ایمپیڈوکلیز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ایمپیڈوکلیز
Empedokles.jpeg
 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 490 ق م[1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ایگریجینتو  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات سنہ 430 ق م[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کوہ ایٹنا  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات خود کشی  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
استاذ اناکسا غورث[1]،  بارامانیاس[1]،  فیثاغورث[1]،  ہیراکلیطس[1]  ویکی ڈیٹا پر (P1066) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ طبیب،  فلسفی،  مصنف،  شاعر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان قدیم یونانی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل فلسفہ  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تحریک فلسفۂ ما قبل سقراط  ویکی ڈیٹا پر (P135) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

یونانی فلسفی جس نے “ثبات ہستی “ کے قدیم عقیدے کو ہراکلیتس کے تجربہ تغیر اور حرکت سے ملانے کی کوشش کی۔ اس کے نقطہ نظر کے مطابق کائنات کے چار بنیادی عناصر ہیں۔ خاک، پانی، ہوا اور آگ انھیں عناصر کے ملنے سے تمام چیزیں بنی ہیں۔ محبت اور نفرت دو حرکی اصول ہیں، جن پر ان تمام اجزا کا باہمی ملاپ ہوا ہے۔ یہی دو حرکی اصول خیر اور شر کو جنم دیتے ہیں۔

  1. ^ ا ب پ عنوان : Empedocles — شائع شدہ از: Real'nyj slovar' klassicheskih drevnostej po Ljubkeru