ایف ایس خیر اللہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ایف ایس خیر اللہ
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1914  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
نوشہرہ، خیبر پختونخوا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات سنہ 1997 (82–83 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
کینیڈا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
شہریت British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند
Flag of Pakistan.svg پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
نسل افغان
مذہب پروٹسٹنٹ مسیحیت
عملی زندگی
مادر علمی فورمن کرسچین کالج
جامعہ ایڈنبرگ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
تعلیمی اسناد ماسٹر آف آرٹس،  پی ایچ ڈی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیمی اسناد (P512) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ مصنف،  ماہر تعلیم،  پادری،  لیکچرر،  معلم  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان اردو،  عبرانی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
کارہائے نمایاں قاموس الکتاب،  عبرانی قائدہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں کارہائے نمایاں (P800) ویکی ڈیٹا پر

معظم ڈاکٹر فرینک صفی اللہ خیر اللہ (انگریزی: Rev. Dr. F.S. Khairullah) المعروف ایف ایس خیر اللہ ایک پاکستانی ماہر تعلیم اور ایک مسیحی مصنف تھے۔ انہوں نے کلیسیائے پاکستان میں بطور پریسبیٹر خدمات سر انجام دیں۔[1]

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

وہ 1914ء میں موجودہ خیبر پختون خواہ کے شہر نوشہرہ[2] میں ایک افغان مسلم پس منظر رکھنے والے گھرانے میں پیدا ہوئے۔[3] آپ کے والد کا نام قاضی خیر اللہ تھا۔ آپ نے ابتدائی تعلیم بارینگ ہائی اسکول (بٹالہ، ہند) سے حاصل کی، آپ نے فورمن کرسچین کالج (لاہور) سے 1933ء میں ایم اے انگلش کیا۔ 1954ء میں آپ نے ایڈنبرگ یونیورسٹی سے پی۔ ایچ۔ ڈی[4] کی ڈگری حاصل کی۔[2][1]

کیریئر[ترمیم]

دوسری جنگ عظیم میں آپ نے ینگ مینز کرسچینز ایسوسی ایشن (YMCA) کے سیکرٹری کی حیثیت سے اس وقت کی انڈین آرمی کے لیے اپنی خدمات پیش کیں۔ 1942ء میں بطور لیکچرار مرے کالج (سیالکوٹ) میں تقرر ہوا اور جہاں بعد ازاں انگلش ڈپارٹمنٹ کے ہیڈ کے طور پر آپ اپنے فرائض سر انجام دیتے رہے۔ 1964ء میں آپ مرے کالج سیالکوٹ میں پرنسپل کے عہدے پر فائز ہوئے جہاں سے آپ 1972ء میں ریٹائر ہوئے، ریٹائرمنٹ کے بعد آپ نے ”مسیحی اشاعت خانہ“ میں بطور ”ڈائریکٹر آف کیریٹیو رائٹینگ پروجکٹ“ کی نشست سنبھالی۔ 1972ء میں آپ کے زیرِ نگرانی تالیف ہوئی اردو زبان میں بائبل کی مشہور لغت قاموس الکتاب منظر عام پر آئی، 1992ء میں آپ کا تالیف کردہ عبرانی قائدہ شائع ہوا۔[5] 1994ء آپ کینیڈا چلے گئے تاکہ اپنی بیٹی کے ساتھ رہ سکیں جہاں آپ نے کتابیں لکھنا جاری رکھی اور آپ 1997ء میں وفات پاگئے۔[2][1] کلیسیائے پاکستان کے لیے آپ کی لازوال خدمات کی فہرست نہایت طویل ہے، بالخصوص ”قاموس الکتاب“ کی صورت میں آپ نے اہل زبان کے لیے جو کام کیا وہ اپنی مثال آپ ہے۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت "Dr. Frank Safi-Ullah Khair Ullah: A Brilliant Christian Educationist And Writer"۔ www.christiansinpakistan.com (امریکی انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-01-01۔
  2. ^ ا ب پ Yumpu.com۔ "Rev. Dr. Frank Safi-Ullah Khair Ullah 1914 - St.Francis Magazine"۔ yumpu.com (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-01-01۔
  3. "Ullah, Frank Safi-Ullah Khair - Oxford Reference"۔ ڈی او آئی:10.1093/acref/9780198073857.001.0001/acref-9780198073857-e-1010۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-01-03۔
  4. University of Edinburgh Journal (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  5. "Khair Ullah, Dr. Frank Safi-Ullah (1914 - 1997)"۔ www.cuwap.org (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-01-03۔