اگھور ناتھ گپتا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اگھور ناتھ گپتا
اگھور ناتھ گپتا

معلومات شخصیت
پیدائش 1841
شانتی پور  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 9 دسمبر 1881
لکھنؤ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
شہریت British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی سنسکرت کالج  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ برہمو مبلغ، بدھ مت کے عالم۔

اگھور ناتھ گپتا (بنگالی: অঘোরনাথ গুপ্ত) ‏(1841ء – 1881ء) بدھ مت کے عالم اور برہمو سماج کے اولین مبلغوں میں سے ایک تھے۔[1] اگھور ناتھ کی قبل از وقت موت کے بعد انہیں ان کی پاک باز مذہبی زندگی کے اعزاز میں سادھو کے خطاب سے نوازا گیا۔[2] سیواناتھ شاستری ان کے متعلق یوں رقمطراز ہیں: "ان کی بے لوث عاجزی، گہری روحانیت اور والہانہ وابستگی برہمو سماج کے اراکین کے لیے ایک نئے انکشاف کی مانند تھے۔"[3]

تشکیلی دور[ترمیم]

اگھورناتھ کی پیدائش ناڈیا کے شانتی پور میں ہوئی۔ ان والد کا نام جادَو چندر رائے تھا۔ اگھورناتھ بارہ برس کے تھے کہ ان کے والد کا سایہ سر سے اٹھ گیا۔ ان کی ابتدائی تعلیم اس دور کی روایتی تعلیم گاہوں یعنی پاٹھ شالا میں ہوئی۔ بعد ازاں جب وہ سنسکرت کالج میں حصول تعلیم کے لیے کلکتہ پہنچے تو دیویندر ناتھ ٹیگور اور کیشب چندر سین سے خاصے متاثر ہوئے، اسی تاثر کا نتیجہ تھا کہ انہوں نے جلد ہی برہمو سماج کی رکنیت اختیار کر لی۔

اگھورناتھ کی تحریک و ترغیب پر ان کے ہم وطن بیجوئے کرشن گوسوامی بھی برہمو سماج میں داخل ہوئے اور یوں اگھور ناتھ برہمو سماج کے اولین مبلغوں میں شامل ہو گئے۔ برہمو سماج سے ان کی والہانہ وابستگی اور خلوص کا اندازہ اس سے لگایا جا سکتا ہے کہ انہوں نے انتہائی سخت اور صبر آزما حالات میں بھی برہمو سماج کا علم تھامے رکھا۔[1]

اپنی نجی زندگی وہ گوشت وغیرہ سے سخت پرہیز کرتے اور زیادہ تر وقت پوچا پاٹ میں صرف کرتے تھے۔ سنہ 1863ء میں انہوں نے دوسری ذات کی ایک بیوہ بچی سے شادی کی۔[4]

تبلیغ[ترمیم]

برج سندر متر نے سنہ 1857ء میں ڈھاکہ میں ایک گھر خرید کر وہاں برہمو سماج شروع کیا تھا، پھر سنہ 1863ء میں اسی جگہ پر ایک برہمو سماج اسکول بھی اغاز کیا۔[5] اگھور ناتھ ایک مبلغ استاد کی حیثیت سے اسکول میں آئے اور تقریباً دس ماہ قیام کیا۔ اگھور ناتھ سے متاثر ہو کر برہمو سماج میں شامل ہونے والوں میں بانگا چندر رائے اور بھوبن موہن سین قابل ذکر ہیں۔ سنہ 1865ء میں کیشب چندر سین نے ڈھاکہ کا سفر کیا جہاں برہمو سماج کے اثرات بڑھ رہے تھے اور ساتھ ہی مشکلات بھی دوچند ہو گئی تھیں۔[6]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب Sengupta, Subodh Chandra and Bose, Anjali, Sansad Bangali Charitabhidhan (Biographical dictionary) (بنگالی زبان میں), p3, Sahitya Samsad, ISBN 81-85626-65-0
  2. Sastri, Sivanath, History of the Brahmo Samaj, 1911-12/1993, p248, Sadharan Brahmo Samaj.
  3. Sastri, Sivanath, p414.
  4. Sastri, Sivanath, pp87-88
  5. Sastri, Sivanath, p394
  6. Sastri, Sivanath, p396