باب:اسلام/منتخب اقتباس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
علی بن ابی طالب
جس نے طمع کو اپنا شعار بنایا ،اس نے اپنے کو سبک کیا اور جس نے اپنی پریشان حالی کا اظہار کیا وہ ذلت پر آمادہ ہوگیا ,اور جس نے اپنی زبان کو قابو میں نہ رکھا ،اس نے خود اپنی بے وقعتی کا سامان کر لیا .


ہدایات[ترمیم]

  1. Select a new quote attributed to a different individual than any of those currently quoted below.
  2. Add a new Quote to the next available subpage, using the layout format from the link above.
  3. Add a citation of where the quote was stated on that subpage below the quote.
  4. Update the "Random subpage" start and end values at the Main Portal page to include the new Quote.

اقتباس کی فہرست[ترمیم]

باب:اسلام/منتخب اقتباس/1

مجھے اسلامی تصوف کی انسان دوستی، ذوق و وجدان، خدا سے بندوں کے تعلق اور انسانوں کے باہمی تعلقات کے متعلق واضح احکامات نے اسلام کی طرف ماہل کیا۔ (نو مسلم)



باب:اسلام/منتخب اقتباس/2

محمد علی کلے
میں دین اسلام پر ایمان رکھتا ہوں، جس کا مطلب ہے کہ میرا ایمان ہے کہ، اللہ کے علاوہ کوئی معبود نہیں اور ایلیا محمد اللہ کے رسول ہیں۔ یہ وہی دین ہے جس پر افریقہ اور ایشیا کے سات سو ملین سے زیادہ سیاہ فام ایمان ر رکھتے ہیں۔ (بعد میں ایلیا محمد نامی شخص کے گمراہ عقیدے سے محمد علی کلے نکل آئے تھے)



باب:اسلام/منتخب اقتباس/3

مراد ہوف مین
میں ایسے مذہب کے متعلق جاننے کے لیے بڑا بے چین تھا کہ جس کے ماننے والوں نے اپنے وطن (الجزائر) کے لیے ایک ملین کی تعداد میں اپنی جانوں کو قربان کیا۔ اسلام کے متعلق مزید معلومات حاصل کرنے اور (مجھے) قرآن پڑھنے کے لیے عربی سیکھنے کی ضرورت تھی۔ وہ قرآن جو مجاہدین کو حوصلہ اور طاقت وجرات عطا کرتا ہے۔ اسی اسلام نے میری روحانی تسکین کی اور میری زندگی کو بہت زیادہ توازن، خود اعتمادی اور طمانیت عطا کی۔



باب:اسلام/منتخب اقتباس/4

محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم
لوگو! نہ تو میرے بعد کوئی نبی ہے اور نہ کوئی جدید امت پیدا ہونے والی ہے۔ خوب سن لو کہ اپنے پروردگار کی عبادت کرو اور پنجگانہ نماز ادا کرو۔ سال بھر میں ایک مہینہ رمضان کے روزے رکھو۔ خانہ خدا کا حج بجا لاؤ۔۔۔۔میں تم میں ایک چیز چھوڑتا ہوں۔ اگر تم نے اس کو مضبوط پکڑ لیا تو گمراہ نہ ہوگے وہ کیا چیز ہے؟ کتاب اللہ اور سنت رسول اللہ۔




باب:اسلام/منتخب اقتباس/5

علی بن ابی طالب
جس نے طمع کو اپنا شعار بنایا ،اس نے اپنے کو سبک کیا اور جس نے اپنی پریشان حالی کا اظہار کیا وہ ذلت پر آمادہ ہوگیا ,اور جس نے اپنی زبان کو قابو میں نہ رکھا ،اس نے خود اپنی بے وقعتی کا سامان کر لیا .

باب:اسلام/منتخب اقتباس/6 باب:اسلام/منتخب اقتباس/6


باب:اسلام/منتخب اقتباس/7 باب:اسلام/منتخب اقتباس/7


باب:اسلام/منتخب اقتباس/8 باب:اسلام/منتخب اقتباس/8


باب:اسلام/منتخب اقتباس/9 باب:اسلام/منتخب اقتباس/9


باب:اسلام/منتخب اقتباس/10 باب:اسلام/منتخب اقتباس/10


باب:اسلام/منتخب اقتباس/11 باب:اسلام/منتخب اقتباس/11


باب:اسلام/منتخب اقتباس/12 باب:اسلام/منتخب اقتباس/12


باب:اسلام/منتخب اقتباس/13 باب:اسلام/منتخب اقتباس/13


باب:اسلام/منتخب اقتباس/14 باب:اسلام/منتخب اقتباس/14


باب:اسلام/منتخب اقتباس/15 باب:اسلام/منتخب اقتباس/15


باب:اسلام/منتخب اقتباس/16 باب:اسلام/منتخب اقتباس/16


باب:اسلام/منتخب اقتباس/17 باب:اسلام/منتخب اقتباس/17


باب:اسلام/منتخب اقتباس/18 باب:اسلام/منتخب اقتباس/18


باب:اسلام/منتخب اقتباس/19 باب:اسلام/منتخب اقتباس/19


باب:اسلام/منتخب اقتباس/20 باب:اسلام/منتخب اقتباس/20


باب:اسلام/منتخب اقتباس/21 باب:اسلام/منتخب اقتباس/21


باب:اسلام/منتخب اقتباس/22 باب:اسلام/منتخب اقتباس/22


باب:اسلام/منتخب اقتباس/23 باب:اسلام/منتخب اقتباس/23


باب:اسلام/منتخب اقتباس/24 باب:اسلام/منتخب اقتباس/24


باب:اسلام/منتخب اقتباس/25 باب:اسلام/منتخب اقتباس/25


باب:اسلام/منتخب اقتباس/26 باب:اسلام/منتخب اقتباس/26


باب:اسلام/منتخب اقتباس/27 باب:اسلام/منتخب اقتباس/27


باب:اسلام/منتخب اقتباس/28 باب:اسلام/منتخب اقتباس/28


باب:اسلام/منتخب اقتباس/29 باب:اسلام/منتخب اقتباس/29


باب:اسلام/منتخب اقتباس/30 باب:اسلام/منتخب اقتباس/30


نامزد کردہ[ترمیم]

نئے اقتباس کی تجویز کے لیے تبادلہ خیال صفحہ استعمال کریں۔