مندرجات کا رخ کریں

بادشاہت پاکستان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
بادشاہت پاکستان
سابقہ بادشاہت
نشان
پاکستان کی ملکہ ایلزبتھ دوم
اولین بادشاہ/ملکہ جارج ششم
آخری بادشاہ/ملکہ ملکہ ایلزبتھ دوم
انداز ہز میجسٹی
1947–1952
ہر میجسٹی
1952–1956
سرکاری رہائش گاہ بکنگھم محل
تقرر کنندہ موروثی
بادشاہت کا آغاز 15 اگست 1947
بادشاہت کا آختتام 23 مارچ 1956
موجودہ مدعی ٹائٹل ختم

بادشاہت پاکستان (Monarchy of Pakistan) ایک موروثی بادشاہی نطام تھا جو 1947ء سے 1956ء تک پاکستان میں بطور مملکت پاکستان قائم رہا۔[1] بادشاہ کے زیادہ تر آئینی اختیارات پاکستان کے گورنر جنرل کو سونپے گئے تھے۔ شاہی جانشینی کو 1701ء کے انگریزی ایکٹ کے ذریعے کنٹرول کیا گیا تھا۔

بادشاہت 23 مارچ 1956ء کو ختم کر دی گئی جب پاکستان دولت مشترکہ کے اندر ایک جمہوریہ بنا۔ پاکستان نے 1972ء میں دولت مشترکہ کو چھوڑ دیا لیکن 1989ء میں دوبارہ اس کا رکن بنا۔

فہرست پاکستان کی بادشاہت[ترمیم]

تصریر نام پیدائش موت سے تک پیش رو سے رشتہ
شاہ جارج ششم 14 دسمبر 1895 6 فروری 1952 15 اگست 1947 6 فروری 1952 کوئی نہیں (پوزیشن سونپ دی)
ملکہ ایلزبتھ دوم 21 اپریل 1926 6 فروری 1952 23 مارچ 1956 جارج ششم کی بیٹی

فہرست پاکستان کے شاہی رفیق حیات[ترمیم]

تصریر نام پیدائش موت سے تک پیش رو سے رشتہ
ملکہ ایلزبتھ، والدہ ملکہ 4 اگست 1900 30 مارچ 2002 15 اگست 1947 6 فروری 1952 شاہ جارج ششم کی بیوی
پرنس فلپ، ایڈنبرا کا ڈیوک 10 جون 1921 6 فروری 1952 23 مارط 1956 ملکہ الزبتھ دوم کے شوہر

دورے[ترمیم]

ملکہ اور ڈیوک آف ایڈنبرا نے 1961ء اور 1997ء میں دولت مشترکہ کے سربراہ کی حیثیت سے پاکستان کا دورہ کیا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]