ایڈتھ ولسن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ایڈتھ ولسن
(انگریزی میں: Edith Wilson ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Edith Wilson cropped 2.jpg
 

مناصب
خاتون اول ریاست ہائے متحدہ   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
18 دسمبر 1915  – 4 مارچ 1921 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ایلن ایکسن ولسن 
فلورنس ہارڈنگ  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
خاتون اول ریاست ہائے متحدہ   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
18 دسمبر 1915  – 4 مارچ 1921 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png مارگریٹ ووڈرو ولسن 
فلورنس ہارڈنگ  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائشی نام (انگریزی میں: Edith Bolling ویکی ڈیٹا پر (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 15 اکتوبر 1872[1][2][3][4][5]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وائیتھیویل  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 28 دسمبر 1961 (89 سال)[1][2][3][4][6]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
واشنگٹن ڈی سی  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجہ وفات عَجزِ قلب  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن واشنگٹن قومی کیتھیڈرل  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت ڈیموکریٹک پارٹی  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات ووڈرو ولسن (18 دسمبر 1915–3 فروری 1924)[7]
نارمن گالٹ (1896–28 جنوری 1908)  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد جج ولیم ہولکومب بولنگ  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ سیلی وائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Edith Bolling Wilson Signature.svg
 

ایڈتھ ولسن (انگریزی: Edith Wilson) صدر ریاستہائے متحدہ امریکا ووڈرو ولسن کی دوسری بیوی اور 1915ء سے 1921ء تک ریاستہائے متحدہ امریکا کی خاتون اول تھیں۔

اس نے دسمبر 1915ء میں رنڈوے ووڈرو ولسن سے اپنی پہلی مدت صدارت کے دوران میں شادی کی۔ ایڈتھ ولسن نے اکتوبر 1919ء میں سکتہ کا شکار ہونے کے بعد صدر ولسن کی انتظامیہ میں ایک بااثر کردار ادا کیا۔ اپنے شوہر کے بقیہ دور صدارت میں اس نے صدر کا عہدہ سنبھالا، اس کردار کو بعد میں اس نے "منتظمین" کے طور پر بیان کیا۔ اور اس بات کا تعین کیا کہ ریاست کے کون سے رابطے اور معاملات بستر پر پڑے صدر کی توجہ دلانے کے لیے کافی اہم تھے۔ [8][9]

ابتدائی زندگی[ترمیم]

ایڈتھ بولنگ 15 اکتوبر 1872ء کو وائیتھوِل، ورجینیا میں سرکٹ کورٹ کے جج ولیم ہولکمب بولنگ اور ان کی اہلیہ سارہ "سیلی" سپیئرز (وائٹ) [10] کے ہاں پیدا ہوئیں۔ اس کی جائے پیدائش، بولنگ ہوم، اب وائیتھویل کے تاریخی ضلع میں واقع ایک میوزیم ہے۔ [11]

بولنگ ورجینیا کالونی پہنچنے والے پہلے آباد کاروں کی اولاد تھے۔ اپنے والد کی طرف سے وہ ماتاوکا کی اولاد سے بھی تھیں، جو پوکاہونٹاس کے نام سے مشہور ہیں، [12][13][14][15] واہنسیناکاو کی بیٹی، جو پاوہٹن کنفیڈریسی کے سب سے بڑے غضبناک تھے۔ [16] 5 اپریل، 1614ء کو ماتاوکا (پچھلے سال عیسائیت اختیار کرنے کے بعد اس کا نام بدل کر "ریبیکا" رکھ دیا گیا) نے جان رولف سے شادی کی، جو ورجینیا میں تمباکو کو برآمدی شے کے طور پر کاشت کرنے والے پہلے انگریز آباد کار تھے۔ ان کی پوتی، جین رولف نے رابرٹ بولنگ سے شادی کی، [17] جو ایک مالدار غلام کا مالک اور تاجر تھا۔[18][19][20][21][22][23] جان بولنگ، جین رولف اور رابرٹ بولنگ کے بیٹے، [24] اپنی بیوی، میری کینن کے ساتھ چھ بچے بچ گئے تھے۔ ان بچوں میں سے ہر ایک نے شادی کی اور ان کے بچ جانے والے بچے تھے۔ مزید برآں اس کا تعلق یا تو خون کے ذریعے یا شادی کے ذریعے تھامس جیفرسن، مارتھا واشنگٹن، لیٹیشیا کرسچن ٹائلر اور ہیریسن خاندان سے تھا۔ [25] ایڈتھ گیارہ بچوں میں ساتویں تھیں، جن میں سے دو بچپن میں ہی مر گئے۔ [26] بولنگز امریکی خانہ جنگی سے پہلے ورجینیا کے غلاموں کی ملکیت، پلانٹر اشرافیہ کے کچھ قدیم ترین ارکان تھے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Edith-Wilson — بنام: Edith Wilson — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  2. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6474fmf — بنام: Edith Wilson — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/memorial/94182202 — بنام: Edith White Wilson — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/memorial/19670 — بنام: Edith White Wilson — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. بنام: Edith Bolling Galt Wilson — FemBio ID: https://www.fembio.org/biographie.php/frau/frauendatenbank?fem_id=28922 — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Банк інформації про видатних жінок
  6. دا پیرایج پرسن آئی ڈی: https://wikidata-externalid-url.toolforge.org/?p=4638&url_prefix=https://www.thepeerage.com/&id=p32323.htm#i323225 — بنام: Edith Bolling — مصنف: ڈئریل راجر لنڈی — خالق: ڈئریل راجر لنڈی
  7. دا پیرایج پرسن آئی ڈی: https://wikidata-externalid-url.toolforge.org/?p=4638&url_prefix=https://www.thepeerage.com/&id=p32323.htm#i323225 — اخذ شدہ بتاریخ: 7 اگست 2020
  8. William Elliott Hazelgrove, Madam President: The Secret Presidency of Edith Wilson (Washington, D.C.: Regency Publishing, 2016); Brian Lamb, Who's Buried in Grant's Tomb?: A Tour of Presidential Gravesites (New York: Public Affairs, 2010)، p. 119; Judith L. Weaver, "Edith Bolling, Wilson as First Lady: A Study in the Power of Personality, 1919–1920," Presidential Studies Quarterly 15, No. 1 (Winter, 1985)، pp. 51–76; and Dwight Young and Margaret Johnson, Dear First Lady: Letters to the White House: From the Collections of the Library of Congress & National Archives (Washington, D.C.: National Geographic, 2008)، p. 91.
  9. Markel، Howard (اکتوبر 2, 2015). "When a secret president ran the country". PBS NewsHour. NewsHour Productions. اخذ شدہ بتاریخ دسمبر 27, 2019. 
  10. Dorothy Schneider and Carl J. Schneider, First Ladies: A Biographical Dictionary (New York: Facts On File, 2010)، p. 191; and "Person Details for Edith Bolling, "Virginia Births and Christenings, 1853–1917" —". Familysearch.org. اخذ شدہ بتاریخ ستمبر 7, 2016. 
  11. Pezzoni، J. Daniel (جولائی 1994). "National Register of Historic Places Inventory/Nomination: Wytheville Historic District" (PDF). Virginia Department of Historic Resources. فروری 15, 2017 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ اکتوبر 14, 2013. 
  12. Hendrix، Steve (اکتوبر 18, 2018). "Trump uses 'Pocahontas' as a slur. Here's her sad history.". Daily Herald. 
  13. "Will Donald Trump be the first president who has been divorced?". CBS News. 
  14. Lord، Debbie. "Who is Pocahontas? Seven things to know about the woman President Trump keeps referencing". The Atlanta Journal-Constitution. 
  15. Stebbins، Sarah (2010). "Pocahontas: Her Life and Legend". 
  16. Hatch, p. 42; Waldrup, p. 186; For a genealogy of Pocahontas' descendants, see Wyndham Robertson, Pocahontas: Alias Matoaka, and Her Descendants through Her Marriage at Jamestown, Virginia, in اپریل 1614, with John Rolph, Gentleman (J W Randolph & English, Richmond, VA, 1887)۔
  17. Winkler، Wayne (2005). Walking Toward The Sunset: The Melungeons Of Appalachia. Mercer University Press. صفحہ 42. ISBN 0-86554-869-2. 
  18. Ordhal Kupperman، Karen (2000). Indians & English: Facing Off in Early America. New York: Cornell University Press. 
  19. Ordhal Kupperman، Karen (1980). Settling with the Indians: the Meeting of English and Indian Cultures in America, 1580–1640. New York: Rowman and Littlefield. 
  20. Ordhal Kupperman، Karen (2007). The Jamestown Project. Harvard University Press. 
  21. Ordhal Kupperman، Karen (2012). The Atlantic in World History. Oxford University Press. 
  22. Townshend، Camilla (2004). Pocahontas and the Powhatan Dilemma. Hill and Wang. 
  23. Yorktown، Mailing Address: P. O. Box 210؛ Us، VA 23690 Phone:856–1200 Contact. "Thomas Rolfe – Historic Jamestowne Part of Colonial National Historical Park (U.S. National Park Service)". www.nps.gov. 
  24. Henrico County Deeds & Wills 1697–1704, p. 96
  25. "First Lady Biography: Edith Wilson". Canton, Ohio: خواتین اول قومی تاریخی مقام. اخذ شدہ بتاریخ جون 29, 2021. 
  26. Mayo, p. 170; and McCallops, p. 1.