بمبئی بم دھماکے، 1993ء

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
1993ء بمبئی بم دھماکے
مقام ممبئی، مہارشڑا، بھارت
تاریخ 12 مارچ 1993
13:30–15:40 (UTC+05:30)
نشانہ ہوٹل، دفاتر کی عمارات، بنک، وغیرہ۔
حملے کی قسم کار بم دھماکے
ہلاکتیں 257[1]
زخمی 713[2]
مرتکبین ڈی کمپنی کے ساتھ وابستہ جرائم مافیا کے بھارت میں تربیت یافتہ پیشہ ور گروہ

بھارت میں 13 سلسلہ وار بم دھماکوں کا دہشت گردانہ واقعہ جو بمبئی (موجودہ، ممبئی) مہارشٹرا میں 12 مارچ 1993ء کو ہوئے۔[3] یہ بھارت کی تاریخ میں سب سے زیادہ تباہ کن مربوط بم دھماکے تھے۔[4]

خیال ظاہر کیا جاتا ہے کہ یہ بم دھماکے داؤد ابراہیم کے حکم سے یا امداد سے اس کے کارندے ٹائیگر میمن نے کیے۔ اور یا بھی خیال کیا جاتا ہے کہ یہ کام بیرون ملک کے چنگی چوروں (اسمگلروں) کی مدد سے کیا گيا جیسے حاجی احمد، حاجی عمر، توفیق جلیانوالہ اس کے ساتھ ساتھ پاکستانی چنگی چور، داؤد جٹ وغیرہ۔

بھارت عدالت عظمیٰ نے اس مقدمہ کے 20 سال بعد اپنا فیصلہ 21 مارچ 2013 کو دیا۔[5][6][7] تاہم، مقدمہ کے دو اہم ملزمان داؤد ابراہیم اور ٹائیگر میمن ابھی تک گرفتار نہیں کیے گئے۔[8] مہارشٹرا حکومت نے یعقوب میمن (ٹائیگر میمن کا بھائی) کو اس کی 53 ویں سالگرہ کے دن 30 جولائی 2015ء کو پھانسی دینے کا تہیہ کر لیا ہے۔[9][10][11] پھانسی سے اپنے آپ کو بچانے کے لیے یعقوب میمن نے آخری کوشش کی اور رحم کی درخواست دی،[12] مگر اسے رد کر دیا گیا۔ جبکہ سماجی کارکنان اور وکیلون کے ایک گروہ نے یعقوب میمن کی سزائے موت کو عمر قید میں بدلنے کی درخواست پیش کی ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Bomb Blasts in Mumbai, 1993–2006"۔ Institute for Conflict Management۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2007۔
  2. Monica Chadha (12 ستمبر 2006)۔ "Victims await Mumbai 1993 blasts justice"۔ BBC News۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2007۔
  3. "Mumbai bombings: 400 detained"۔ CNN۔ 13 جولا‎ئی 2006۔ مورخہ 2 مارچ 2007 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2007۔
  4. Thomas Hansen۔ Wages of Violence: Naming and Identity in Postcolonial Mumbai۔ Princeton, New Jersey: مطبع جامعہ پرنسٹن۔ صفحہ 125۔ آئی ایس بی این 978-0-691-08840-2۔
  5. "Ruling on the 1993 Mumbai bomb blasts, Supreme Court sends a strong anti-terror message"۔ Times of India۔ 22 مارچ 2013۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 مارچ 2013۔
  6. "Death sentence upheld in 1993 Indian bombing that killed 257"۔ Los Angeles Times۔ 21 مارچ 2013۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 مارچ 2013۔
  7. "1993 Mumbai bomb blasts: Finally, justice for 257 victims"۔ Times of India۔ 22 مارچ 2013۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 مارچ 2013۔
  8. "1993 blasts: 98 punished, big fish still free"۔ Hindustan Times۔ 22 مارچ 2013۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 مارچ 2013۔
  9. "Supreme Court allots less than five minutes to Yakub Memon's final appeal of his death sentence"۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  10. "The many wrong messages that hanging Yakub Memon would send"۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  11. "Maharashtra's 53rd birthday gift to Yakub Memon: Death by hanging"۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  12. After SC denies relief, Yakub Memon submits mercy petition to Maharashtra governor | India News - Times of India