مندرجات کا رخ کریں

بھاونا (کنڑ اداکارہ)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
بھاونا (کنڑ اداکارہ)
 

معلومات شخصیت
پیدائش 1970ء کی دہائی  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دوانگیر   ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت بھارت   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ ادکارہ ،  ٹیلی ویژن اداکارہ   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

نندنی رمنا ، جو اپنے اسٹیج کے نام بھاونا رمنا کے نام سے مشہور ہیں، ایک ہندوستانی اداکارہ ہیں جو بنیادی طور پر کنڑ فلم انڈسٹری میں کام کرتی ہیں۔ ایک بھرتناٹیم رقاصہ، اس نے تین کرناٹک اسٹیٹ فلم ایوارڈز حاصل کیے ہیں اور شانتی میں کام کیا، ایک فلم جس نے گنیز بک آف ریکارڈز میں داخلہ لیا۔ بھاونا رمنا ہوم ٹاؤن پروڈکشن کی ڈائریکٹر ہیں، ایک پروڈکشن ہاؤس جو ڈانس اور میوزک شوز کا انعقاد کرتا ہے۔ [1] [2]

کیریئر[ترمیم]

بھاونا کی پیدائش نندنی رمنا کے نام سے ہوئی تھی اس سے پہلے کہ اس کا نام کوڈلو رام کرشنا نے تبدیل کیا تھا۔ [3] [4] بھاونا نے کلاسیکل رقاصہ بننے کی تربیت حاصل کی اور ابتدا میں اداکاری کا کوئی ارادہ نہیں تھا۔ "فلمیں صرف اتفاق سے ہوتی ہیں۔" اس نے تقریباً دس سال تک بھرتناٹیم سیکھا اور اسٹیج کوریوگرافر کے طور پر کیریئر کی خواہش ظاہر کی۔ اس نے فلموں میں اپنے کیریئر کا آغاز ماربیلے سے کیا، ایک ٹولو فلم، جب اسے کرشنپا اپپور نے کاسٹ کیا جس نے "مجھے ایک شادی میں دیکھا اور میری شکل سے خوش ہوئے۔" [5] فلم نے اچھا کام نہیں کیا، لیکن بھاونا کو کنڑ فلم پروڈیوسروں نے نوٹ کیا۔ میریبلے کے بعد وہ کنڑ فلم نمبر 1 میں ایک پولیس اہلکار کے کردار کے لیے مزید نظر آئیں۔ جیسا کہ اس نے آگے بڑھنا آسان پایا اس کی غیر ضروری فلم نی مدیدہ ملیگے نے اسے تلخ تجربہ کیا۔ [6]

بھاونا کو سیتارام کارنتھ کی میوزیکل ہٹ فلم چندر مکھی پراناسکھی میں کاسٹ کیا گیا تھا، جہاں اس نے رمیش اراوند اور پریما کے ساتھ اداکاری کی تھی۔ [6] بھاونا نے کویتا لنکیش کی دیویری کی تھی جس کو اروندن پراسکر ایوارڈ ملا تھا۔ راشٹرگیتی میں اسے معروف ہدایت کار کے وی راجو کا ویمپ رول ملا۔ وہ اس پیشکش کی مذمت کرنے کی پوزیشن میں نہیں تھی، کیونکہ ڈائریکٹر ایک مضبوط تھا۔ ملیالم فلموں کے ہدایت کار اور سنیماٹوگرافر دنیش بابو نے انھیں رمیش اراوند کے مدمقابل ایک کردار کی پیشکش کی، لیکن بھاونا کی بد قسمتی دیپاولی ، جس میں وشنو وردھن کی اداکاری بھی باکس آفس پر ناکام رہی۔ [6] وشنو وردھن کے پروا میں اس کا ایک گانا بھی تھا۔ [7] بھاونا نے فلم نیناگی میں آئٹم ڈانس کیا۔ [8] بھاونا نے کویتا لنکیش کی دوسری فلم الیماری میں کام کیا۔ [9] [10] نیشنل فلم ڈیولپمنٹ کارپوریشن کے لیے بنائی گئی Alemaari کا کئی نامور فلمی میلوں میں پیش نظارہ کیا گیا۔ [11] لیکن فلمز ڈویژن نے ان کی فلم ریلیز نہیں کی۔ [12] شانتی ، ایک آف بیٹ کنڑ فلم جس کی ہدایت کاری نامور مصنف، برگور رام چندرپا نے کی ہے، نے گینز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں داخل ہونے والی دوسری ہندوستانی فلم ہونے کا نادر اعزاز حاصل کیا ہے۔ [13] [14] اس نے گنیز بک میں ''ایک داستانی فلم میں سب سے کم اداکار'' کے زمرے میں نام درج کیا ہے۔ اسے ریاستی ایوارڈ کے لیے دوسری بہترین فلم قرار دیا گیا۔ [15] بھاونا ممبئی چلی گئیں اور یہاں تک کہ ایک بالی ووڈ فلم فیملی بھی کی جس میں امیتابھ بچن نے بھی کام کیا۔ [16]

ٹیلی ویژن[ترمیم]

  • گودریج گیم آڈی
  • لائف چینج ماڈی [17]
  • رامچاری۔

سیاست[ترمیم]

بھاونا نے 2013ء کے اسمبلی انتخابات میں کانگریس کے امیدواروں کے لیے دیگر حلقوں کے علاوہ داونگیرے میں مہم چلائی تھی۔ 2012 میں، اس نے لوک سبھا کے چکمگلور ضمنی انتخاب میں کانگریس کے جے پرکاش ہیگڑے کے لیے مہم چلائی تھی۔ 2018ء میں بھاونا رمنا نے باضابطہ طور پر بی جے پی میں شمولیت اختیار کی [18]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Bhavana Ramanna Nandini - Director information and companies associated with | Zauba Corp"۔ 26 اپریل 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 اپریل 2014 
  2. "- Kannada News"۔ 24 ستمبر 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ 
  3. "When a rose turns a lily"۔ Deccan Herald۔ 25 جون 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2013 
  4. "In Karnataka Politics, It is Star 'Caste' That Counts, Not Stardom"۔ News18۔ 5 April 2018۔ 31 اکتوبر 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 31 اکتوبر 2019 
  5. Archana Shenoy (29 September 2002)۔ "Oomph & attitude"۔ Deccan Herald۔ 20 اگست 2003 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 ستمبر 2020 
  6. ^ ا ب پ "Bhavana"۔ Sify۔ 09 جون 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2013 
  7. "He was humble and never treated anyone like a newcomer"۔ Rediff۔ 14 نومبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2013 
  8. "Jogula"۔ 01 فروری 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2013 
  9. "Fighting the formula"۔ The Hindu۔ 01 جولا‎ئی 2003 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2013 
  10. "Alemaari Story in Pictures"۔ Rediff۔ 01 فروری 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2013 
  11. "Every film is a work of art"۔ Rediff۔ 01 فروری 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2013 
  12. "ENCORE!"۔ The Hindu۔ 07 ستمبر 2004 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2013 
  13. "Shanti gets into the Guinness Book"۔ The Hindu۔ 16 جولا‎ئی 2005 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2013 
  14. Srikanth Srinivasa (2 July 2012)۔ "Meet Kannada cinema's actress of substance"۔ Rediff.com۔ 06 اگست 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2013 
  15. "An experiment with peace"۔ The Hindu۔ 16 اگست 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2013 
  16. "'The right people don't approach me'"۔ The Times of India۔ 11 اپریل 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2013 
  17. "Television beckons Bhavana"۔ Daily News & Analysis۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 مارچ 2013 
  18. "Udupi: Bypoll Campaign Goes Glamourous [sic] as Ramya, Bhavana, Lokesh Join in"۔ 27 اپریل 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 اپریل 2014