ایشیا میں کورونا وائرس کی وبا، 2020ء

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
2020ء میں ایشیا میں کورونا وائرس کی وبا
COVID-19 Outbreak Map in Asia.png
ایشیا میں کوویڈ انیس کی وبا کی صورت حال 28 مارچ 2020ء تک
  کوئی مصدقہ مریض نہیں
  1–9 مصدقہ مریض
  10–49 مصدقہ مریض
  50–99 مصدقہ مریض
  100–499 مصدقہ مریض
  500–999 مصدقہ مریض
  1000–4999 مصدقہ مریض
  5000–9999 مصدقہ مریض
  10000+ مصدقہ مریض
  مصدقہ مریض
مرضکورونا وائرس مرض 2019ء
وائرس نوعسارس-کووی-2
مقامایشیا
پہلا مریض1 دسمبر 2019
آغازووہان، ہوبئی، چین[1]
مصدقہ مریض224,503[2]
صحت یابیاں111,032[2]
اموات
8,640[2]
خطے
47

کورونا وائرس کی وبا ایشیا میں دسمبر 2019ء میں ووہان، چین سے ہی پھوٹی۔[3] اس کے بعد، بہت سے دوسرے ایشائی ممالک نے متاثرہ افراد کی تصدیق کرنا شروع کردی، ایشیا میں سب سے زیادہ جو ممالک اس وبا سے متاثر ہوئے ان میں جنوبی کوریا، جاپان، اور ایران شامل ہیں۔[4] 13 مارچ تک، ایشیا کے تمام ممالک میں سوائے مشرقی تیمور، کرغیزستان، سوریہ، تاجکستان، ترکمانستان، اور ازبکستان (جبکہ لاؤس، شمالی کوریا، اور یمن مشتبہ مریض ہیں) وبا پہنچ چکی تھی۔

بھارت میں کورونا وائرس[ترمیم]

بھارت میں کورونا وائرس کی وبا، 2019ء - 2020ء کا پہلا مریض 30 جنوری 2020ء کو سامنے آیا۔ وزارت صحت و خاندانی بہبود، حکومت ہند کی ویب سائٹ کے مطابق اب تک کل بارہ لاکھ انتیس ہزار تین سو تریسٹھ (12,29,363) افراد کی اسکریننگ ہو چکی ہے جن میں 111 لوگ کورونا سے متاثر پائے گئے ہیں اور 2 کی موت ہو چکی ہے۔[5] [6]

اب تک دہلی،[7] ہریانہ،[8] کرناٹک،[9] مہاراشٹر[10] اور اتر پردیش،[11] میں اس بیماری کا اثر زیادہ دیکھنے کو ملا ہے جس کی بنا پر وبائی بیماریوں کا ایکٹ، 1897ء نافذ کر دیا گیا ہے۔ کئی تعلیمی ادارے بند ہو چکے ہیں۔ کھیل، ثقافتی اور تعلیمی تقریبات موخر کی جا چکی ہیں۔ نیز بھارت نے فی الحال تمام بیرونی زائرین کی آمد پر پابندی لگا دی ہے کیوں کہ کورونا کے زیادہ تر مریض باہر سے آئے ہیں۔[12]

پاکستان میں کورونا وائرس[ترمیم]

  • 15 مارچ 2020 کو پاکستان میں کورونا وائرس کے متاثرین کی تعداد 53 رہی۔ جن میں سے 3 افراد صحتیاب ہو گئے۔
  • 16 مارچ 2020 کو پاکستان میں کورونا وائرس کے متاثرین کی تعداد بڑھ کر 137 ہو گئی۔

افغانستان میں کورونا وائرس[ترمیم]

افغانستان میں متاثرین کی تعداد  16 ہے۔

سری لنکا میں کورونا وائرس[ترمیم]

سری لنکا میں متاثرین کی تعداد  18 ہے۔

مالدیپ میں کورونا وائرس[ترمیم]

مالدیپ میں متاثرین کی تعداد  13 ہے۔

بنگلہ دیش میں کورونا وائرس[ترمیم]

بنگلہ دیش میں متاثرین کی تعداد 5 ہے۔

بھوٹان میں کورونا وائرس[ترمیم]

بھوٹان میں متاثرین کی تعداد  1 ہے۔

نیپال میں کورونا وائرس[ترمیم]

نیپال میں متاثرین کی تعداد 1 ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "2019 Novel Coronavirus (2019-nCoV) Situation Summary". بیماریوں سے بچاؤ اور انسداد کے مرکز (CDC). 30 January 2020. 26 جنوری 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 30 جنوری 2020. 
  2. ^ ا ب پ "Tracking coronavirus: Map, data and timeline". BNO News. 07 فروری 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 01 مارچ 2020. 
  3. "27 casesof viral pneumonia reported in central china's Wuhan City". news.cgtn.com. اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2020. 
  4. Sample، Ian (2020-03-11). "Research finds huge impact of interventions on spread of Covid-19". The Guardian. ISSN 0261-3077. اخذ شدہ بتاریخ 11 مارچ 2020. 
  5. https://www.mohfw.gov.in/
  6. https://www.mohfw.gov.in/
  7. "Delhi declares coronavirus as epidemic as India reports first death from infection". The Week. اخذ شدہ بتاریخ 13 مارچ 2020. 
  8. "Haryana government declares coronavirus an epidemic as cases rise in India". Livemint. اخذ شدہ بتاریخ 13 مارچ 2020. 
  9. "Coronavirus: Karnataka becomes first state to invoke provisions of Epidemic Diseases Act, 1897 amid COVID-19 fear". Deccan Herald. اخذ شدہ بتاریخ 13 مارچ 2020. 
  10. "Coronavirus: Maharashtra invokes Epidemic Act; theatres, gyms to stay shut in Mumbai, 4 other cities". The Tribune. اخذ شدہ بتاریخ 13 مارچ 2020. 
  11. "Uttar Pradesh shuts all schools, colleges amid Coronavirus pandemic; invokes epidemic act". India TV. اخذ شدہ بتاریخ 13 مارچ 2020.