مندرجات کا رخ کریں

ام عطاء مولاہ زبير بن العوام

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
ام عطاء مولاہ زبير بن العوام
معلومات شخصیت

ام عطاء حدیث بیان کرنے والوں کی ایک عمدہ صحابیہ تھیں اور وہ الزبیر ابن عوام کی غلام تھیں ۔ [1]

ابن حجر عسقلانی نے اس کے بارے میں کہا:جہاں تک صحبت کی بات ہے ، یہ مستند ہے اور روایت کی بات ہے ، تو اس کے آقا الزبیر سے روایت کیا گیا ہے۔۔

ان کی احادیث میں سے جو انھوں نے الزبیر ابن عوام سے بیان کی ہیں:

عبد اللہ بن عطا ’’ کے زیر اقتدار ، الزبیر بن عوام کے آزاد کردہ غلام ، اپنی والدہ اور دادی ام عطاء کے اختیار پر ’؛ اس نے کہا: ہم زبیر بن عوام کی طرف دیکھ رہے ہوتے جب وہ ہمارے پاس سفید خچر پر آئے اور انھوں نے کہا: اے ام عطاء؛ خدا کے رسول ، خدا کی دعائیں اور سلامتی اس پر اور اس کے اہل خانہ کو ، ان کی قربانی سے مسلمانوں کو تین سے زیادہ گوشت کھانے سے منع کیا ، تو انھوں نے کہا: ہمیں جو دیا گیا ہے اس کا ہم کیا کریں گے؟ آپ نے فرمایا: "جو کچھ تمھیں دیا گیا ہے وہ تمھارے لیے ہے۔" [2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. موقع صحابة رسول اللهاطلع عليه في 11 سبتمبر/ أيلول 2014 م. آرکائیو شدہ (Date missing) بذریعہ sahaba.rasoolona.com (Error: unknown archive URL)
  2. كتاب مسند أحمد