انہدام قبرستان بقیع

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search


انہدام قبرستان بقیع
Jannatul-Baqi before Demolition.jpg
قبرستان بقیع انہدام سے قبل۔ (1910ء)
تاریخ 1806ء
21 اپریل 1926ء
مقام قبرستان بقیع، مدینہ منورہ، سعودی عرب
منتظمین آل سعود
ماحصل مقدس مزارات پر واقع عمارات، گنبد شہید ہوئے
قبرستان بقيع 1910ء
قبرستان بقيع 2011ء
چار اماموں کے مزار کی پہلی حالت
چار اماموں کے مزار کی موجودہ حالت

انہدام قبرستان بقیع 1925ء میں سعودی حکومت کی جانب سے کیا جانے والا ایک انہدامی عمل تھا جس کے نتیجے میں قبرستان بقیع کے مقدس مزارات، تاریخی آثار، مزارات پر موجود گنبد، عمارات توڑ دی گئیں۔ اس دن کو یوم الہدم کہا جاتا ہے۔

تفصیل[ترمیم]

قبرستان بقیع پر کئی حملے کیے گئے مگر مکمل طور پر 8/ شوال 1344ھ میں سعودی جب مدینہ پر آخری بار قابض ہوئے قبرستان کو تباہ و منہدم کر کے تمام قیمتی سامان غارت کر کے چوری کر کے لے گئے۔

منہدم شدہ مزارات[ترمیم]

مزار چار امام (حسن بن علی، زین العابدین، محمد باقر و جعفر صادق جنہیں مزار کے وقوع کے اعتبار سے ائمہ بقیع سے یاد رکھا جاتا ہے) اور اوپر واقع تاریخی گنبد اس کے علاوہ ام البنین مادر ابوالفضل العباس، اسماعیل پسر جعفر صادق کے مزار اور گنبد نیز محمد بن عبد اللہ کی اولاد بیٹے بیٹیاں اور ازواج عائشہ بنت ابی بکر، سودہ بنت زمعہ، حفصہ بنت عمر، زینب بنت خزیمہ، ام سلمہ، جویریہ بنت حارث، ام حبیبہ رملہ بنت ابوسفیاناور صفیہ بنت حیی بن اخطب کے مزارات اور گنبد اور مالک بن انس اور خلیفہ عثمان کے مزار اور گنبد کو بھی منہدم کر دیا گیا۔

آئمہ بقیع پر تعمیر شدہ تاریخی گنبد انہدام سے پہلے

مزار کا نفیس اصفہانی تعویذ[ترمیم]

ائمہ بقيع کا مزار (حسن مجتبی، زین العابدین، محمد باقر و جعفر صادق) انہدام سے پہلے

ائمہ بقیع کی قبروں پر واقع قیمتی فولادی تعویذ قبر جسے اصفهان، ایران کے مایہ ناز ماہر اہل فن نے بنایا تھاوہابی آل سعود اسے بھی اکھاڑ کر چرا لے گئے۔

استثنا[ترمیم]

وہابیوں کے اس اقدام نے دنیا بھر کے کروڑوں مسلمانوں کے جذبات مجروح کیے اور جب دنیا بھر میں ان کے اس گھناؤنے عمل کے خلاف اعتراضات ہوئے اور لوگوں نے اپنے غصے اور آل سعود سے نفرت کا اظہار کیا تو وہ ڈر گئے اور وہ مکمل منصوبہ بندی کے باوجود حرم نبوی کو منہدم کرنے کی جراّت نہ کر سکے۔ [1]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تاریخ المملکۃ العربیۃ السعودیۃ کما عرفت، صلاح الدین مختار (مصنف و مورخ)