باب:کرکٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
کرکٹ باب

کرکٹ کیا ہے؟

A bowler delivers the ball to a batsman during a game of cricket
A bowler delivers the ball to a batsman
during a game of cricket.

کرکٹ ایک ایسا کھیل ہے جو گیارہ کھلاڑیوں پر مشتمل دو ٹیموں کے درمیان کھیلا جاتا ہے۔ یہ کھیل گیند اور بلے کے ذریعے کھیلا جاتا ہے جس کا میدان بیضوی شکل کا ہوتا ہے۔ میدان کے درمیان میں 20.12 میٹر (22 گز) کا مستقر بنا ہوتا ہے جسے پچ کہا جاتا ہے۔ پچ کے دونوں جانب تین، تین لکڑیاں نصب کی جاتی ہیں جنہیں وکٹ کہا جاتا ہے۔ میدان میں موجود ٹیم کا ایک رکن (گیند باز) چمڑے سے بنی ایک گیند کو پچ کی ایک جانب سے ہاتھ گھما کر دوسری ٹیم کے بلے باز رکن کو پھینکتا ہے۔ عام طور پر گیند بلے باز تک پہنچنے سے قبل ایک مرتبہ اچھلتی ہے جو اپنی وکٹوں کا دفاع کرتا ہے۔ دوسرا بلے باز جو نان اسٹرائیکر کہلاتا ہے گیند باز کے گیند کرانے والی جگہ کھڑا ہوتا ہے۔


عام طور پر بلے باز اپنے بلے کے ذریعے گیند کو مارنے کی کوشش کرتا ہے اور اس کوشش کے دوران اپنے دوسرے ساتھی بلے باز کی جانب دوڑتا ہے اس طرح دونوں کو پچ پر ایک دوسرے کی جگہ پہنچنے پر ایک دوڑ ملتی ہے۔ وہ گیند بلے پر نہ لگنے کی صورت میں بھی دوڑ بناسکتا ہے۔ اگر گیند اتنی قوت سے وکٹوں کو ٹکرائے کہ اس پر رکھی گئی گلیاں زمین پر گرجائیں تو بلے باز میدان بدر کردیا جائے گا اس عمل کو آؤٹ ہونا کہتے ہیں۔ آؤٹ ہونے کی دیگر کئی اقسام بھی ہیں جن میں بلے باز کے بلے سے گیند لگ کر زمین پر گرنے سے قبل مخالف ٹیم کے رکن کا اسے پکڑلینا (کیچ)، بلے باز کی ٹانگ پر گیند کا اس وقت لگنا جب وہ وکٹوں کی سیدھ میں ہو (ایل بی ڈبلیو)، دوڑ مکمل کرنے سے قبل حریف ٹیم کا گیند وکٹوں پر ماردینا (رن آؤٹ) و دیگر شامل ہیں۔ کرکٹ بلے اور گیند سے کھیلا جانے والا کھیل ہے جس میں دونوں ٹیموں کا ہدف حریف ٹیم سے زیادہ دوڑیں بنانا ہے۔ ہر میچ کو دو باریوں میں تقسیم کیا جاتا ہے جس میں ایک ٹیم بلا اور دوسری گیند سنبھالتی ہے۔


ایک ٹیم کی باری اس وقت ختم ہوتی ہے جب اس کے تمام کھلاڑی آؤٹ ہوجائیں، مقررہ گیندیں ختم ہوجائیں یا اس کا قائد باری ختم کرنے کا اعلان کردے۔ باریوں اور گیندوں کی تعداد کھیل کی قسم پر منحصر ہے۔ کرکٹ میں دو اقسام کے کھیل کھیلے جاتے ہیں ایک "ٹیسٹ" دوسرا "ایک روزہ"۔ ٹیسٹ میچ 5 روزہ ہوتا ہے جس میں دونوں ٹیموں نے دو، دو باریاں کھیلنا ہوتی ہیں جبکہ ایک روزہ میں دونوں ٹیموں کو 300 گیندوں کی ایک باری ملتی ہے۔ فتح کے لئے بعد میں کھیلنے والی ٹیم کو حریف ٹیم سے زیادہ دوڑیں بنانا ہوتی ہیں لیکن اگر اس سے پہلے اس کے تمام 10 کھلاڑی میدان بدر ہوگئے تو حریف ٹیم میچ جیت جائے گی۔

 مزید دیکھیے کرکٹاور یہ قوانین، تاریخ، شماریات اور international structure.
نیچے نئے منتخب مضامین دیکھیں (تازہ کریں)

منتخب مضمون

عمران خان۔

عمران خان (پیدائشی نام عمران خان نیازی) پاکستانی سیاست دان اور سابق کرکٹر جن کی قیادت میں پاکستان نے کرکٹ عالمی کپ 1992 جیتا۔فرسٹ کلاس کرکٹ کا آغاز 1969-1970 میں لاہور کی طرف سے سرگودھا کے خلاف کھیلتے ہوئے کیا۔ 1971ء میں انگلستان کے خلاف پہلا ٹیسٹ میچ کھیلا۔انہوں نے 88 ٹیسٹ میچ کھیل کر 362 وکٹیں 22.81 کی اوسط سےحاصل کیں۔ 175 ایک روزہمیچوں میں حصہ لیا۔ اور 182 وکٹیں حاصل کیں۔ 3709 رنز 33.41 کی اوسط سے بنائے۔ ان کا زیادہ سے زیادہ اسکور 102 ناٹ آؤٹ تھا جو انھوں نے سری لنکا کے خلاف 1983ء میں کھیلتے ہوئے بنائے۔ ان کی قیادت میں 139 ایک روزہ میچ کھیلے گئے جن میں سے 77 جیتے 57 ہارے، چار بے نتیجہ رہے جبکہ 1 میچ برابر رہا۔اُنھوں نے مجموعی طور پر 5 عالمی کرکٹ کپ میں حصہ لیا ۔

عالمی کرکٹ کپ منعقدہ 1992ء کے بعد بین الااقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے لی۔ اس کے بعد سماجی کاموں میں حصہ لینا شروع کیا۔ آپ نے کینسر کے مریضوں کے لیے ایشیا کا سب سے بڑا اسپتال شوکت خانم میموریل اسپتال، لاہور ایک وقف کے ذریعے قائم کیا۔

منتخب فہرست

A terracotta urn with two brass plaques on it sits on a wooden base. The urn is on display, with the glass surround and other exhibits visible in the background.

The Ashes series are ٹیسٹ کرکٹ series played between England and Australia. The series have varied in length, consisting of between one and six Test matches, but since 1998 have been consistently five matches. It is one of sport's most celebrated rivalries and dates back to 1882. It is generally played biennially, alternating between the برطانیہ and آسٹریلیا. Although the first Test series played between England and Australia was in the 1876–77 season, the Ashes originated from the solitary Test which the two nations contested in 1882. England lost the match, played at اوول (کرکٹ میدان), and a mock obituary was posted in The Sporting Times, declaring the death of English cricket. It stated that: "The body will be cremated and the ashes taken to Australia." The Honourable Ivo Bligh adopted the term and, as captain of the English party that travelled to Australia the following winter, promised to bring the "Ashes" home. (مکمل فہرست...)


منتخب تصویر

Grace match junior cricket ball.jpg

cricket ball پر Lord's Cricket Ground کا نام لکھا ہوا ہے۔
Image credit: Marie-Lan Nguyen


خبروں میں

کرکٹ کی خبروں کے لیے، دیکھیں International cricket in 2014 اور International cricket in 2014–15
Ongoing tours/series

آج کے دن...

باب:Cricket/Anniversaries/Nav

کیا آپ جانتے ہیں...

سڈنی برنس

آئی سی سی درجہ بندی

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کرکٹ کی بین الاقوامی تنظیم ہے۔ and produces team rankings for the various forms of cricket played internationally.

ٹیسٹ کرکٹ is the longest form of cricket, played up to a maximum of five days with two innings per side.

ایک روزہ بین الاقوامی cricket is played over 50 overs, with one innings per side.

Twenty20 International cricket is played over 20 overs, with one innings per side.

آئی سی سی ٹیسٹ چمپئین شپ
درجہ ٹیم میچ پوائنٹ ریٹنگ
1  جنوبی افریقہ 21 2738 130
2  آسٹریلیا 26 2894 111
3  نیوزی لینڈ 29 2875 99
4  بھارت 23 2242 97
5  انگلستان 30 2920 97
6  پاکستان 20 1935 97
7  سری لنکا 21 2019 96
8  ویسٹ انڈیز 26 2101 81
9  بنگلہ دیش 19 783 41
10  زمبابوے 10 53 5
ماخذ: آئی سی سی درجہ بندی، 28 جون 2015
ICC ODI Championship
درجہ تبدیلی ٹیم مقابلے پوائنٹ ریٹنگ
1 Steady  آسٹریلیا 38 4889 129
2 Steady  بھارت 48 5500 115
3 Steady  نیوزی لینڈ 42 4710 112
4 Steady  جنوبی افریقہ 46 5131 112
5 Steady  سری لنکا 55 5811 106
6 Steady  انگلستان 47 4592 98
7 Steady  بنگلہ دیش 31 2868 93
8 Steady  ویسٹ انڈیز 35 3094 88
9 Steady  پاکستان 45 3915 87
10 Steady  جمہوریہ آئرلینڈ 11 549 50
11 Steady  زمبابوے 30 1319 44
12 Steady  افغانستان 15 618 41
ماخذ: آئی سی سی درجہ بندی، 24جون 2015
آئی سی سی عالمی ٹوئنٹی/20 درجہ بندی
درجہ تبدیلی کرکٹ ٹیم میچ پوائنٹس ریٹنگ
1 Steady  سری لنکا 13 1760 135
2 Steady  بھارت 10 1244 124
3 Steady  آسٹریلیا 16 1953 122
4 Steady  ویسٹ انڈیز 17 1994 117
5 Steady  پاکستان 20 2277 114
6 Increase2.svg  جنوبی افریقہ 19 2084 110
7 کم  نیوزی لینڈ 16 1706 107
8 Steady  انگلستان 16 1653 103
9 Steady  بنگلہ دیش 8 612 77
10 Steady  سکاٹ لینڈ 6 426 71
11 Steady  افغانستان 6 373 62
12 Steady  نیدرلینڈز 6 357 60
13 Steady  جمہوریہ آئرلینڈ 6 340 57
14 Steady  زمبابوے 7 334 48
ناکافی میچ
Steady  نیپال 4 63
Steady  ہانگ کانگ 4 30
Steady  متحدہ عرب امارات 3 0
ماخذ: آئی سی سی درجہ بندی، 23 جون 2015

زمرہ جات

منتخب مواد

ویکیپیڈیا:ویکی منصوبہ کرکٹ/منتخب مواد

ابواب کیا ہیں؟ | فہرست ابواب | منتخب ابواب