انضمام الحق کی بین الاقوامی کرکٹ سنچریوں کی فہرست

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search


انضمام الحق کے پاس 2014ء تک پاکستان کے لیے ٹیسٹ میں سب سے زیادہ سنچریوں کا ریکارڈ تھا۔ [1]

انضمام الحق ایک ریٹائرڈ پاکستانی کرکٹر اور پاکستان قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان ہیں۔ [2] انہوں نے ٹیسٹ میچوں اور ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ میں اپنے بین الاقوامی کیریئر کے دوران میں بالترتیب 25 اور 10 مواقع پر ایک اننگز میں سنچری (100 یا اس سے زیادہ رنز بنائے۔ [3][4] انضمام نے پاکستان کے لیے 120 ٹیسٹ میچ کھیلے اور 8،820 رنز بنائے۔ وہ یونس خان اور جاوید میانداد کے بعد ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان قومی کرکٹ ٹیم کے لیے تیسرے سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی ہیں۔ انہیں بی بی سی (برطانوی نشریاتی ادارہ) نے "کرکٹ میں سب سے زیادہ پہچانی جانے والی شخصیت" اور "دور کے بہترین بیٹسمینوں میں سے ایک" کے طور پر بیان کیا، [5] جبکہ پاکستان کے سابق کپتان عمران خان نے کہا کہ وہ "برائن لارا اور سچن تندولکر کی طرح باصلاحیت تھے" [6]

انضمام نے جون 1992ء میں ایجبیسٹن کرکٹ گراؤنڈ، برمنگہم میں انگلستان کے خلاف ٹیسٹ ڈیبیو کیا۔ [7] ان کی پہلی ٹیسٹ کرکٹ سنچری ایک سال بعد ویسٹ انڈیز کے خلاف اینٹیگوا ریکری ایشن گراؤنڈ، سینٹ جونز میں بنی۔ [8] مئی 2002ء میں قذافی اسٹیڈیم، لاہور میں نیوزی لینڈ کے خلاف ان کا 329 کا اسکور، ٹیسٹ کرکٹ میں کسی پاکستانی بلے باز کا دوسرا سب سے بڑا اسکور، جبکہ مجموعی طور پر پندرہویں سب سے زیادہ اسکور ہے۔ [9][10] انہوں نے اپنے 100 ویں ٹیسٹ میچ میں سنچری بھی بنائی، ایسا کرنے والے وہ صرف پانچویں کھلاڑی بن گئے۔ [11][note 1] انضمام نے 2005-06ء میں دورہ انگلستان کے دوسرے ٹیسٹ میچ کی ہر اننگز میں سنچری بنائی، 24 سنچریوں کے ساتھ پاکستان کا نمایاں سنچری بنانے والے بنے جس نے جاوید میانداد کا ریکارڈ توڑ دیا۔ [12][note 2] جنوری 2006ء میں ہوم سیریز کے دوسرے ٹیسٹ کے دوران میں بھارت کے خلاف ان کے 119 رنز نے انہیں ٹیسٹ کرکٹ میں 25 یا اس سے زیادہ سنچریاں بنانے والے دسواں کھلاڑی بنا دیا۔ [13] انضمام نے 18 کرکٹ گراؤنڈز پر ٹیسٹ سنچریاں بنائیں جن میں 13 پاکستان سے باہر کے مقامات پر شامل ہیں۔ [14][15] جنوری 2019ء تک وہ ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ سنچریاں بنانے والے کھلاڑیوں میں ویراٹ کوہلی کے ساتھ بیسویں نمبر پر تھے۔ [1]

نومبر 1991ء میں قذافی اسٹیڈیم میں ویسٹ انڈیز کے خلاف اپنے ون ڈے کیریئر کا آغاز کرنے کے بعد، انضمام نے اپنی پہلی ون ڈے سنچری ایک سال بعد سری لنکا کے خلاف ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں بنائی۔ [16] ایک روزہ میچوں میں انضمام سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑیوں کی فہرست میں پانچویں نمبر پر ہیں، 378 میچوں میں 11،739 رنز کے ساتھ، [17] حالانکہ اس فہرست میں ٹاپ ٹین کھلاڑیوں کی کم سنچریاں ہیں۔ [17] ان کا سب سے زیادہ ایک روزہ اسکور 137 ناٹ آؤٹ ہے جو 1994ء میں شارجہ کرکٹ ایسوسی ایشن اسٹیڈیم میں نیوزی لینڈ کے خلاف بنایا۔ [4][18] انضمام نے اپنا واحد ٹوئنٹی 20 بین الاقوامی میچ انگلستان کے خلاف برسٹل کے کاؤنٹی کرکٹ گراؤنڈ میں 2006ء میں دونوں ٹیموں کے درمیان میں سیریز کے دوران میں کھیلا۔ انہوں نے اس فارمیٹ میں کبھی سنچری نہیں بنائی۔ [19] جنوری 2019ء تک وہ بین الاقوامی کرکٹ میں سب سے زیادہ سنچری بنانے والے کھلاڑیوں میں مشترکہ پچیسواں نمبر پر تھے۔ [20][note 3]

کلید[ترمیم]

کلید
علامت مطلب
* ناٹ آؤٹ رہے
مین آف دی میچ
پاکستان کرکٹ ٹیم کی کپتانی کی
گیندیں گیندوں کا سامنا کیا
پوزیشن بیٹنگ آرڈر میں پوزیشن
اننگز میچ کی اننگز
ٹیسٹ اس سیریز میں کھیلے گئے ٹیسٹ میچوں کی تعداد
گ/ب/غ مقام گھر (پاکستان) تھا، باہر یا غیر جانبدار
تاریخ میچ منعقد ہونے کی تاریخ، یا ٹیسٹ میچوں کے لیے میچ کی تاریخ شروع ہونے کی
ہارا پاکستان میچ ہارا
جیتا پاکستان میچ جیتا
ڈرا میچ ڈرا ہوا

ٹیسٹ سنچریاں[ترمیم]

ٹیسٹ کرکٹ سنچریوں کی فہرست
شمار اسکور مخالف پوزیشن اننگ ٹیسٹ اسکورنگ ریٹ مقام گ/ب/غ تاریخ نتیجہ حوالہ
1 123 225  ویسٹ انڈیز 6 2 54.66 اینٹیگوا ریکری ایشن گراؤنڈ، سینٹ جونز (اینٹیگوا و باربوڈا) باہر 1 مئی 1993 ڈرا [8]
2 135* 195  نیوزی لینڈ 6 2 69.23 بیسن ریزرو، ویلنگٹن باہر 17 فروری 1994 جیتا [21]
3 100* 125  سری لنکا 7 2 80.00 اسگیریا اسٹیڈیم، کینڈی باہر 26 اگست 1994 جیتا [22]
4 101 168  زمبابوے 6 1 60.11 ہرارے اسپورٹس کلب، ہرارے باہر 15 فروری 1995 جیتا [23]
5 148 218  انگلستان 4 1 67.88 لارڈز کرکٹ گراؤنڈ، لندن باہر 25 جولائی 1996 جیتا [24]
6 177 320  ویسٹ انڈیز 4 2 55.31 راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی گھر 29 نومبر 1997 جیتا [25]
7 200* 397  سری لنکا 4 2 50.37 بنگابندو قومی اسٹیڈیم، ڈھاکہ غیر جانبدار 12 مارچ 1999 جیتا [26]
8 118 191  آسٹریلیا 5 3 61.78 بیللیریو اوول، ہوبارٹ باہر 18 نومبر 1999 ہارا [27]
9 138 243  سری لنکا 4 3 56.79 نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی گھر 12 مارچ 2000 جیتا [28]
10 135 254  ویسٹ انڈیز 4 1 53.14 بؤردا، جارج ٹاؤن، گیانا، گیانا باہر 5 مئی 2000 ڈرا [29]
11 112 163  سری لنکا 5 2 68.71 گال انٹرنیشنل اسٹیڈیم، گال (سری لنکا) باہر 21 جون 2000 جیتا [30]
12 142 257  انگلستان 4 1 55.25 نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی گھر 7 دسمبر 2000 ہارا [31]
13 130 241  نیوزی لینڈ 4 2 53.94 جیڈ اسٹیڈیم، کرائسٹ چرچ باہر 15 مارچ 2001 ڈرا [32]
14 114 153  انگلستان 4 1 74.50 اولڈ ٹریفرڈ، مانچسٹر باہر 31 مئی 2001 جیتا [33]
15 105* 163  بنگلادیش 4 2 64.41 ملتان کرکٹ اسٹیڈیم، ملتان گھر 29 اگست 2001 جیتا [34]
16 329 436  نیوزی لینڈ 4 1 75.45 قذافی اسٹیڈیم، لاہور گھر 1 مئی 2002 جیتا [9]
17 112 109  زمبابوے 4 3 104.67 ہرارے اسپورٹس کلب، ہرارے باہر 9 نومبر 2002 جیتا [35]
18 138* 232  بنگلادیش 4 4 59.48 ملتان کرکٹ اسٹیڈیم، ملتان گھر 3 ستمبر 2003 جیتا [36]
19 118 243  بھارت 4 2 48.55 قذافی اسٹیڈیم، لاہور گھر 5 اپریل 2004 جیتا [37]
20 117 244  سری لنکا 4 2 47.95 نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی گھر 28 اکتوبر 2004 جیتا [38]
21 184 264  بھارت 4 1 69.69 ایم چناسوامی اسٹیڈیم، بنگلور باہر 24 مارچ 2005 جیتا [39]
22 117* 194  ویسٹ انڈیز 5 3 60.30 سبینا پارک، کنگسٹن، جمیکا، جمیکا باہر 3 جون 2005 جیتا [40]
23 109 [note 2] 200  انگلستان 5 1 54.50 اقبال اسٹیڈیم، فیصل آباد گھر 20 نومبر 2005 ڈرا [12]
24 100* [note 2] 134  انگلستان 5 3 74.62 اقبال اسٹیڈیم، فیصل آباد گھر 20 نومبر 2005 ڈرا [12]
25 119 193  بھارت 5 1 61.65 اقبال اسٹیڈیم، فیصل آباد گھر 21 جنوری 2006 ڈرا [13]

ایک روزہ بین الاقوامی سنچریاں[ترمیم]

ایک روزہ بین الاقوامی سنچریوں کی فہرست
شمار اسکور گیندیں مخالف پوزیشن اننگ اسکورنگ ریٹ مقام گ/ب/غ تاریخ نتیجہ حوالہ
1 101 121  سری لنکا 2 1 83.47 ملتان کرکٹ اسٹیڈیم، ملتان گھر 17 جنوری 1992 ہارا [16]
2 117 103  سری لنکا 2 1 113.59 راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی گھر 19 جنوری 1992 جیتا [41]
3 137* 129  نیوزی لینڈ 3 1 106.20 شارجہ کرکٹ ایسوسی ایشن اسٹیڈیم، شارجہ غیر جانبدار 20 اپریل 1994 جیتا [18]
4 116* 138  زمبابوے 3 2 84.05 ہرارے اسپورٹس کلب، ہرارے باہر 25 فروری 1995 جیتا [42]
5 116* 110  سری لنکا 4 2 105.45 ڈی بیئرز ڈائمنڈ اوول، کمبرلی، شمالی کیپ غیر جانبدار 7 اپریل 1998 جیتا [43]
6 107 115  بھارت 4 1 93.04 شارجہ کرکٹ ایسوسی ایشن اسٹیڈیم، شارجہ غیر جانبدار 8 اپریل 1999 جیتا [44]
7 121* 113  بھارت 4 1 107.07 شارجہ کرکٹ ایسوسی ایشن اسٹیڈیم، شارجہ غیر جانبدار 26 مارچ 2000 جیتا [45]
8 118* 124  سری لنکا 4 2 95.16 شارجہ کرکٹ ایسوسی ایشن اسٹیڈیم، شارجہ غیر جانبدار 2 نومبر 2001 جیتا [46]
9 122 102  بھارت 4 2 119.60 نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی گھر 13 مارچ 2004 ہارا [47]
10 123 121  بھارت 4 1 101.65 قذافی اسٹیڈیم، لاہور گھر 21 مارچ 2004 ہارا [48]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب "Records – Test matches – Batting records – Most hundreds in a career". ای ایس پی این کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  2. "Inzamam-ul-Haq". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  3. "Inzamam-ul-Haq Test centuries". ESPNcricinfo. 23 ستمبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  4. ^ ا ب "Inzamam-ul-Haq One Day International centuries". ESPNcricinfo. 19 جنوری 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  5. "Pakistan profiles: Inzamam-ul-Haq". BBC Sport. 14 اکتوبر 2005. اخذ شدہ بتاریخ 5 جولائی 2012. 
  6. Hashmi، Shahid (3 نومبر 2005). "Funny man Inzamam". BBC Sport. اخذ شدہ بتاریخ 5 جولائی 2012. 
  7. "Inzamam-ul-Haq Test centuries". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 11 جون 2012. 
  8. ^ ا ب "West Indies v Pakistan at St John's – 3rd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  9. ^ ا ب "Pakistan v New Zealand at Lahore – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  10. "Records – Test matches – Batting records – Most runs in an innings". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  11. ^ ا ب "Records – Test matches – Batting records – Hundred in hundredth match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  12. ^ ا ب پ ت "England in Pakistan Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  13. ^ ا ب "India in Pakistan Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  14. "Inzamam-ul-Haq – Centuries at home venues". ESPNcricinfo. 31 اکتوبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 جون 2012. 
  15. "Inzamam-ul-Haq – Centuries at venues outside Pakistan". ESPNcricinfo. 31 اکتوبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 جون 2012. 
  16. ^ ا ب "Sri Lanka in Pakistan ODI Series – 4th ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  17. ^ ا ب "Records – One-Day Internationals – Batting records – Most runs in career". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  18. ^ ا ب "Pepsi Austral-Asia Cup – 2nd semi final". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  19. "Pakistan in England T20I Match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  20. ^ ا ب "Records – Combined Test, ODI and T20I records – Batting records – Most hundreds in career". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  21. "New Zealand v Pakistan at Wellington – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  22. "Sri Lanka v Pakistan at Kandy – 3rd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  23. "Zimbabwe v Pakistan at Harare – 3rd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  24. "England v Pakistan at Lord's – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  25. "Pakistan v West Indies at Rawalpindi – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  26. "Final: Pakistan v Sri Lanka at Dhaka – Asian Test Championship". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  27. "Australia v Pakistan at Hobart – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  28. "Pakistan v Sri Lanka at Karachi – 3rd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  29. "West Indies v Pakistan at Georgetown – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  30. "Sri Lanka v Pakistan at Galle – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  31. "Pakistan v England at Karachi – 3rd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  32. "New Zealand v Pakistan at Christchurch – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  33. "England v Pakistan at Manchester – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  34. "Pakistan v Bangladesh at Multan – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  35. "Pakistan in Zimbabwe Test Series – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  36. "Bangladesh in Pakistan Test Series – 3rd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  37. "India in Pakistan Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  38. "Sri Lanka in Pakistan Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  39. "Pakistan in India Test Series – 3rd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  40. "Pakistan in West Indies Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2012. 
  41. "Sri Lanka in Pakistan ODI Series – 5th ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  42. "Pakistan in Zimbabwe ODI Series – 2nd ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  43. "Standard Bank International One-Day Series – 3rd match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  44. "Coca-Cola Cup – 2nd match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  45. "Coca-Cola Cup – 4th match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  46. "Khaleej Times Trophy – 6th match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  47. "India in Pakistan ODI Series – 1st ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012. 
  48. "India in Pakistan ODI Series – 4th ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2012.