بصری آگہی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

بصری آگہی (visual perception) جسے عام الفاظ میں دیکھنا کہتے ہیں، سے مراد کسی جاندار کی اس صلاحیت کی ہوتی ہے کہ جس کے ذریعہ قابلِ بصارت روشنی (visible light) کی مدد سے آنکھ تک پہنچنے والی معلومات کو یفسر (interpret) کیا جاتا ہے، یعنی ان معلومات کا تجزیہ اور پھر ان سے بننے والا بصری احساس اجاگر کیا جاتا ہے۔ اس دیکھنے کے عمل میں متعدد فعلیاتی اجزائے جسم ملوث ہوتے ہیں جو آپس میں منظم ہو کر بینائی کو ممکن بناتے ہیں، ان تمام فعلیاتی اجزاء کو مجموعی طور پر بصری نظام کہا جاتا ہے۔ بصارت کا انسانی ذہن پر جو قوی و براہ راست اثر ہوتا ہے اس کے پیش نظر یہ بصری نظام کو تشکیل دینے والے اعضاء نا صرف طب و بصریات بلکہ نفسیات، علم ادراک (cognitive science)، علم الاعصاب اور سالماتی حیاتیات میں بھی سرگرم تحقیق کا ہدف ہیں۔

مزید دیکھیے[ترمیم]