ایڈن گارڈنز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
Eden Gardens
ইডেন গার্ডেন্স
Eden Gardens Kol.jpg
میدان کی معلومات
مقام کولکاتہ
جغرافیائی متناسق نظام 22°33′52″N 88°20′36″E / 22.56444°N 88.34333°E / 22.56444; 88.34333متناسقات: 22°33′52″N 88°20′36″E / 22.56444°N 88.34333°E / 22.56444; 88.34333
تاسیس 1864
گنجائش 68,000[1]
ملکیت بھارتی فوج[2]
مشتغل Cricket Association of Bengal
متصرف بھارت قومی کرکٹ ٹیم
Bengal cricket team
کولکتہ نائٹ رائیڈرز
اینڈ نیم
High Court End
Pavilion End
بین الاقوامی معلومات
پہلا ٹیسٹ 5–8 جنوری 1934:
 بھارت بمقابلہ  انگلستان
آخری ٹیسٹ 6–8 نومبر 2013:
 بھارت بمقابلہ  ویسٹ انڈیز
پہلا ایک روزہ 18 فروری 1987:
 بھارت بمقابلہ  پاکستان
آخری ایک روزہ 13 نومبر 2014:
 بھارت بمقابلہ  سری لنکا
پہلا ٹی20 29 اکتوبر 2011:
 بھارت بمقابلہ  انگلستان
آخری ٹی20 26 مارچ 2016:
 نیوزی لینڈ بمقابلہ سانچہ:Country data بنگلا دیش
ٹیم کی معلومات
Bengal cricket team (1908 – تاحال)
کولکتہ نائٹ رائیڈرز (2008 – تاحال)
بمطابق 26 مارچ 2016
ماخذ: http://www.espncricinfo.com/india/content/ground/57980.html ایڈن گارڈنز، کرک انفو
ایڈن گارڈنز is located in Kolkata
ایڈن گارڈنز
ایڈن گارڈنز
ایڈن گارڈنز (Kolkata)

کرکٹ عالمی کپ[ترمیم]

This stadium has hosted One Day International (ODI) matches during کرکٹ عالمی کپ 1987, کرکٹ عالمی کپ 1996 اور کرکٹ عالمی کپ 2011. The stadium also was involved in the 1978 Women's Cricket World Cup اور 1997 Women's Cricket World Cup.

1987 کرکٹ عالمی کپ[ترمیم]

23 اکتوبر 1987
اسکور کارڈ
زمبابوے 
228/5 (50 اوور)
بمقابلہ
 نیوزی لینڈ
229/6 (47.4 اوور)
 نیوزی لینڈ 4 ووکٹوں سے جیت گیا
تماشائی 42,721

8 نومبر 1987
اسکور کارڈ
آسٹریلیا 
253/5 (50 اوور)
بمقابلہ
 انگلستان
246/8 (50 اوور)
 آسٹریلیا 7 دوڑوں سے جیت گيا
تماشائی 95,000

1996 کرکٹ عالمی کپ[ترمیم]

سری لنکا 
251/8 (50 اوور)
بمقابلہ
 بھارت
120/8 (34.1 اوور)
Aravinda de Silva 66 (47)
Javagal Srinath 3/34 (7 اوور)
سچن تندولکر 65 (88)
Sanath Jayasuriya 3/12 (7 اوور)
سری لنکا کو فاتح قرار دیا گیا
امپائر: Steve Dunne اور Cyril Mitchley
مرد میدان: Aravinda de Silva (سری لنکا)
تماشائی 110,000

2011 کرکٹ عالمی کپ[ترمیم]

20 مارچ 2011
اسکور کارڈ
زمبابوے 
308/6 (50 اوور)
بمقابلہ
 کینیا
147 (36 اوور)
 زمبابوے 161 دوڑوں سے جیت گیا
15 مارچ 2011 (د/ر)
اسکور کارڈ
جنوبی افریقا 
272/7 (50 اوور)
بمقابلہ
 آئرلینڈ
141 (33.2 اوور)
 جنوبی افریقا 131 دوڑوں سے جیت گیا
18 مارچ 2011
اسکور کارڈ
نیدرلینڈز 
306 (50 اوور)
بمقابلہ
 آئرلینڈ
307/4 (47.4 اوور)
 آئرلینڈ 6 ووکٹوں سے جیت گيا

* Eden Gardens was meant to host a Group B Match between India and England on 27 February 2011. The ICC, however, stripped the stadium of the match after deciding that the renovation of the grounds would not be completed in time.

خواتین کرکٹ عالمی کپ 1978[ترمیم]

1 جنوری 1978
(scorecard)
بھارت 
63 (39.3 اوور)
بمقابلہ
 انگلستان
65/1 (30.2 اوور)
DF Edulji 18
G Hullah 2/2 (6.3)
M Wilks 2/6 (6.0)
LD Thomas 43*
DF Edulji 1/18 (10)
 انگلستان 9 ووکٹوں سے جیت گئی
امپائر: B Ganguli اور SK Ghosh

خواتین کرکٹ عالمی کپ 1997[ترمیم]

29 دسمبر 1997
اسکور کارڈ
نیوزی لینڈ 
164 (49.3 اوور)
بمقابلہ
 آسٹریلیا
165/5 (47.4 اوور)
Debbie Hockley 79 (121)
Bronwyn Calver 2/29 (10 اوور)
Belinda Clark 52 (81)
Katrina Keenan 2/23 (10 اوور)
 آسٹریلیا 5 ووکٹوں سے جیت گيا
امپائر: Aloke Bhattacharjee اور S Choudhary
مرد میدان: Debbie Hockley (NZ)
  • نیوزی لینڈ خواتین ٹیم نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کی۔.

ایک روزہ مقابلے[ترمیم]

ایڈن گارڈنز میں ہونے والے ایک روزہ مقابلے۔[3]

S No ٹیم (ا) ٹیم (ب) فاتح فوق تاریخ مقابلہ تماشائی
1 بھارت پاکستان پاکستان 2 ووکٹوں سے 18 فروری 1987 97,627
2 نیوزی لینڈ زمبابوے نیوزی لینڈ 4 ووکٹوں سے 23 اکتوبر 1987 42,721
3 آسٹریلیا انگلینڈ آسٹریلیا 7 دوڑوں سے 8 نومبر 1987 95,000
4 بھارت ویسٹ انڈیز بھارت 56 دوڑوں سے 2 جنوری 1988 ***
5 بھارت پاکستان پاکستان 77 دوڑوں سے 28 اکتوبر 1989 84,825
6 پاکستان ویسٹ انڈیز پاکستان 4 ووکٹوں سے 1 نومبر 1989 ***
7 بنگلہ دیش سری لنکا سری لنکا 71 دوڑوں سے 31 دسمبر 1990 ***
8 بھارت سری لنکا بھارت 7 ووکٹوں سے 4 جنوری 1991 ***
9 بھارت جنوبی افریقا بھارت 3 ووکٹوں سے 10 نومبر 1991 93,730
10 بھارت جنوبی افریقا بھارت 2 دوڑوں سے 24 نومبر 1993 104,264
11 سری لنکا ویسٹ انڈیز ویسٹ انڈیز 7 ووکٹوں سے 25 نومبر 1993 ***
12 بھارت ویسٹ انڈیز بھارت 102 دوڑوں سے 27 نومبر 1993 107,882
13 بھارت ویسٹ انڈیز بھارت 72 دوڑوں سے 5 نومبر 1994 105,732
14 بھارت سری لنکا سری لنکا نامعلوم (طے شدہ طور پر فاتح) 13 مارچ 1996 110,000
15 پاکستان سری لنکا سری لنکا 85 دوڑوں سے 27 مئی 1997 ***
16 بھارت کینیا بھارت 9 ووکٹوں سے 31 مئی 1998 ***
17 بھارت انگلینڈ بھارت 22 دوڑوں سے 19 جنوری 2002 67,890
18 بھارت آسٹریلیا آسٹریلیا 37 دوڑوں سے 18 نومبر 2003 103,962
19 بھارت پاکستان پاکستان 6 ووکٹوں سے 13 نومبر 2004 85,821
20 بھارت جنوبی افریقا جنوبی افریقا 10 ووکٹوں سے 25 نومبر 2005 ***
21 بھارت سری لنکا بلا نتیجہ - 8 فروری 2007 ***
22 بھارت سری لنکا بھارت 7 ووکٹوں سے 24 دسمبر 2009 ***
23 آئرلینڈ جنوبی افریقا جنوبی افریقا 131 دوڑوں سے 15 مارچ 2011 32,932
24 آئرلینڈ نیدرلینڈز آئرلینڈ 6 ووکٹوں سے 18 مارچ 2011 29,000
25 کینیا زمبابوے زمبابوے 161 دوڑوں سے 20 مارچ 2011 15
26 بھارت انگلینڈ بھارت 95 دوڑوں سے 25 اکتوبر 2011
27 بھارت پاکستان پاکستان 85 دوڑوں سے 3 جنوری 2013 66,000
28 بھارت سری لنکا بھارت 153 دوڑوں سے 13th نومبر 2014 42,729

ٹی/20 مقابلے[ترمیم]

ایڈن گارڈنز میں ہونے والے ٹی/20 مقابلے۔[4]

S No ٹیم (ا) ٹیم (ب) فاتح فوق تاریخ مقابلہ
1 بھارت انگلینڈ انگلینڈ 6 ووکٹوں سے 29 اکتوبر 2011
2 بھارت جنوبی افریقا Match Abandoned 8 اکتوبر 2015
3 پاکستان بنگلا دیش پاکستان 55 دوڑوں سے 16 مارچ 2016
4 افغانستان سری لنکا سری لنکا 6 ووکٹوں سے 17 مارچ 2016
5 بھارت پاکستان بھارت 6 ووکٹوں سے 19 مارچ 2016

ٹیسٹ مقابلے[ترمیم]

بھارت نے ایڈن گارڈنز میں کئی کرکٹ ٹیسٹ مقابلوں کی میزبانی کی ہے۔[5]

S No بمقابلہ فاتح فرق تاریخ مقابلہ تماشائی
1 انگلینڈ بلا نتیجہ - 5–8 جنوری 1934 ***
2 ویسٹ انڈیز بلا نتیجہ - 31 دسمبر 1948 – 4 جنوری 1949 ***
3 انگلینڈ بلا نتیجہ - 30 دسمبر 1951 – 4 جنوری 1952 ***
4 پاکستان بلا نتیجہ - 12–15 دسمبر 1952 ***
5 نیوزی لینڈ بلا نتیجہ - 28 دسمبر 1955 – 2 جنوری 1956 ***
6 آسٹریلیا آسٹریلیا 94 دوڑیں 2–6 نومبر 1956 ***
7 ویسٹ انڈیز ویسٹ انڈیز اننگ & 336 دوڑیں 31 دسمبر 1958 – 4 جنوری 1959 ***
8 آسٹریلیا بلا نتیجہ - 23–28 جنوری 1960 ***
9 پاکستان بلا نتیجہ - 30 دسمبر 1960 – 4 جنوری 1961 ***
10 انگلینڈ بھارت 187 دوڑیں 30 دسمبر 1961 – 4 جنوری 1962 ***
11 انگلینڈ بلا نتیجہ - 29 جنوری – 3 فروری 1964 ***
12 آسٹریلیا بلا نتیجہ - 17–22 اکتوبر 1964 ***
13 نیوزی لینڈ بلا نتیجہ - 5–8 مارچ 1965 ***
14 ویسٹ انڈیز ویسٹ انڈیز اننگ & 45 دوڑیں 31 دسمبر 1966 – 5 جنوری 1967 ***
15 آسٹریلیا آسٹریلیا 10 ووکٹیں 12–16 دسمبر 1969 ***
16 انگلینڈ بھارت 28 دوڑیں 30 دسمبر 1972 – 4 جنوری 1973 ***
17 ویسٹ انڈیز بھارت 85 دوڑیں 27 دسمبر 1974 – 1 جنوری 1975 ***
18 انگلینڈ انگلینڈ 10 ووکٹیں 1–6 جنوری 1977 ***
19 ویسٹ انڈیز بلا نتیجہ - 29 دسمبر 1978 – 3 جنوری 1979 ***
20 آسٹریلیا بلا نتیجہ - 26–31 اکتوبر 1979 ***
21 پاکستان بلا نتیجہ - 29 جنوری – 3 فروری 1980 ***
22 انگلینڈ بلا نتیجہ - 1–6 جنوری 1982 ***
23 ویسٹ انڈیز ویسٹ انڈیز اننگ & 46 دوڑیں 10–14 دسمبر 1983 ***
24 انگلینڈ بلا نتیجہ - 31 دسمبر 1984 – 5 جنوری 1985 ***
25 پاکستان بلا نتیجہ - 11–16 فروری 1987 ***
26 ویسٹ انڈیز بلا نتیجہ - 26–31 دسمبر 1989 ***
27 انگلینڈ بھارت 8 ووکٹیں 29 جنوری – 2 فروری 1993 ***
28 جنوبی افریقا جنوبی افریقا 329 دوڑیں 27 نومبر – 1 دسمبر 1996 ***
29 آسٹریلیا بھارت اننگ & 219 دوڑیں 18–21 مارچ 1998 ***
30 پاکستان پاکستان 46 دوڑیں 16–20 فروری 1999 4,65,000
31 آسٹریلیا بھارت 171 دوڑیں 11–15 مارچ 2001 ***
32 ویسٹ انڈیز بلا نتیجہ - 30 اکتوبر – 3 نومبر 2002 ***
33 جنوبی افریقا بھارت 8 ووکٹیں 28 نومبر – 2 دسمبر 2004 ***
34 پاکستان بھارت 195 دوڑیں 16–20 مارچ 2005 ***
35 پاکستان بلا نتیجہ - 30 نومبر – 4 دسمبر 2007 ***
36 جنوبی افریقا بھارت اننگ & 57 دوڑیں 14–18 فروری 2010 ***
37 ویسٹ انڈیز بھارت اننگ & 15 دوڑیں 14–17 نومبر 2011 ***
38 انگلینڈ انگلینڈ 7 ووکٹیں 5–9 دسمبر 2012 ***
39 ویسٹ انڈیز بھارت اننگ & 51 دوڑیں 6–10 نومبر 2013 ***

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]

Kolkata/Maidan سفری معلومات ویکی سفر پر