اندرا گاندھی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
اندرا گاندھی


در منصب
14 جنوری 1980 – 31 اکتوبر 1984
صدر نیلم سنجیوا ریڈی
زیل سنگھ
پیشرو چرن سنگھ
جانشین راجیو گاندھی
در منصب
24 جنوری 1966 – 24 مارچ 1977
صدر سرویپلی رادھاکشن
ذاکر حسین
وی وی گیری
فخر الدین علی احمد
نائب مورارجی دیسائی
پیشرو گلزاری لال نندا (acting)
جانشین مورارجی دیسائی

بھارتی وزیر خارجہ
در منصب
9 مارچ 1984 – 31 اکتوبر 1984
پیشرو نرسمہا راؤ
جانشین راجیو گاندھی
در منصب
22 اگست 1967 – 14 مارچ 1969
پیشرو M. C. Chagla
جانشین Dinesh Singh

وزیر خارجہ
پیشرو Chidambaram Subramaniam
جانشین وینکٹارمن
در منصب
30 November 1975 – 20 December 1975
پیشرو Sardar Swaran Singh
جانشین Bansi Lal

وزیر ڈاخلہ
در منصب
27 June 1970 – 4 February 1973
پیشرو Yashwantrao Chavan
جانشین Uma Shankar Dikshit

وزیر خزانہ
در منصب
16 July 1969 – 27 June 1970
پیشرو مورار جی دیسائی
جانشین Yashwantrao Chavan

وزیر اطلاعات و نشریات
در منصب
1964 – 1966
پیشرو Satya Narayan Sinha
جانشین Kodardas Kalidas Shah

پیدائش 19 نومبر 1917 (1917-11-19)
الہ آباد, متحدہ صوبہائے اودھ و آگرہ، برطانوی ہند
(موجودہ اتر پردیش،بھارت)
وفات 31 اکتوبر 1984 (عمر 66 سال)
نئی دہلی،دہلی،بھارت
سیاسی جماعت انڈین نیشنل کانگریس
ازواج فیروز گاندھی
بچے راجیو گاندھی
سنجے گاندھی
مادر علمی Somerville College, Oxford
مذہب ہندومت
دستخط
Indira Gandhi.jpg

بھارتی سیاست دان ۔ پنڈت جواہر لعل نہرو کی بیٹی۔ الہ آباد میں پیدا ہوئیں۔ سوئزرلینڈ ، سمر ویل کالج آکسفورڈ اور بعد میں وشوا بھارتی شانتی نکتین میں تعلیم حاصل کی۔ گیارہ برس کی عمر میں سیاست میں حصہ لینا شروع کیا۔ انگلستان میں قیام کے دوران میں اور بعد ازاں ہندوستان واپس آکر بھی طلبا کی تحریکوں میں سرگرم حصہ لیتی رہیں۔ تحریک آزادی میں حصہ لینے کی پاداش میں تیرہ ماہ کے لیے جیل بھیج دی گئیں۔ 1942ء میں‌ ایک پارسی نوجوان فیروز گاندھی سے شادی کی۔ اسی زمانے میں ہندوستان چھوڑ دو کی تحریک چلی۔ جس میں حصہ لینے پر وہ اوران کا خاوند قید ہوگئے۔ 1947ء میں آل انڈیا کانگرس ورکنگ کمیٹی کی ممبر منتخب ہوئیں۔ بعد میں کانگرس کے شعبہ خواتین کی صدر ، مرکزی انتخابی کمیٹی اور مرکز پارلیمانی بورڈ کی ممبر بنیں۔ فروری 1959ء میں انڈین نیشنل کانگرس کی صدر چنی گئیں۔ 66۔1964ء میں وزیر اطلاعات و نشریات ہوئیں۔ 1966ء میں لال بہادر شاستری کے انتقال کے بعد وزیراعظم منتخب ہوئیں۔ 1967ء کے انتخابات میں کانگرس کی فتح کے بعد وزیراعظم بنیں۔ 1971 کے انتخابات کے بعد تیسری مرتبہ وزیراعظم چنی گئیں۔

مارچ 1977ء کے پارلیمانی انتخابات میں ان کی پارٹی کانگرس آئی نے جنتا پارٹی سے شکست کھائی۔ وہ خود بھی جنتا امیدوار راج نارائن سے ہار گئیں۔ 1978ء میں مہاراشٹر کے ایک حلقے کے ضمنی انتخاب میں لوک سبھا کی رکن چن لی گئیں۔ لیکن دسمبر 1978ء میں لوک سبھا نے ، دوران حکومت اختیارات کے ناجائز استعمال کے جرم میں ان کی رکنیت منسوخ کر دی گئی۔ اورقید کی سزا دی۔ تقریباً ایک ہفتے بعد رہا کر دی گئیں۔ جنوری 1980ء میں لوک سبھا کے عبوری انتخابات میں کانگرس آئی کی جیت ہوئی اور اندراگاندھی نے مرکز میں وزارت بنائی۔ سکھوں کے خلاف انھوں نے فوجی اپریشن کا آغاز کیا۔ اور گولڈن ٹمپل پر فوجی حملے کے بعد سکھوں میں ان کی ساکھ کو بہت نقصان پہنچا۔ 1984 ء میں دو سکھ محافظوں نے گولی مار ان کو قتل کردیا۔ ان کے بیٹے راجیو گاندھی بعد میں ہندوستان کے وزیراعظم رہے۔ جبکہ ان کی بہو سونیا گاندھی ان دنوں انڈین نشنل کانگرس کی صدر ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]