بھوٹان کے قومی اسمبلی انتخابات، 2018ء

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بھوٹانی قومی اسمبلی انتخابات، 2018ء

→ 2013ء 15 ستمبر (پہلا مرحلہ)
18 اکتوبر (دوسرا مرحلہ)
2023ء ←

قومی اسمبلی کی کُل 47 نشستیں
اکثریت کے لیے 24 نشستیں درکار

  پہلی بڑی جماعت دوسری بڑی جماعت
  Lotay Tshering.jpg Pema Gyamtsho.jpg
قائد لوتے شیرنگ پیما گیامتشو
جماعت د ن ش د ف ش
قائد از سال 2013ء 2013ء
قائد کی نشست جنوبی تھمپو چھوئے کھور-تانگ
آخری انتخابات 17.04%، 0 نشستیں 45.12%، 15 نشستیں
پچھلی نشستیں 0 15

وزیر اعظم قبل انتخاب

شیرنگ توبگے
پ ڈ پ

منتخب وزیر اعظم

اعلان ہوگا

بھوٹان میں 18 اکتوبر 2018ء کو قومی اسمبلی کے انتخابات کا انعقاد ہوگا۔ انتخابات کی تاریخ کا اعلان الیکشن کمیشن بھوٹان کے سربراہ نے بھوٹان کے بادشاہ کی منظوری کے بعد قومی ٹیلی ویژن کے ٹی وی پروگرام کے ذریعے کیا۔ ان انتخابات میں قومی اسمبلی کے 47 ارکان کا چناؤ ہو گا۔ انہیں عام انتخابات کا نام بھی دیا گیا ہے۔[1]

پہلا مرحلہ[ترمیم]

اس عام انتخابات کے مرحلے سے پہلے 15 ستمبر 2018ء کو ابتدائی انتخابات کا مرحلہ چار متمنی سیاسی جماعتوں کے درمیان میں ہوا۔ جس کے بعد صرف دروک نیامروپ شوگپا اور بھوٹان پیس اینڈ پراسپرٹی پارٹی 18 اکتوبر 2018ء کو ہونے والے عام انتخابات کی اہل ہیں۔ اقتدار میں رہ چکی پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی غیر متوقع طور پر پہلے مرحلے ہی سے باہر ہو گئی اور دروک نیامروپ شوگپا نے سب سے زیادہ حاصل کیے۔[2]

نتائج[ترمیم]

جماعت پہلا مرحلہ دوسرا مرحلہ
ووٹ % ووٹ % نشستیں +/–
دروک نیامروپ شوگپا 92,722 31.85
بھوٹان پیس اینڈ پراسپرٹی پارٹی 90,020 30.92
پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی 79,883 27.44 0 –32
بھوٹان کووین نیام پارٹی 28,473 9.78 0 نئی
کُل 291,098 100
مندرج ووٹر/ٹرن آؤٹ 438,663 66.36
ذریعہ: الیکشن کمیشن بھوٹان

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Bhutan announces dates for 3rd general elections"۔ بزنس اسٹینڈرڈ۔ 19 اگست 2018۔ 
  2. Bhutan PM’s party ousted in election دی ہندو، 15 ستمبر 2018