او پی نیر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
او پی نیر
Nayyar.jpg

معلومات شخصیت
پیدائش 16 جنوری 1926[1][2][3]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لاہور[4]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 28 جنوری 2007 (81 سال)[1][2]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ممبئی[5]  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند
Flag of India.svg ڈومنین بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
فنی زندگی
آلات موسیقی صوت  ویکی ڈیٹا پر (P1303) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ موسیقی ہدایت کار،  نغمہ ساز،  گلو کار،  فلم اسکور کمپوزر،  فلم اداکار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

بالی وڈ کے مشہور موسیقار تھے۔ وہ لاہور میں پیدا ہوئے۔ موسیقی کے جنون نے انہیں تعلیم مکمل کرنے نہیں دی۔ اپنا کیریر انہوں نے آل انڈیا ریڈیو جالندھر سے شروع کیا۔ فلموں میں پہلے انہوں نے پس منظر موسیقی دی اور اس کا موقع انہیں ’کنیز‘ فلم سے ملا۔ لیکن جب انہوں نے فلموں میں موسیقی دینی شروع کی تو لوگوں کو مسحور کر دیا۔

گرودت کی فلم ’ آرپار‘ سے لوگوں نے انہیں پہچانا۔ اس فلم کے نغمے بہت مقبول ہوئے۔ فلم ’تم سا نہیں دیکھا‘، ’ہاوڑا برج‘، ’مسٹر اینڈ مسز 55‘، ’کشمیر کی کلی‘، ’میرے صنم‘، ’سونے کی چڑیا‘، ’پھاگن‘، ’باز‘، ’ایک مسافر ایک حسینہ‘ ان کی چند فلمیں تھیں جن کے نغمے جاوداں بن گئے۔ ’اڑیں جب جب زلفیں تیری‘، ’بابو جی دھیرے چلنا‘ اور ’لے کے پہلا پہلا پیار‘ جیسے نغموں نے عوام میں بہت مقبولیت حاصل کی۔

اس کے بعد تو ان کے پاس فلموں کی لائن لگی لیکن وہ ایک سال میں ایک ہی فلم کے لیے موسیقی دیتے تھے۔ کام کے تئیں اس لگن کی وجہ تھی کہ آج بھی ان کے نغمے لوگ گنگناتے ہیں۔ مسٹر نیر نے لتا منگیشکر سے کبھی کوئی گیت نہیں گوایا تھا۔ اسی لیے آشا بھوسلے اور گیتا دت کو وہ گیت ملے جو ان کی اپنی زندگی کے یادگار نغمے بنے۔ مرحوم گلوکار محمد رفیع نیر صاحب کے چہیتے تھے۔ انہوں نے اپنے زیادہ نغمے رفیع سے ہی گوائے۔ حالانکہ انہوں نے مکیش اور مہیندر کپور کو بھی موقع دیا۔ ’نیا دور‘ ان کی وہ فلم تھی جس میں موسیقی دینے کے لیے انہیں 1957 میں فلم فیئر ایوارڈ سے نوازا گیا۔

  1. ^ ا ب ربط : https://d-nb.info/gnd/138892148  — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مئی 2014 — اجازت نامہ: CC0
  2. ^ ا ب http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb16276759t — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — مصنف: Bibliothèque nationale de France — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  3. بنام: O. P. Nayyar — فلم پورٹل آئی ڈی: https://www.filmportal.de/2837f7afcf1145f580a09f8c6db4f66b — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. ربط : https://d-nb.info/gnd/138892148  — اخذ شدہ بتاریخ: 20 دسمبر 2014 — اجازت نامہ: CC0
  5. ربط : https://d-nb.info/gnd/138892148  — اخذ شدہ بتاریخ: 1 جنوری 2015 — اجازت نامہ: CC0