ایل جی بی ٹی حقوق بلحاط ملک یا علاقہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے

ایل جی بی ٹی افراد پر اثر انداز ہونے والے حقوق ملک یا قلمرو (عملداری؛ کشور؛ کوئی قطعۂ زمین؛ علاقہ یا صوبہ) کے لحاظ سے بہت مختلف ہوتے ہیں۔ جس میں ہم جنس شادی کی قانونی شناخت سے لے کر ہم جنس پرستی کی سزائے موت تک سب کچھ شامل ہے۔

ملک یا علاقے کے لحاظ سے صنفی شناخت کے اظہار سے متعلق قوانین
  قانونی شناخت میں تبدیلی، سرجری کی ضرورت نہیں ہے۔
  قانونی شناخت میں تبدیلی، سرجری کی ضرورت ہے۔
  قانونی شناخت میں کوئی تبدیلی نہیں۔
  نامعلوم/مبہم

خاص طور پر، جنوری 2021ء میں 29 ممالک نے ہم جنس شادی کو تسلیم کیا۔ اس کے برعکس، غیر ریاستی طاقتوں اور ماورائے عدالت قتل کو شمار نہ کیا جائے تو، یہ خیال کیا جاتا ہے کہ صرف ایک ملک ایران ہم جنسی عمل پر سزائے موت دیتا ہے۔کچھ ممالک میں سزائے موت سرکاری طور پر قانون ہے ، لیکن عام طور پر برونائی، موریطانیہ، نائیجیریا (ملک کے تیسرے حصے میں)، سعودی عرب، صومالیہ (خود مختار ریاست جوبالینڈ میں) اور متحدہ عرب امارات میں اس پر عمل نہیں کیا جاتا۔ اس کے ساتھ ساتھ، طالبان کے دور حکومت میں افغانستان اور چیچنیا کے روسی علاقے میں ایل جی بی ٹی لوگوں کو ماورائے عدالت قتل کا سامنا ہے۔ [1] سوڈان نے 2020ء میں مقعد جنسی (متضاد یا ہم جنس پرست) کے لئے اپنی غیر نافذ شدہ موت کی سزا کو منسوخ کردیا۔ 15 ممالک میں زنا کی سزا کے طور پر کتابوں میں سنگسار کرنے کی سزا ہے، جس میں ہم جنس پرستی بھی شامل ہوتی ہے، لیکن یہ صرف ایران میں قانونی حکام کے ذریعہ نافذ ہے۔ [2]

2011ء میں، اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل نے ایل جی بی ٹی کے حقوق کو تسلیم کرنے کے لیے اپنی پہلی قرارداد منظور کی، جس کے بعد اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق نے ایک رپورٹ جاری کی جس میں ایل جی بی ٹی لوگوں کے حقوق کی خلاف ورزیوں، بشمول نفرت انگیز جرائم، ہم جنس پرستوں کی سرگرمیوں کو مجرمانہ، اور امتیازی سلوک بنانے سے متعلق شماریات شامل ہیں۔ رپورٹ کے اجراکے بعد، اقوام متحدہ نے ان تمام ممالک پر زور دیا جنہوں نے ابھی تک ایسا نہیں کیا ہے کہ وہ بنیادی ایل جی بی ٹی حقوق کے تحفظ کے لیے قوانین بنائے۔ [3]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حواشی[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "'They will kill us if they find us': LGBT Afghans fear new Taliban regime". اخذ شدہ بتاریخ 6 ستمبر 2021. 
  2. Mendos، Lucas Ramón (2019). State-Sponsored Homophobia 2019 (PDF) (ایڈیشن 13th). Geneva: ILGA. صفحہ 15. 
  3. "UN issues first report on human rights of gay and lesbian people". اقوام متحدہ. 15 دسمبر 2011. اخذ شدہ بتاریخ 20 ستمبر 2018. 

بیرونی روابط[ترمیم]