مندرجات کا رخ کریں

ایحاب الغصین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
ایحاب الغصین
(عربی میں: إيهاب الغُصين ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
معلومات شخصیت
پیدائش 12 مئی 1979ء   ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کویت شہر   ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 7 جولا‎ئی 2024ء (45 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
غزہ شہر [1]  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجہ وفات ہوائی حملہ [2]  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قاتل اسرائیلی فضائیہ [2]  ویکی ڈیٹا پر (P157) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات قتل   ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت ریاستِ فلسطین   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکن حماس   ویکی ڈیٹا پر (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی غزہ جامعہ اسلامیہ   ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان ،  سول انجیئنر   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان عربی   ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان عربی   ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ایحاب الغصین (عربی: ايهاب الغسين؛ 1979 ء- 7 جولائی 2024ء)، حماس کے زیر انتظام غزہ کی پٹی میں واقع فلسطینی اتھارٹی کی وزارت داخلہ کے ترجمان تھے۔

ابتدائی زندگی اور کیرئیر[ترمیم]

2012ء میں، وہ 2020ء تک غزہ کی پٹی میں وزارت مواصلات کے ڈائریکٹر بنے، جب انھیں نائب وزیر محنت مقرر کیا گیا۔ [3][4] وہ حماس کی ایگزیکٹو فورس کو فلسطینی سیکیورٹی فورسز میں ضم کرنے میں ملوث تھے جس میں پولیس، قومی اور داخلی سلامتی، شہری دفاعی افواج اور فائر فائٹرز شامل ہیں۔[5] الغصین نے 150 قیدیوں کی رہائی کا حکم دیا جو فتح اور دیگر فلسطینی دھڑوں کے رکن تھے۔[6] آپریشن کاسٹ لیڈ میں حماس کی سرکاری عمارتوں کے خلاف اسرائیل کے فضائی حملوں کے دوران، جس میں اسرائیل نے کہا کہ اس نے راکٹ داغنے والے حماس کے کارکنوں کو ہلاک کیا، الغصین نے جواب دیا کہ ہلاک ہونے والے "غزہ کے کام کر رہے تھے، اسرائیل کی طرح راکٹ داغے جانے والے کارکن نہیں تھے"۔[7]

وفات[ترمیم]

7 جولائی 2024ء کو، اسرائیل اور حماس کی جنگ کے دوران، فلسطینی میڈیا کی اطلاعات کے مطابق، غزہ شہر کے ہولی فیملی اسکول پر اسرائیلی فضائی حملے میں الغصین اور تین دیگر افراد ہلاک ہوگئے۔[8] حماس نے ان کی موت کی تصدیق کی اور کہا کہ اس سے قبل ایک گھر پر ہونے والے فضائی حملے میں ان کی بیوی اور بیٹی ہلاک ہو گئے تھے۔[9][10]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب إعلام تابع لحماس: غارة إسرائيلية على غزة تقتل إيهاب الغصين المسؤول الكبير في الحكومة التي تديرها حماس — اخذ شدہ بتاریخ: 8 جولا‎ئی 2024 — سے آرکائیو اصل فی 8 جولا‎ئی 2024 — شائع شدہ از: 7 جولا‎ئی 2024
  2. ^ ا ب "حماس": استشهاد ٳيهاب الغصين في قصف إسرائيلي استهدف منزله — اخذ شدہ بتاریخ: 8 جولا‎ئی 2024 — سے آرکائیو اصل فی 8 جولا‎ئی 2024 — شائع شدہ از: 7 جولا‎ئی 2024
  3. "Israel reportedly assassinates key Hamas official in Gaza"۔ Israel Hayom۔ 7 July 2024۔ اخذ شدہ بتاریخ 07 جولا‎ئی 2024 
  4. Ibrahim Dahman، Eyad Kourdi (2024-07-07)۔ "Hamas says senior government official in Gaza killed in airstrike"۔ سی این این (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 07 جولا‎ئی 2024 
  5. Hamas disbands Executive Force, absorbs troops into police (Extra) Monsters and Critics.
  6. Hamas frees 150 prisoners from Gazan jails Xinhua News Agency.
  7. Hamas: 120 police dead, 95% of security buildings demolished and hundreds of civilians slain Ma'an News Agency.
  8. "Senior official killed in Israeli strike, Hamas say"۔ برطانوی نشریاتی ادارہ (بزبان انگریزی)۔ 2024-07-07۔ اخذ شدہ بتاریخ 07 جولا‎ئی 2024 
  9. "Directly Hit by a Plane - Deputy Labor Minister in Gaza Killed by Israeli Airstrike"۔ Palestine Chronicle (بزبان انگریزی)۔ 2024-07-07۔ اخذ شدہ بتاریخ 07 جولا‎ئی 2024 
  10. "Deputy Hamas labor minister reported killed in Israeli airstrike in Gaza"۔ The Times of Israel۔ 7 July 2024۔ اخذ شدہ بتاریخ 07 جولا‎ئی 2024