان کا پہلا شعری مجموعہ ( جورنا پھل ) 1992 میں شائع ہوا تھا ۔دوسری کتاب ( چلہ نا تو بے ) 1997 میں زمرد پبلی کیشنزسے شائع ہوئی،

حوالہ جات[ترمیم]