اوغدائی خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اوغدائی خان
(منگولی میں: ᠣᠭᠡᠳᠡᠢ ᠬᠠᠭᠠᠨ)،(منگولی میں: Өгэдэй хаан خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
Ogadai Khan.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (منگولی میں: ᠣᠭᠡᠳᠡᠢ)،  (منگولی میں: Өгөдэй خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیدائشی نام (P1477) ویکی ڈیٹا پر
تاریخ پیدائش 7 نومبر 1185  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
وفات 11 دسمبر 1241 (56 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
مغول سلطنت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات مرض،  مے پرستی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of the Mongol Empire.svg مغول سلطنت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
والد چنگیز خان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والد (P22) ویکی ڈیٹا پر
والدہ بورتے  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والدہ (P25) ویکی ڈیٹا پر
بہن/بھائی
خاندان بورجگین  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں خاندان (P53) ویکی ڈیٹا پر
دیگر معلومات
پیشہ خان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان منگولیائی زبان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر


اوکتائ خان (Mongolian: Өгэдэй, Ögedei; also Ogotai or Oktay; c. 1186 – 1241) چنگیز خان کا مقرر کردہ جانشین تھا۔ انگریزی میں انہیں Ögedei Khan نام سے پہچانا جاتا ہے۔

تاریخ[ترمیم]

اوکتائی خان نے 9 سال تک حکومت کی۔ مسلمانوں سے باقی بھائیوں کی نسبت بہتر سلوک کیا۔ مسجدوں کو دوبارہ تعمیر کرنے کی اجازت دیدی۔ اجڑے ہوئے شہروں کو بسایا۔ اوکتائی خان نے اپنے عہد حکومت میں عدل قائم کیا۔ عام رعایا کی پرورش کی۔ مسلمانوں کے ساتھ باہمی شادیوں کو رواج دیا۔ فوج کی نگہداشت اور تنظیم کی۔

اولاد[ترمیم]

اوکتائ خان کی موت کے بعد مختلف قبائل میں جنگ چھڑ گئی۔ چغتائ خان کے بیٹوں نے بھی سر کشی کی، مگر اوکتائ خان کی بیوی ترکینہ خاتون چار سال تک حکومت پر قابض رہی۔ آخر امیروں نے اسے اوکتائ خان کے پاس بھیج کر اس کے بیٹے قیق کو خاقان بنالیا۔ کیک نے چغتائ خان کے سرکش بیٹوں کو قتل کروا دیا۔ تو بچ کر چین بھاگ گئے۔ بہت سے سردار بھی جہنم رسید ہو گے۔

اسلام سے تعلق[ترمیم]

کیک کے دربار میں چینی کافروں کا بہت اثر تھا۔ وہ مسلمانوں کو دکھ پہنچانے کے لیے ہر ممکن کوشش کرنے تھے اور عمل کروانے رہے۔ اور بہت حد تک ان کی کامیابی رہی۔ کیک نے کل ڈیڑھ سال حکومت کی۔ اس کو ایک رات پیٹ میں درد ہوا اور مسلمانوں کو اس کے مظالم سے نجات ملی۔

حوالہ جات[ترمیم]

قاضی محمد اقبال چغتائی : وسط ایشیا کے مغل حکمران۔ چغتائ ادبی ادارہ، لاہور۔ 1983ء۔ صفحہ 31-32۔

اوغدائی خان
ماقبل 
تولی خان
مغول سلطنت
13 ستمبر 1229ء11 دسمبر 1241ء
مابعد 
تورجین خاتون (نائب السلطنت)