ایشیا کپ 2018ء

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
2018ء ایشیا کپ
Asia Cup 2018 Logo.jpg
ایشیا کپ 2018ء کا باضابطہ لوگو
تاریخ 15 – 28 ستمبر 2018
منتظم ایشیائی کرکٹ کونسل
کرکٹ طرز ایک روزہ
ٹورنامنٹ طرز ناک آؤٹ اور راؤنڈ روبن
میزبان Flag of the United Arab Emirates.svg متحدہ عرب امارات
فاتح Flag of India.svg بھارت
ونرز اپ Flag of Bangladesh.svg بنگلادیش
شریک ٹیمیں 6
کل مقابلے 13
کثیر رنز Flag of بھارت شیکھر دھون (342)
کثیر ووکٹیں Flag of افغانستان راشد خان (10)
Flag of بنگلادیش مظفر رحمان (10)
Flag of بھارت کلدیپ یادیو (10)
2016ء
2020ء

ایشیا کپ 2018ء ایک روزہ بین الاقوامی (او ڈی آئی) کرکٹ کا ایک ٹورنامنٹ تھا جو 15 ستمبر، 2018ء کو شروع ہوا اور فائنل، بنگلہ دیش اور بھارت کے درمیان میں 28 ستمبر 2018ء کو متحدہ عرب امارات میں کھیلا گیا۔ جس میں بھارت نے بنگلہ دیش کو 3 وکٹوں سے شکست دے کر فاتح بن گیا۔[1][2][3] یہ ایشیا کپ کا 14واں ایڈیشن تھا اور تیسری بار متحدہ عرب امارات میں منعقد ہوا، اس سے قبل 1984ء اور 1995ء کے ٹورنامنٹ یہاں منعقد ہوئے۔ بھارت اپنے اعزاز کا دفاع کررہی تھی۔[4]

اس ٹورنامنٹ میں چھ ٹیمموں نے حصہ لیا جن میں پاکستان، بھارت، سری لنکا، بنگلہ دیش اور افغانستان شامل تھیں جب کہ ہانگ کانگ کوالیفائنگ راؤنڈ سے منتخب ہوئی۔ چھ ٹیموں کا یہ کوالیفائنگ راؤنڈ ملائشیا میں 29 اگست سے 6 ستمبر 2018ء تک کھیلا گیا۔ فائنل میں ہانگ کانگ نے متحدہ عرب امارات کو شکست دے کر کوالیفائی کر لیا۔ ہانگ کانگ نے کرکٹ عالمی کپ 2018ء کوالیفائیر میں اپنا (ایک روزہ بین الاقوامی) معیار کھو دیا تھا۔[5][6] لیکن 9 ستمبر، 2018ء کو انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے اس ٹورنامنٹ کے تمام میچوں کو ایک روزہ بین الاقوامی میچ کا درجہ دے دیا۔[7]

پس منظر

اصل میں، اس ٹورنامنٹ نے بھارت میں منعقد ہونا تھا،[8][9] پر پاک بھارت کشیدہ تعلقات کی وجہ سے اسے متحدہ عرب امارات منتقل کر دیا گیا۔[2]

بتاریخ 29 اکتوبر، 2015ء، سنگاپور میں ایشیائی کرکٹ کونسل کے اجلاس کے بعد، بھارت کرکٹ بورڈ (بی سی سی آئی) کے سیکرٹری نے بیان جاری کیا کہ 2018ء کا ایشیائی کرکٹ کپ بھارت میں منعقد ہوگا۔[10] اگست 2017ء میں، انڈر 19 ایشیا کپ 2017ء کے بھارت سے ملائشیا منتقل ہونے کے بعد، بھارت کرکٹ بورڈ نے بھارتی حکومت سے ایشیا کپ ٹورنامنٹ کی میزبانی کی منظوری کی کوشش کی۔[11] اپریل 2018ء میں، محمد بن زید النہیان، ابو ظہبی کے بادشاہ، نے ایشیائی کرکٹ کونسل اور بھارت کرکٹ بورڈ سے کہا کہ اگر یہ ٹورنامنٹ بھارت کی بجائے متحدہ عرب امارات میں ہو تو پاکستان کی شرکت یقینی ہے۔[12]

پاکستان کرکٹ بورڈ نے ایشیائی کرکٹ کونسل کے اجلاس سے قبل یہ سخت موقف اختیار کیا تھا کیوں کہ بھارت نے ایشین ایمرجنگ نیشنز کپ جو اپریل 2018ء میں پاکستان میں منعقد ہونا تھا، اس میں اپنی ٹیم بھیجنے سے انکار کر دیا تھا، جس کے جواب میں پاکستان نے بھی ایشیا کپ میں اپنی ٹیم بھارت نہ بھیجنے کا کہا تھا۔ ۔[13] ایشا کپ کے متحدہ عرب امارات میں منعقد ہونے کے اعلان کے بعد ایشین ایمرجنگ نیشنز کپ اپریل سے دسمبر 2018ء میں منتقل کر دیا گیا اور اب بھارت کے میچ پاکستان کی بجائے سری لنکا میں ہوں گے۔[2]

فارمیٹ

اس ٹورنامنٹ کا شیڈول 24 جولائی، 2018ء کو اعلان کیا گیا، جس کے مطابق 6 ٹیموں کو 2 گروپوں میں بانٹ دیا گیا۔ ہر گروپ کی پہلے دو درجے کی ٹیمیں سپر فور کے لیے کوالیفائی ہوجائیں گی۔[14] سپر فور سے پہلے دو درجے کی ٹیمیں فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیں گی۔ افتتاحی میچ بنگلہ دیش اور سری لنکا کے درمیان میں 15 ستمبر کو دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلا گیا۔[15] جبکہ فائنل میچ 28 ستمبر، 2018ء کو دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلا گیا۔[16] گروپ اے میں دوسرے درجے پر آنے والی ٹیم نے اپنا پہلا سپر فور کا میچ شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم، ابو ظہبی میں کھیلنا تھا۔ لیکن، بھارت چاہے کوئی سے بھی درجے پر آتی اپنا میچ دبئی بین الاقوامی کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی میں ہی کھیلتی۔[17]

گروپ بی میں سری لنکا اپنے دونوں میچ ہارنے کے بعد ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے، جس کی وجہ سے بنگلہ دیش اور افغانستان، سپر فور میں پہنچ گئے۔[18][19]

گروپ اے میں بھی ہانگ کانگ اپنے دونوں میچ ہارنے کی وجہ سے ٹورنامنٹ سے باہر ہو گیا، جس کا مطلب کہ پاکستان اور بھارت نے سپر فور کے لیے کوالیفائی کر لیا۔[20]

19 ستمبر، 2018ء کو ایشائی کرکٹ کونسل (اے سی سی) نے سپر فور کے لیے نئے شیڈول کا اعلان کیا۔[21][22][23]

گروپ مرحلے کے آخری میچ میں افغانستان نے بنگلہ دیش کو شکست دی۔

سپر فور مرحلے کے تیسرے میچ میں بھارت نے پاکستان کو شکست دے دی اور چوتھے میچ میں بنگلہ دیش نے افغانستان کو شکست دے دی۔ جس کی وجہ سے بھارت نے فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا جبکہ افغانستان اس ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئی۔ [24][25]

افغانستان کے خلاف بھارت کے آخری سپر فور میچ میں کپتان روہت شرما اور نائب کپتان شیکھر دھون دونوں نے آرام کیا۔ جس کی وجہ سے مہندر سنگھ دھونی کو بھارت کا کپتان بنایا گیا جنہوں نے بحیثیت کپتان اپنا 200واں ایک روزہ میچ کھیلا۔ بھارت کی طرف سے دھونی پہلے کپتان ہیں جو 200 میچوں میں کپتانی کرچکے ہیں۔[26] یہ ایشیا کپ اور افغانستان کی تاریخ کا پہلا ایک روزہ میچ ہے جو برابر ہوا۔[27]بنگلہ دیش نے سپر فور مرحلے کے آخری میچ میں پاکستان کو شکست دے کر فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا۔[28]

فائنل میں بنگلہ دیش نے بھارت کے خلاف پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 222 رنز بنائے۔ اس اسکور کے تعاقب میں بھارت کی ٹیم تھوڑا کمزور نظر آئی۔ لیکن آخری اوور کی آخری گیند پر اسکور پورا کر لیا۔[1]

مقامات

متحدہ عرب امارات
دبئی ابو ظہبی
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم
گنجائش: 25,000 گنجائش: 20,000
میچز: 8 میچز: 5
Dubai Sports City Pak vs Aussies.jpg Pakvind123.JPG

ٹیمیں

شریک کھلاڑی

 افغانستان[29]  بنگلادیش[30]  ہانگ کانگ[31]  بھارت[32]  پاکستان[33]  سری لنکا[34]

وفادار مومند کی انجری کی وجہ سے یامین احمد زئی کو انکی جگہ افغانستانی اسکواڈ میں جگہ ملی۔[35] اور مومن الحق کو بنگلہ دیشی اسکواڈ میں جگہ ملی۔[36] دنیش چندی مل اور دنشکا گناتھلکا انجری کی وجہ سے ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے، انکی جگہ نیروشن ڈکویلا اور شیہن جے سوریا کو ملی۔[37][38] بنگلہ دیش کے تمیم اقبال پہلے ہی میچ میں انجرڈ ہو گئے جس کی وجہ سے وہ ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے۔[39]

گروپ مرحلے میں پاک بھارت مقابلے کے بعد ہاردیک پانڈیا، اکشر پٹیل اور شردل ٹھاکر زخمی ہو گئے تھے، جس کی وجے سے وہ ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے۔ انکی جگہ رویندر جڈیجا، دیپک چاہر اور سدھارتھ کال کو بھارتی اسکواڈ میں جگہ ملی۔[40] سپر فور مرحلے میں امرل کیس اور سومیہ سرکار کو بنگلہ دیشی اسکواڈ میں جگہ ملی۔[41] بنگلہ دیش کے شکیب الحسن پاکستان کے خلاف آخری سپر فور کے میچ سے پہلے انجری کا شکار ہو گئے، جس کی وجہ سے وہ اس ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے۔ [42]

امپائر/ریفری

آئی سی سی نے درج ذیل امپائروں اور ریفریوں کو اس ٹورنامنٹ کے لیے بلایا۔ جن میں سے چھ ریفری/امپائر اس ٹورنامنٹ میں شرکت کرنے والے ممالک سے ہیں۔ چار باقی ممالک سے ہیں، دو امپائر/ریفری آئی سی سی ایلیٹ پینل امپائر ہیں۔[43]

ریفریز

شرکت کرنے والے ممالک سے امپائرز

باقی ممالک سے امپائرز

گروپ مرحلہ

وقت ع م و 4+ کے مطابق

گروپ اے

پہلے دو درجے کی ٹیمیں سپر فور کے لیے کوالیفائی کریں گی
ٹیم کھیلے جیتے ہارے برابر بے نتیجہ پوائنٹس نیٹ رن ریٹ نوٹس
 بھارت (کوالیفائی) 2 2 0 0 0 4 1.474+ سپر فور کے لیے کوالیفائی کر لیا
 پاکستان (کوالیفائی) 2 1 1 0 0 2 0.284+
 ہانگ کانگ 2 0 2 0 0 0 1.748-

16 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 ہانگ کانگ
116 (37.1 اوورز)
بمقابلہ
 پاکستان
120/2 (23.4 اوورز)
امام الحق
*50 (69)
احسان خان
2/34 (8 اوورز)
پاکستان نے 8 وکٹوں سے جیت لیا
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی
امپائر: احمد شاہ پکتین (افغانستان) اور راڈ ٹکر (آسٹریلیا)
مرد میدان: عثمان خان شنواری (پاکستان)
  • ہانگ کانگ نے ٹاس جیت کر بلے بازی کا فیصلہ لیا
  • بابر اعظم (پاکستان) سب سے تیز 2000 رنز بنانے والے دوسرے بلے باز بن گئے[44]

18 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
بھارت 
285/7 (50 اوورز)
بمقابلہ
 ہانگ کانگ
259/8 (50 اوورز)
شیکھر دھون
127 (120)
کنچت شاہ
3/39 (9 اوورز)
نزاکت خان
92 (115)
یوزویندرا چاہل
3/46 (10 اوورز)
بھارت نے 29 رنز سے جیت لیا
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی
امپائر: شان جورج (جنوبی افریقہ) اور انیس الرحمان (بنگلہ دیش)
مرد میدان: شیکھر دھون (بھارت)
  • ہانگ کانگ نے ٹاس جیت کر گیند بازی کا فیصلہ لیا
  • خلیل احمد (بھارت) کا پہلا ایک روزہ بین الاقوامی میچ
  • اس میچ کے نتیجے کے بعد ہانگ کانگ اس ٹورنامنٹ سے باہر ہو گیا[20]
  • نزاکت خان اور انشومن راٹھ نے ہانگ کانگ لے لیے ایک روزہ بین الاقوامی میں سب سے زیادہ شراکت قائم کی (174)[20]

19 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 پاکستان
162 (43.1 اوورز)
بمقابلہ
 بھارت
164/2 (29 اوورز)
بابر اعظم
47 (62)
بھونیشور کمار
3/15 (7 اوورز)
روہت شرما
52 (39)
شاداب خان
1/6 (1.3 اوورز)
بھارت نے 8 وکٹوں سے جیت لیا
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی
امپائر: میرس ارسموس (جنوبی افریقا) اور رچرا پلیا گروگے (سری لنکا)
مرد میدان: بھونیشور کمار (بھارت)
  • پاکستان نے ٹاس جیت کر بلے بازی کا فیصلہ لیا
  • ایک روزہ بین الاقوامی میں گیندیں بچانے (126) کے لحاظ سے یہ بھارت کی پاکستان کے خلاف سب سے بڑی کامیابی[45]

گروپ بی

پہلے دو درجے کی ٹیمیں سپر فور کے لیے کوالیفائی کریں گی
ٹیم کھیلے جیتے ہارے برابر بے نتیجہ پوائنٹس نیٹ رن ریٹ نوٹس
 افغانستان (کوالیفائی) 2 2 0 0 0 4 2.270+ سپر فور کے لیے کوالیفائی کر لیا
 بنگلادیش (کوالیفائی) 2 1 1 0 0 2 0.010+
 سری لنکا 2 0 2 0 0 0 2.280-
15 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
بنگلادیش 
261 (49.3 اوورز)
بمقابلہ
 سری لنکا
124 (35.2 اوورز)
مشفیق الرحیم
144 (150)
لاستھ ملنگا
4/23 (10 اوورز)
دلرون پریرا
29 (44)
مظفر رحمان
2/20 (6 اوورز)
بنگلہ دیش نے 137 رنز سے جیت لیا
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی
امپائر: میرس ارسموس (جوبی افریقہ) اور چیٹی تھوڈی شمس الدین (بھارت)
مرد میدان: مشفیق الرحیم (بنگلہ دیش)
  • بنگلہ دیش نے ٹاس جیت کر بلے بازی کا فیصلہ لیا
  • سری لنکا کا بنگلہ دیش کے خلاف ایک روزہ میچ میں کم ترین اسکور[46]

17 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
افغانستان 
249 (50 اوورز)
بمقابلہ
 سری لنکا
158 (41.2 اوورز)
رحمت شاہ
72 (90)
تھیسارا پریرا
5/55 (9 اوورز)
اپل تھرنگا
36 (64)
راشد خان
2/26 (7.2 اوورز)
افغانستان نے 91 رنز سے جیت لیا
شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم، ابو ظہبی
امپائر: گریگوری بریتھوائٹ (ویسٹ اندیز) اور احسن رضا (پاکستان)
مرد میدان: رحمت شاہ (افغانستان)
  • افغانستان نے ٹاس جیت کر بلے بازی کا فیصلہ لیا
  • سری لنکا کی افغانستان سے ایک روزہ بین الاقوامی میں پہلی ہار[47]
  • اس میچ کے نتیجے کے بعد سری لنکا اس ٹورنامنٹ سے باہر ہو گیا[19]

20 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
افغانستان 
255/7 (50 اوورز)
بمقابلہ
 بنگلادیش
119 (42.1 اوورز)
شکیب الحسن
32 (55)
راشد خان
2/13 (9 اوورز)
افغانستان نے 136 رنز سے جیت لیا
شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم، ابو ظہبی
امپائر: نتن مینن (بھارت) اور راڈ ٹکر (آسٹریلیا)
مرد میدان: راشد خان (افغانستان)

سپر فور

وقت ع م و 4+ کے مطابق
پہلے دو درجے کی ٹیمیں فائنل کے لیے کوالیفائی کریں گی
ٹیم کھیلے جیتے ہارے برابر بے نتیجہ پوائنٹس نیٹ رن ریٹ نوٹس
 بھارت (کوالیفائی) 3 2 0 1 0 5 0.863+ فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا
 بنگلادیش (کوالیفائی) 3 2 1 0 0 2 0.156-
 پاکستان 3 1 2 0 0 2 0.599-
 افغانستان 3 0 2 1 0 1 0.044-
21 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 بنگلادیش
173 (49.1 اوورز)
بمقابلہ
 بھارت
174/3 (36.3 اوورز)
مہدی حسن
42 (50)
رویندرا جڈیجا
4/29 (10 اوورز)
روہت شرما
*83 (104)
روبیل حسین
1/21 (5 اوورز)
بھارت نے 8 وکٹوں سے جیت لیا
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی
امپائر: گریگوری بریتھوائٹ (ویسٹ انڈیز) اور احسن رضا (پاکستان)
مرد میدان: رویندر جڈیجا (بھارت)
  • بھارت نے ٹاس جیت کر گیند بازی کا فیصلہ لیا

21 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 افغانستان
257/6 (50 اوورز)
بمقابلہ
 پاکستان
258/7 (49.3 اوورز)
حشمت اللہ شاہدی
*97 (118)
محمد نواز
3/57 (10 اوورز)
امام الحق
*80 (104)
راشد خان
3/46 (10 اوورز)
پاکستان نے 3 وکٹوں سے جیت لیا
شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم، ابو ظہبی
امپائر: شان جورج (جنوبی افریقہ) اور انیل چوہدری (بھارت)
مرد میدان: شعیب ملک (پاکستان)
  • افغانستان نے ٹاس جیت کر بلے بازی کا فیصلہ لیا
  • شاہین آفریدی (پاکستان) کا پہلا ایک روزہ بین الاقوامی میچ

23 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 پاکستان
237/7 (50 اوورز)
بمقابلہ
 بھارت
238/1 (39.3 اوورز)
شعیب ملک
78 (90)
جسپریت بھمرا
2/29 (10 اوورز)
بھارت نے 9 وکٹوں سے جیت لیا
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی
امپائر: راڈ ٹکر (آسٹریلیا) اور رچرا پلیا گروگے (سری لنکا)
مرد میدان: شیکھر دھون (بھارت)
  • پاکستان نے ٹاس جیت کر بلے بازی کا فیصلہ لیا
  • روہت شرما (بھارت) نے ایک روزہ بین الاقوامی میں اپنے 7000 رنز پورے کر لیے[48]
  • یوزویندر چاہل (بھارت) نے ایک روزہ بین الاقوامی میں 50 وکٹیں لے لیں[49]
  • ایک روزہ بین الاقوامی میں وکٹیں بچانے (9) کے لحاظ سے یہ بھارت کی پاکستان کے خلاف سب سے بڑی کامیابی[50]
  • اس میچ کے نتیجے کے بعد بھارت نے فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا

23 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 بنگلادیش
249/7 (50 اوورز)
بمقابلہ
 افغانستان
246/7 (50 اوورز)
محمد الاللہ
74 (81)
آفتاب عالم
3/54 (10 اوورز)
بنگلہ دیش نے 3 وکٹوں سے جیت لیا
شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم، ابو ظہبی
امپائر: میرس ارسموس (جنوبی افریقہ) اور نتن مینن (بھارت)
مرد میدان: محمد الاللہ (بنگلہ دیش)

25 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 افغانستان
252/8 (50 اوورز)
بمقابلہ
 بھارت
252 (49.5 اوورز)
محمد شہزاد
124 (116)
رویندر جڈیجا
3/46 (10 اوورز)
کے ایل راہل
60 (66)
محمد نبی
2/40 (10 اوورز)
میچ برابر
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی
امپائر: گریگوری بریتھوائٹ (ویسٹ انڈیز) اور انیس الرحمان (بنگلہ دیش)
مرد میدان: محمد شہزاد (افغانستان)

26 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 بنگلادیش
239 (48.5 اوورز)
بمقابلہ
 پاکستان
202/9 (50 اوورز)
مشفیق الرحیم
99 (116)
جنید خان
4/19 (9 اوورز)
امام الحق
83 (115)
مظفر رحمان
4/43 (10 اوورز)
بنگلہ دیش نے 37 رنز سے جیت لیا
شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم، ابو ظہبی
امپائر: شان جورج (جنوبی افریقہ) اور چیٹی تھوڈی شمس الدین (بھارت)
مرد میدان: مشفیق الرحیم (بنگلہ دیش)
  • بنگلہ دیش نے ٹاس جیت کر بلے بازی کا فیصلہ لیا
  • ایشیا کپ کے ایک روزہ بین الاقوامی فارمیٹ میں یہ پاکستان کے خلاف بنگلہ دیش کی پہلی جیت تھی[28]

فائنل

28 ستمبر، 2018ء
15:30 (د/ر)
اسکور کارڈ
 بنگلادیش
222 (48.3 اوورز)
بمقابلہ
 بھارت
223/7 (50 اوور)
لٹن داس
121 (117)
کلدیپ یادیو
3/45 (10 اوورز)
روہت شرما
48 (55)
روبیل حسین
2/26 (10 اوورز)
بھارت نے تین وکٹوں سے جیت لیا
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، دبئی
امپائر: میرس ارسموس (جنوبی افریقا) اور رچرا پلیا گروگے (سری لنکا)
مرد میدان: لٹن داس (بنگلہ دیش)
  • بھارت نے ٹاس جیت کر گیند بازی کا فیصلہ لیا۔
  • لٹن داس (بنگلہ دیش) نے ایک روزہ بین الاقوامی میں اپنی پہلی سینچری اسکور کی[53]

مزید دیکھیے

بیرونی روابط

حوالہ جات

  1. ^ ا ب "India creep home in final-over thriller to defend Asia Cup title"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 28 September 2018۔ 
  2. ^ ا ب پ "2018 Asia Cup moved from India to UAE"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 10 اپریل 2018۔ 
  3. ایشیا کرکٹ کپ بھی امارات منتقل - BBC News اردو
  4. "India to host Asia Cup 2018 in UAE"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 10 اپریل 2018۔ 
  5. "Norman Vanua, Charles Amini help PNG defend 200"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 9 ستمبر 2018۔ 
  6. "Asia Cup participation highlights the ironies of Hong Kong's ODI existence"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 15 ستمبر 2018۔ 
  7. "ICC awards Asia Cup ODI status"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 9 ستمبر 2018۔ 
  8. "Future Tours Programme"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 اگست 2017۔ 
  9. "IPL now has window in ICC Future Tours Programme"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 12 دسمبر 2017۔ 
  10. "2016 Asia Cup in Bangladesh, 2018 in India: Thakur"۔ The Times of India۔ 
  11. "BCCI to seek government clearance to host 2018 Asia Cup in India after losing rights for U-19 event"۔ FirstPost۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 اگست 2017۔ 
  12. "UAE Sheikh asks BCCI, ACC to stage Asia Cup in the Gulf"۔ Mumbai Mirror۔ اخذ کردہ بتاریخ 9 اپریل 2018۔ 
  13. "Pakistan to host Emerging Asia Cup in 2018"۔ Wisden India۔ اخذ کردہ بتاریخ 30 اکتوبر 2017۔ 
  14. "Asia Cup 2018: No break for India in group stage; will face qualifier and Pakistan on consecutive days"۔ Times Of India۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 جولائی 2018۔ 
  15. "Asia Cup 2018 Revealed: Asia Cup Schedule"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 جولائی 2018۔ 
  16. "2018 Asia Cup Final Match at Dubai"۔ ICC Cricket۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 جولائی 2018۔ 
  17. "Sarfraz miffed by skewed Asia Cup scheduling"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 19 ستمبر 2018۔ 
  18. "Afghanistan knock Sri Lanka out of the Asia Cup"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 17 ستمبر 2018۔ 
  19. ^ ا ب "Rahmat, spinners knock Sri Lanka out of Asia Cup"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 17 ستمبر 2018۔ 
  20. ^ ا ب پ "Hong Kong give India a scare, but Dhawan century proves just enough"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 18 ستمبر 2018۔ 
  21. "ACC releases new schedule for Super Four stage of Asia Cup"۔ Geo TV۔ اخذ کردہ بتاریخ 19 ستمبر 2018۔ 
  22. "Sarfraz, Mortaza Unhappy With Super Fours Schedule"۔ News18۔ اخذ کردہ بتاریخ 19 ستمبر 2018۔ 
  23. "Even a mad person would be upset, says Mash on fixture change"۔ The Daily Star۔ اخذ کردہ بتاریخ 19 ستمبر 2018۔ 
  24. "Bangladesh edge out Afghanistan in last-ball thriller"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 ستمبر 2018۔ 
  25. "Mustafizur defends seven in last over to knock out Afghanistan"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 ستمبر 2018۔ 
  26. "Asia Cup 2018: MS Dhoni creates history, leads India for 200th time"۔ Hindustan Times۔ اخذ کردہ بتاریخ 25 ستمبر 2018۔ 
  27. ^ ا ب "Asia Cup 2018: Super-4s, Match 5, India vs Afghanistan – Statistical Highlights"۔ Crictracker۔ اخذ کردہ بتاریخ 26 ستمبر 2018۔ 
  28. ^ ا ب "Mushfiqur Rahim and Mustafizur Rahman lift Bangladesh into Asia Cup final"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 27 ستمبر 2018۔ 
  29. "Afghanistan pick four spinners for Asia Cup"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 2 ستمبر 2018۔ 
  30. "Mohammad Mithun, Ariful Haque in Bangladesh squad for Asia Cup 2018"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 30 اگست 2018۔ 
  31. "Anshuman Rath to lead Hong Kong into the 2018 Unimoni Asia Cup"۔ Hong Kong Cricket۔ اخذ کردہ بتاریخ 10 ستمبر 2018۔ 
  32. "India rest Virat Kohli for Asia Cup, Rohit Sharma to lead; uncapped Khaleel Ahmed called up"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 1 ستمبر 2018۔ 
  33. "Shaheen Afridi included in Pakistan squad for Asia Cup 2018"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 4 ستمبر 2018۔ 
  34. "Lasith Malinga recalled for Asia Cup"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 1 ستمبر 2018۔ 
  35. "Wafadar ruled out of Asia Cup"۔ Afghanistan Cricket Board۔ اخذ کردہ بتاریخ 6 ستمبر 2018۔ 
  36. "Asia cup UAE 2018: Mominul Haque included in Bangladesh Squad"۔ Bangladesh Cricket Board۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 ستمبر 2018۔ 
  37. "Dinesh Chandimal ruled out of Asia Cup"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 10 ستمبر 2018۔ 
  38. "Shehan Jayasuriya replaces injured Danushka Gunathilaka in Sri Lanka's Asia Cup squad"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 13 ستمبر 2018۔ 
  39. "Tamim Iqbal ruled out of Asia Cup"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 15 ستمبر 2018۔ 
  40. "Hardik, Axar, Shardul all out of Asia Cup with injury"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 20 ستمبر 2018۔ 
  41. "Soumya Sarkar, Imrul Kayes added to Bangladesh's Asia Cup squad"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 21 ستمبر 2018۔ 
  42. "Injured Shakib Al Hasan flies home after being ruled out of Asia Cup"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 26 ستمبر 2018۔ 
  43. "ICC Umpire Appointments for Asia Cup 2018"، Internation Cricket Council، اخذ کردہ بتاریخ 21 ستمبر 2018 
  44. "Red-hot Pakistan swat Hong Kong aside"۔ CricBuzz۔ اخذ کردہ بتاریخ 16 ستمبر 2018۔ 
  45. "Bhuvneshwar, Jadhav's three-wicket hauls set up easy win for India"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 20 ستمبر 2018۔ 
  46. "Bangladesh pull off their biggest ODI win away from home"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ کردہ بتاریخ 16 ستمبر 2018۔ 
  47. "Afghanistan knock Sri Lanka out of the Asia Cup"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 17 ستمبر 2018۔ 
  48. "Rohit Sharma completes 7000 runs in ODI"۔ India Blooms۔ اخذ کردہ بتاریخ 23 ستمبر 2018۔ 
  49. "Dhawan and Sharma make short work of Pakistan"۔ International Cricket Council۔ اخذ کردہ بتاریخ 23 ستمبر 2018۔ 
  50. "India's biggest win by wickets against Pakistan"۔ ESPNcricinfo (en زبان میں)۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 ستمبر 2018۔ 
  51. "Asia Cup 2018, Bangladesh vs Afghanistan: Statistical highlights of AFG innings"۔ Hindustan Times (en زبان میں)۔ 24 ستمبر 2018۔ اخذ کردہ بتاریخ 24 ستمبر 2018۔ 
  52. "MS Dhoni captains India for 200th time in one-day internationals"۔ India Today۔ اخذ کردہ بتاریخ 25 ستمبر 2018۔ 
  53. "Asia Cup 2018 final: Liton Das slams maiden ODI hundred"۔ The Indian Express۔ اخذ کردہ بتاریخ 28 ستمبر 2018۔