بروہمادینہو ڈیم تباہ کاری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بروہمادینہو بند تباہ کاری
Resumo da agenda do Presidente da República 26.01.2019 (video screenshot) 01 (cropped).png
تاریخ 25 جنوری 2019ء (2019ء-01-25)
مقام بروہمادینہو، میناس گیرائس، برازیل
متناسقات 20°07′10″S 44°07′27″W / 20.11944°S 44.12417°W / -20.11944; -44.12417متناسقات: 20°07′10″S 44°07′27″W / 20.11944°S 44.12417°W / -20.11944; -44.12417
قسم ناقص ڈیم
شرکا والی (کان کنی کی کمپنی)
اموات 121[1]
معمولی زخمی 23
لاپتہ 226[2]
بروہمادینہو ڈیم تباہ کاری کا مقام

بروہمادینہو بند تباہ کاری کا سانحہ 25 جنوری 2019ء کو پیش آیا، جب ایک کان کنی سے حاصل ہونے والی معدنیات کا ذخیرہ کرنے والا بند (ڈیم)، بروہمادینہو، میناس گیرائس، برازیل میں تباہ کُن انداز میں ڈھے گیا۔[3] ڈیم کی ملکیت والی کے پاس تھی۔ یہ وہی کمپنی ہے جس کا نام 2015ء میں وقوع پزیر ہونے والے بینتو روڈریگوئز ڈیم تباہ کاری کے سانحے میں بھی آتا ہے۔[4] بیراجیم ششم ڈیم نے کیچڑ کے ریلوں کی یلغار کی، جس کی زد میں شہر کے نزدیک واقع دیہات کے مکانات آگئے۔[5][6]

تباہ کاری[ترمیم]

تباہ کاری کا واقعہ دوپہر کے کھانے کے وقت پیش آیا اور کیچڑ کا ریلا کان کے انتظامی علاقے سے ٹکرایا۔ اس وقت ملازمین کھانا کھا رہے تھے۔ 26 جنوری 2019ءء تک کے اعداد و شمار کے مطابق 40 ہلاکتیں ہوئیں اور 300 افراد لاپتا ہیں؛ جن میں 200 محنت کش ہیں، جبکہ 100 افراد کا تعلّق قریبی دیہاتوں اور عمارتوں سے ہے۔[7]

انہوتیم انسٹی ٹیوٹ – جو دنیا کا سب سے بڑا کھلا عجائب گھر ہے اور بروہمادینہو میں واقع ہے – کو احتیاطی طور پر خالی کرا لیا گیا۔[8]

معائنہ اور جرمانے[ترمیم]

ریاست میناس گیرائس میں کان کنی کے عمل کا معائنہ کرنے والے محکمے کی حالت یہ ہے کہ کہ نومبر 2015 میں ماریانا میں تباہی کے وقت آئندہ دو سال کے دوران میں 40 فیصد سرکاری ملازمین کی ریٹائرمنٹ کا خطرہ تھا۔[9] بروہما دینہو میں ڈیم کی تباہ کاری کا سانحہ ماریانا میں پیش آنے والے سانحے کے تین سال بعد پیش آیا۔ بروہما دینہو میں ڈیم ٹوٹنے کے ایک یوم بعد اِباما نے ویل کمپنی ہر 2 کروڑ 50 لاکھ برازیلی ریئل کا جرمانہ عائد کیا، جس کی وجہ سانحے کی شدّت تھی۔[10]

ماہرین کہتے ہیں کہ برازیل میں ریگولیٹری نظام ناکارہ ہے اور ریگولیشن میں متعدّد خلا پائے جاتے ہیں، جس کی وجہ سے مجرم سزا سے بچ جاتے ہیں۔[11] ماریانا میں تباہ کاری کے تین سال بعد جو کمپنیاں ماحولیاتی سانحات میں ملؤّث رہی ہیں، وہ جرمانے کی شکل میں 7 کروڑ 85 لاکھ برازیلی ریئل کا صرف 3.4 فیصد ادا کرتی ہیں۔[12]

بحالی[ترمیم]

صدر برازیل، جائیر بولسونارو نے سانحے کے ردِّ عمل میں تین وزیروں کو امدادی سرگرمیوں کی نگرانی کے لیے بھیجا ہے۔[13] میناس گیرائس کے گورنر، رومیو زیما نے متاثرین کی بحالی کے لیے ایک ٹاسک فورس کے قیام کا اعلان کیا، جس میں درجنوں فائر فائٹروں کو بروہما دینہو بھیجا گیا۔[14]

دوبارہ تباہی کے خطرات[ترمیم]

27 جنوری 2019ء کو بحالی کے آپریشن مختصر عرصے کے لیے معطّل کر دیے گئے، کیونکہ قریبی ڈیم کے زمیں بوس ہونے کے خطرات کے باعث قصبے کو خالی کرا لیا گیا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Buscas por vítimas entram no 9º dia em Brumadinho"۔ Globo (پُرتگالی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-02-02۔
  2. "Buscas por vítimas entram no 9º dia em Brumadinho"۔ Globo (پُرتگالی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-02-02۔
  3. Fabio Schvartsman (25 جنوری 2019ء)۔ "Announcement about Brumadinho breach dam" (پُرتگالی زبان میں)۔ Vale۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2019ء۔
  4. "Barragem de rejeitos da Vale se rompe e causa destruição em Brumadinho (MG)"۔ Correio Braziliense (پُرتگالی زبان میں)۔ 25 جنوری 2019ء۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 جنوری 2019ء۔
  5. "Clarifications regarding Dam I of the Córrego do Feijão Mine"۔ Vale۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 جنوری 2019ء۔
  6. "Barragem da Vale se rompe em Brumadinho, na Grande BH"۔ G1 Minas (پُرتگالی زبان میں)۔ 26 جنوری 2019ء۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2019ء۔
  7. "Brazil dam burst: 40 killed and 300 missing as mud engulfs town"، Sky۔
  8. Aiuri Rebello؛ Wellington Ramalhoso۔ "Barragem se rompe em Brumadinho e atinge casas; vítimas são levadas a BH"۔ UOL (پرتگالی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2019ء۔
  9. "Minas tem apenas quatro fiscais para vistoriar barragens e não há previsão de concurso"۔ Estado de Minas (پُرتگالی زبان میں)۔ 2015-11-19۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-01-26۔
  10. "Ibama multa Vale em R$ 250 milhões por tragédia em Brumadinho"۔ noticias.uol.com.br (پُرتگالی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-01-26۔
  11. "Empresas envolvidas em desastres ambientais quitaram só 3,4% de R$ 785 milhões em multas"۔ O Globo (پُرتگالی زبان میں)۔ 2018-05-06۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-01-26۔
  12. "Empresas envolvidas em desastres ambientais quitaram só 3,4% de R$ 785 milhões em multas"۔ O Globo (پُرتگالی زبان میں)۔ 2018-05-06۔ اخذ شدہ بتاریخ 2019-01-26۔
  13. Marcelo Ernesto۔ "Em mensagem, Bolsonaro lamenta rompimento de barragem em Brumadinho"۔ Estado de Minas (پرتگالی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2019ء۔
  14. Marcelo da Fonseca۔ "Governo de Minas cria força-tarefa para acompanhar barragem de Brumadinho"۔ Correio Braziliense (پرتگالی زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2019ء۔