اپوروا سین گپتا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اپوروا سین گپتا
ذاتی معلومات
پیدائش3 اگست 1939(1939-08-03)
لکھنؤ، برٹش انڈیا
وفات14 ستمبر 2013(2013-90-14) (عمر  74 سال)
نوئیڈا، اتر پردیش، انڈیا
بلے بازیدائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیلیگ بریک گوگلی گیند باز
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
واحد ٹیسٹ (کیپ 89)21 جنوری 1959  بمقابلہ  ویسٹ انڈیز
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ فرسٹ کلاس
میچ 1 45
رنز بنائے 9 1695
بیٹنگ اوسط 4.50 26.48
100s/50s 0/0 2/8
ٹاپ اسکور 8 146*
گیندیں کرائیں 0 1231
وکٹ 21
بولنگ اوسط 31.14
اننگز میں 5 وکٹ 1
میچ میں 10 وکٹ 0
بہترین بولنگ 6/32
کیچ/سٹمپ 0/– 24/–
ماخذ: Cricinfo

لیفٹیننٹ جنرل اپوروا کمار سین گپتاaudio speaker iconpronunciation </img> audio speaker iconpronunciation (پیدائش: 3 اگست 1938ء لکھنؤ ، اتر پردیش | انتقال: 14 ستمبر 2013ء نئی دہلی میں) ایک ہندوستانی فوجی افسر اور کرکٹر تھا جس نے 1959ء میں ایک ٹیسٹ کھیلا۔

کرکٹ کیریئر[ترمیم]

سین گپتا کا ٹیسٹ میچ ہندوستانی کرکٹ میں ایک بڑے تنازعہ کے درمیان آیا۔ غلام احمد نے 1958-59 میں ویسٹ انڈیز کے خلاف مدراس ٹیسٹ سے چند روز قبل ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا اور وجے منجریکر انجری کی وجہ سے باہر ہو گئے۔ اس کی وجہ سے ایک مبہم صورتحال پیدا ہوئی جہاں جسو پٹیل ، اے جی کرپال سنگھ ، منوہر ہاردیکر اور سین گپتا سبھی کو سمجھا گیا۔ کپتان پولی عمریگر ہاردیکر کو چاہتے تھے لیکن جب بی سی سی آئی کے صدر نے اصرار کیا کہ وہ پٹیل کو منتخب کریں تو عمریگر نے میچ سے ایک رات پہلے استعفیٰ دے دیا۔ آخر میں سین گپتا اور کرپال سنگھ نے کھیلا۔ سینگپتا کو 1 اور 8 رنز بنا کر ویس ہال اور رائے گلکرسٹ نے آؤٹ کیا۔ [1] [2] سینگپتا ایک 'بہت اچھے آل راؤنڈر، دائیں ہاتھ سے اوپننگ بلے باز، لیگ بریک اور گوگلی باؤلر اور سلپ فیلڈ' تھے۔ [3] اس نے اپنا فرسٹ کلاس ڈیبیو اس سیزن کے شروع میں سروسز کے لیے ویسٹ انڈین ٹورنگ ٹیم کے خلاف کیا تھا، اس نے 32 اور 100 رنز ناٹ آؤٹ بنائے تھے ۔ [4] دو ماہ بعد انہوں نے رنجی ٹرافی میں پہلی بار دہلی کے خلاف 32 رن پر 6 وکٹ لئے۔ [5] یہ دونوں کارکردگییں ٹیسٹ میچ کے لیے ان کے انتخاب کا باعث بنی تھیں۔ وہ دس سال تک فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلتا رہا۔ ان کی واحد دوسری سنچری 1959-60 رنجی ٹرافی کے سیمی فائنل میں بمبئی کے خلاف ناٹ آؤٹ 146 رنز تھی۔ [6]

فوجی کیریئر[ترمیم]

سینگپتا نے ہندوستانی فوج میں بطور افسر خدمات انجام دیں اور انہیں PVSM اور AVSM سے نوازا گیا۔ وہ لیفٹیننٹ جنرل (3 ستارہ) کے عہدے پر پہنچ گئے۔ انہیں واشنگٹن ڈی سی میں مقیم USA اور کینیڈا کے دفاعی اتاشی کے طور پر بھی منتخب کیا گیا تھا۔ ہندوستانی فوج سے ریٹائر ہونے کے بعد وہ نئی دہلی میں اپنی اہلیہ مینا سینگپتا کے ساتھ رہتے تھے۔ ان کے دو بچے تھے، امیتابھ اور سروجیت۔

انتقال[ترمیم]

سین گپتا کا انتقال 14 ستمبر 2013ء کو نئی دہلی کے R&R ہسپتال میں ہوا۔ [7]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Mihir Bose, A History of Indian Cricket, Andre-Deutsch (1990), pp. 213-214
  2. "4th Test, Chennai, Jan 21 - 26 1959, West Indies tour of India". Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 04 مارچ 2022. 
  3. Christopher Martin-Jenkins, Who's who of Test cricketers
  4. "Services XI v West Indians 1958-59". Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 04 مارچ 2022. 
  5. "Delhi v Services 1958-59". Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 04 مارچ 2022. 
  6. "Services v Bombay 1959-60". Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 04 مارچ 2022. 
  7. Obituary in the Times of India (accessed 3 August 2014)