بھارت کی ریاستوں اور یونین علاقوں کی فہرست بلحاظ آبادی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

بھارت میں کل 28 ریاستیں اور 8 یونین علاقے ہیں۔[1] 2011ء تک بھارت کی کل آبادی 1.2 ارب ہے اور بلحاظ آبادی یہ چین کے بعد دوسرا بڑا ملک ہے۔ بھارت کے پاس ت ممالک عالمی رقبہ کا کل 2.4% حصہ ہے اور یہاں عالمی آبادی کا کل 17.5% حصہ مقیم ہے۔[2] سندھ و گنگ کا میدان کا میدان دنیا کے زرخیز ترین میدانی علاقوں میں سے ایک ہے اور اسی لیے اسے دنیا کے آباد ترین خطوں میں سے ایک شمار کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ مشرقی ساحلی میدان اور مغربی ساحلی میدان بشمول سطح مرتفع دکن بھی بھارت کے زرخیز علاقوں میں سے ایک ہے۔ مغربی راجستھان میں صحرائے تھار دنیا کے آباد ترین صحراؤں میں سے ایک ہے۔ شمال اور شمال مشرقی بھارت میں واقع سلسلہ کوہ ہمالیہ زرخیز وادیوں اور سرد ریگستان پر مشتمل ہے۔ ان علاقوں میں طبعی رکاوٹوں کے سبب آبادی نسبتا کم ہے۔[3]

بھارت کی ریاستیں، اور مرکزی زیر اقتدار علاقے۔

مردم شماری[ترمیم]

بھارت کی کثافتِ آبادی

پہلی مردم شماری آزادی ہند سے قبل برطانوی ہند کے صوبے اور علاقے میں 1857ء میں کی گئی تھی۔ 1947ء میں آزادی کے بعد ہر دس سال میں مردم شماری ہوتی ہے۔ آزاد بھارت کی پہلی مردم شماری 1951ء میں ہوئی۔[4] مردم شماری رجسٹرار جنرل اینڈ سینسس کمشنر، وزارت داخلی امور، حکومت ہند کی زیر نگرانی ہوتی ہے اور کسی بھی فیڈرل حکومت کی ذریعے کیا جانے ولا سب سے بڑا انتظامی عمل ہے۔[5] موجودہ آبادیاتی شماریات بھارت میں مردم شماری، 2011ء سے ماخوذ ہے۔[6] 2011ء تا 2011ء کی دہائی میں بھارت کی آبادی کی شرح نمو 2.15 فیصد سے گھٹ کر 1.76 فیصد ہو گئی۔[6] تازہ مردم شماری کے مطابق گزشتہ دہائی میں دادرا و نگر حویلی میں 55.1 فیصد کے ساتھ سب سے زیادہ آبادی میں اضافہ ہوا ہے۔ اس کے بعد میگھالیہ (27.8 فیصد) اور اروناچل پردیش (25.9) کا نمبر آتا ہے۔ سب سے کم اضافہ ناگالینڈ (-0.5) میں ہوا ہے۔[7]

بھارت میں کل 641,000 آباد گاوں ہیں اور ملک کی 72.2 انہیں گاوں میں رہتی ہے[7] ان میں سے 145,000 گاوں کا حجم 500–999 لوگ، 130,000 گاوں کا حجم 1000–1999 اور 128,000 گاوں کا حجم 200–499 لوگ ہے۔ 3,961 گاوں ایسے ہیں جہاں 10,000 یا اس سے زیادہ لوگ رہتے ہیں۔[2] بھارت کی 27.8 فیصد آبادی شہری علاقوں میں رہتی ہے۔ بھارت میں کل 5,100 قصبے اور 380 شہری علاقے ہیں۔[8] 1991–2001 کی دہائی میں چھوٹے قصبوں اور گاوں سے بڑے شہروں کی جانب ہجرت میں اضافہ ہوا ہے۔ اسی وجہ سے شہروں کی آبادی میں زبردست اضافہ ہوا ہے۔[9][10] سب سے زیادہ ترک وطن مہاراشٹر (2.3 ملین) سے ہوا ہے۔ اس کے بعد دہلی (1.7 ملین)، گجرات (بھارت) (0.68 ملین) اور ہریانہ (0.67 ملین)۔ اتر پردیش (−2.6 ملین) اور بہار (بھارت) (−1.7 ملین) ہیں۔[11] بھارت کی 5 ریاستوں اتر پردیش، مہاراشٹر، بہار (بھارت)، مغربی بنگال اور مدھیہ پردیش کی آبادی ملک کی کل آبادی کا 47.90 فیصد ہے۔[6] 2001ء کے مقابلہ میں 2011ء میں بھارت کا انسانی جنسی تناسب 933 سے بڑھ کر 940 ہو گیا، [6] مگر 2011ء کی مردم شماری میں بچوں کے جنسی تناسب میں خاصی تنزلی ہوئی۔ بچوں کا جنسی تناسب بچوں میں 0 تا 6 عمر میں عورت کی تعداد بلحاظ 1000 مرد ہیں۔[6] پنجاب، بھارت، ہریانہ، ہماچل پردیش، گجرات (بھارت)، تمل ناڈو، میزورم جزائر انڈمان و نکوبار جیسی ریاستوں میں بچوں کے جنسی تناسب میں اضافہ ہوا ہے۔[6] بچوں کا جنسی تناسب 2001ء میں 927 سے گھٹ کر 2011ء میں 914 رہ گیا۔[6] 2 جون 2014ء کو تیلانگانہ بنا اور اس کی مردم شماری کے اعداد و شمار آندھر پردیش سے الگ کر دیے گئے۔[12]

مرکزی زیر اقتدار علاقے[ترمیم]

  1. جزائر انڈمان اور نکوبار
  2. چندی گڑھ
  3. دادرا اور نگر حویلی
  4. دمن و دیو
  5. لکشادیپ
  6. پانڈی چیری

قومی دار الحکومت:

  1. دہلی

ریاستیں اور آبادی[ترمیم]

درجہ ریاست یا یونین علاقہ آبادی آبادی (%) دیائی میں اضافہ
(2001–2012)
دیہی آبادی فیصد دیہی شہری آبادی فیصد شہری رقبہ[13] کثافت[ا] جنسی تناسب
1 اتر پردیش 199,812,341 16.51% 20.2% 155,317,278 77.73% 44,495,063 22.27% 240,928 کلومیٹر2 (93,023 مربع میل) 828/کلو میٹر2 (2,140/مربع میل) 912
2 مہاراشٹر 112,374,333 9.28% 20.0% 61,556,074 54.78% 50,818,259 45.22% 307,713 کلومیٹر2 (118,809 مربع میل) 365/کلو میٹر2 (950/مربع میل) 929
3 بہار 104,099,452 8.6% 25.4% 92,341,436 88.71% 11,758,016 11.29% 94,163 کلومیٹر2 (36,357 مربع میل) 1,102/کلو میٹر2 (2,850/مربع میل) 918
4 مغربی بنگال 91,276,115 7.54% 13.8% 62,183,113 68.13% 29,093,002 31.87% 88,752 کلومیٹر2 (34,267 مربع میل) 1,029/کلو میٹر2 (2,670/مربع میل) 953
5 مدھیہ پردیش 72,626,809 6% 16.3% 52,557,404 72.37% 20,069,405 27.63% 308,245 کلومیٹر2 (119,014 مربع میل) 236/کلو میٹر2 (610/مربع میل) 931
6 تمل ناڈو 72,147,030 5.96% 15.6% 37,229,590 51.6% 34,917,440 48.4% 130,051 کلومیٹر2 (50,213 مربع میل) 555/کلو میٹر2 (1,440/مربع میل) 996
7 راجستھان 68,548,437 5.66% 21.3% 51,500,352 75.13% 17,048,085 24.87% 342,239 کلومیٹر2 (132,139 مربع میل) 201/کلو میٹر2 (520/مربع میل) 928
8 کرناٹک 61,095,297 5.05% 15.6% 37,469,335 61.33% 23,625,962 38.67% 191,791 کلومیٹر2 (74,051 مربع میل) 319/کلو میٹر2 (830/مربع میل) 973
9 گجرات 60,439,692 4.99% 19.3% 34,694,609 57.4% 25,745,083 42.6% 196,024 کلومیٹر2 (75,685 مربع میل) 308/کلو میٹر2 (800/مربع میل) 919
10 آندھرا پردیش 49,577,103[ب] 4.1% 11.0% 34,966,693 70.53% 14,610,410 29.47% 162,968 کلومیٹر2 (62,922 مربع میل) 303/کلو میٹر2 (780/مربع میل) 993
11 اوڈیشا 41,974,219 3.47% 14.0% 34,970,562 83.31% 7,003,656 16.69% 155,707 کلومیٹر2 (60,119 مربع میل) 269/کلو میٹر2 (700/مربع میل) 979
12 تلنگانہ 35,003,674 2.89% 13.58% 21,395,009 61.12% 13,608,665 38.88% 112,077 کلومیٹر2 (43,273 مربع میل) 312/کلو میٹر2 (810/مربع میل) 988
13 کیرلا 33,406,061 2.76% 4.9% 17,471,135 52.3% 15,934,926 47.7% 38,863 کلومیٹر2 (15,005 مربع میل) 859/کلو میٹر2 (2,220/مربع میل) 1,084
14 جھارکھنڈ 32,988,134 2.73% 22.4% 25,055,073 75.95% 7,933,061 24.05% 79,714 کلومیٹر2 (30,778 مربع میل) 414/کلو میٹر2 (1,070/مربع میل) 948
15 آسام 31,205,576 2.58% 17.7% 26,807,034 85.90% 4,398,542 14.10 % 78,438 کلومیٹر2 (30,285 مربع میل) 398/کلو میٹر2 (1,030/مربع میل) 958
16 پنجاب 27,743,338 2.29% 13.89% 17,344,192 62.52% 10,399,146 37.48 % 50,362 کلومیٹر2 (19,445 مربع میل) 551/کلو میٹر2 (1,430/مربع میل) 895
17 چھتیس گڑھ 25,545,198 2.11% 22.6% 19,607,961 76.76% 5,937,237 23.24% 135,191 کلومیٹر2 (52,198 مربع میل) 189/کلو میٹر2 (490/مربع میل) 991
18 ہریانہ 25,351,462 2.09% 19.9% 16,509,359 65.12% 8,842,103 34.88% 44,212 کلومیٹر2 (17,070 مربع میل) 573/کلو میٹر2 (1,480/مربع میل) 879
NCT UT1 دہلی 16,787,941 1.39% 21.2% 419,042 2.5% 16,368,899 97.5% 1,484 کلومیٹر2 (573 مربع میل) 11,297/کلو میٹر2 (29,260/مربع میل) 868
UT2 جموں و کشمیر (یونین علاقہ) 12,267,032 1.01% 23.6% 9,064,220 73.89% 3,202,812 26.11% 42,241 کلومیٹر2 (16,309 مربع میل)[پ] 297/کلو میٹر2 (770/مربع میل) 890
19 اتراکھنڈ 10,086,292 0.83% 18.8% 7,036,954 69.77% 3,049,338 30.23% 53,483 کلومیٹر2 (20,650 مربع میل) 189/کلو میٹر2 (490/مربع میل) 963
20 ہماچل پردیش 6,864,602 0.57% 12.9% 6,176,050 89.97% 688,552 10.03% 55,673 کلومیٹر2 (21,495 مربع میل) 123/کلو میٹر2 (320/مربع میل) 972
21 تریپورہ 3,673,917 0.3% 14.8% 2,712,464 73.83% 961,453 26.17% 10,486 کلومیٹر2 (4,049 مربع میل) 350/کلو میٹر2 (910/مربع میل) 960
22 میگھالیہ 2,966,889 0.25% 27.9% 2,371,439 79.93% 595,450 20.07% 22,429 کلومیٹر2 (8,660 مربع میل) 132/کلو میٹر2 (340/مربع میل) 989
23 منی پور[ت] 2,570,390 0.21% 18.6% 1,793,875 69.79% 776,515 30.21% 22,327 کلومیٹر2 (8,621 مربع میل) 122/کلو میٹر2 (320/مربع میل) 992
24 ناگالینڈ 1,978,502 0.16% −0.6% 1,407,536 71.14% 570,966 28.86% 16,579 کلومیٹر2 (6,401 مربع میل) 119/کلو میٹر2 (310/مربع میل) 931
25 گووا 1,458,545 0.12% 8.2% 551,731 37.83% 906,814 62.17% 3,702 کلومیٹر2 (1,429 مربع میل) 394/کلو میٹر2 (1,020/مربع میل) 973
26 اروناچل پردیش 1,383,727 0.11% 26.0% 1,066,358 77.06% 317,369 22.94% 83,743 کلومیٹر2 (32,333 مربع میل) 17/کلو میٹر2 (44/مربع میل) 938
UT3 پدوچیری 1,247,953 0.1% 28.1% 395,200 31.67% 852,753 68.33% 479 کلومیٹر2 (185 مربع میل) 2,598/کلو میٹر2 (6,730/مربع میل) 1,037
27 میزورم 1,097,206 0.09% 23.5% 525,435 47.89% 571,771 52.11% 21,081 کلومیٹر2 (8,139 مربع میل) 52/کلو میٹر2 (130/مربع میل) 976
UT4 چندی گڑھ 1,055,450 0.09% 17.2% 28,991 2.75% 1,026,459 97.25% 114 کلومیٹر2 (44 مربع میل) 9,252/کلو میٹر2 (23,960/مربع میل) 818
28 سکم 610,577 0.05% 12.9% 456,999 74.85% 153,578 25.15% 7,096 کلومیٹر2 (2,740 مربع میل) 86/کلو میٹر2 (220/مربع میل) 890
UT5 دادرا و نگر حویلی و دمن و دیو 585,764 0.05% 55.1% 243,510 41.57% 342,254 58.43% 603 کلومیٹر2 (233 مربع میل) 970/کلو میٹر2 (2,500/مربع میل) 711
UT6 جزائر انڈمان و نکوبار 380,581 0.03% 6.9% 237,093 62.3% 143,488 37.7% 8,249 کلومیٹر2 (3,185 مربع میل) 46/کلو میٹر2 (120/مربع میل) 876
UT7 لداخ 274,000 0.02% 17.8% 43,840 16% 230,160 84% 96,701 کلومیٹر2 (37,336 مربع میل)[ٹ] 2.8/کلو میٹر2 (7.3/مربع میل) 853
UT8 لکشادیپ 64,473 0.01% 6.3% 14,141 21.93% 50,332 78.07% 32 کلومیٹر2 (12 مربع میل) 2,013/کلو میٹر2 (5,210/مربع میل) 946
کل بھارت 1,210,569,573 100% 17.7% 833,463,448 68.84% 377,106,125 31.16% 3,287,240 کلومیٹر2 (1,269,210 مربع میل)[ث] 382/کلو میٹر2 (990/مربع میل) 940

ملاحظات[ترمیم]

  • For working out density of India and the State of Jammu and Kashmir, the data excludes area of 78,114 sq. km. under the Pakistani control, 5,180 sq. km. under China control and 37,555 sq.km. under Chinese control in Ladakh district.[14][15]
  • This includes 120,849 کلومربع میٹر (46,660 مربع میل) of territory controlled by Pakistan but claimed by India along with اکسائی چن and ماورائے قراقرم علاقہ، territories administered by the چین but claimed by بھارت۔ It also includes Indian-administered اروناچل پردیش claimed by چین۔
  • Excludes Mao-Maram, Paomata, and Purul sub-divisions of سیناپتی ضلع of Manipur.

مزید دیکھیے[ترمیم]

حواشی[ترمیم]

  1. For determining population density of India and the State of Jammu and Kashmir, the data excludes areas claimed by India but controlled by Pakistan (78,114 km2) and China (5,180 km2 in دریائے شکسگام and 37,555 km2 under اکسائی چن and other areas)۔[14][15]
  2. Calculated by subtracting the population of Telangana from Andhra Pradesh's Census 2011 figures.
  3. This includes 83,294 کلومربع میٹر (32,160 مربع میل) of territory controlled by پاکستان، but claimed by India along with دریائے شکسگام territory administered by the چین۔
  4. Excludes Mao-Maram, Paomata, and Purul sub-divisions of سیناپتی ضلع of Manipur.
  5. This includes 37,555 کلومربع میٹر (14,500 مربع میل) of اکسائی چن territory and other areas along the eastern border of Ladakh administered by the چین، but claimed by India
  6. This includes 120,849 کلومربع میٹر (46,660 مربع میل) of territory controlled by پاکستان، but claimed by India along with اکسائی چن and دریائے شکسگام، territories administered by the چین۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "India at a Glance: Profile". Government of India. اخذ شدہ بتاریخ 30 ستمبر 2013. 
  2. ^ ا ب "Area and Population". Government of India (2001). Census of India. اخذ شدہ بتاریخ 26 اکتوبر 2008. 
  3. "India – General Profile, Land Use Classification and Land Use Pattern" (PDF). قومی مرکز اطلاعات (NIC). وزارت جنگلات، ماحولیات و موسمی تبدیلی، حکومت ہند (MoEF). 14 مئی، 2006 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 12 دسمبر 2008. 
  4. "Census Organisation of India". Government of India (2001). Census of India. دسمبر 1, 2008 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 دسمبر 2008. 
  5. "Brief history of census". Government of India (2001). Census of India. اخذ شدہ بتاریخ 26 اکتوبر 2008. 
  6. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج "India Census 2011, Provisional Population Totals" (PDF). فروری 18, 2015 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. 
  7. ^ ا ب http://www.thehindu.com/multimedia/archive/00517/India_Census_2011___517160a.pdf
  8. "Urban Agglomerations (UAs) & towns". Government of India (2001). Census of India. اخذ شدہ بتاریخ 04 دسمبر 2008. 
  9. Shinde، Swati (13 Sep 2008). "Migration rate to city will dip". Times of India. 05 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 دسمبر 2008. 
  10. "Develop towns to stop migration to urban areas: economist". Chennai, India: Hindu. Dec 3, 2005. اخذ شدہ بتاریخ 08 دسمبر 2008. 
  11. "Migration". Government of India (2001). Census of India. اخذ شدہ بتاریخ 26 اکتوبر 2008. 
  12. "T-party today: India's 29th state Telangana is born – Times of India ►". اخذ شدہ بتاریخ 15 ستمبر 2018. 
  13. "Area of India/state/district". Government of India (2001). Census of India. اخذ شدہ بتاریخ 27 اکتوبر 2008. 
  14. ^ ا ب "J&K 2011 Population density census" (PDF). 
  15. ^ ا ب "Religion PCA 2011 J&K census". 

بیرونی روابط[ترمیم]