بھوپندر سنگھ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بھوپندر سنگھ
ذاتی معلومات
پیدائش 8 اپریل 1939ء (عمر 80 سال)پٹیالہ, برطانوی ہند
اصناف پس پردہ گلوکار
پیشے غزل سرا, موسیقار
آلات گٹار
سالہائے فعالیت 1964 سے آج تک

بھُوپینْدْر سِنگھ (جنْم: 8 اپْرَیل 1939، پٹِیالہ) ہِنْدی فِلْموں کے گلوکار اور موسیقار ہَیں۔ بھارت میں پیدا ہوئے بھُوپینْدْر بہُت اچھّا گِٹار بھی بجاتے ہَیں۔ اُنکی زوجہ مِتالی سِنگھ بھی ایک گلوکارہ ہَیں۔ دونوں نے مِلکر سنگِیت کے میدان میں بالخصوص غزل سرائی میں نمایاں مقام حاصل کیا ہَے۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

بھُوپینْدْر سِنہ کا جنْم برطانوی ہند میں پنجاب صوبے کی پٹیالہ رِیاست میں 8 اپْرَیل 1939 کو ہُوا تھا۔ اُنکے والد پْروپھیسر اور پنجابی سِکھ تھے۔ حالانکہ وہ بہُت اچھّے موسیقار تھے لیکِن سنگِیت مَوسِیقی سِکھانے کے ماملے میں بیحد سخت اُسْتاد تھے۔ اپنے والد کی سخت مِزاجی دیکھکر شُرُوعاتی دَور میں کم سن بھُوپِنْدر کو سنگِیت سے نفرت سی ہو گئی تھی۔ ایک وہ بھی زمانہ تھا جب بھُوپِنْدر سنگِیت کو بِلْکُل بھی پسنْد نہِیں کرتا تھا۔[1]

کَیرِیئر[ترمیم]

دھِیری دھِیرے بھُوپِنْدر میں غزل سرائی کے لیے پسندیدگی مائل ہوئی اَور وہ اچھّی غزلیں گانے لگا۔ شُرُوع شُرُوع میں بھُوپینْدْر نے آکاشوانِی پر اپنا پروگرام پیش کِیا۔ آکاشوانی پر اُسکی پیش کش دیکھکر دُوردرْشن کینْدْر، دلی میں اُسے موقع مِلا۔ وہِیں سے اُس نے وایلِن اَور گِٹار بھی سِیکھا۔ سنْ 1968 میں موسیقارمدن موہن نے آل اِنْڈِیا ریڈِیو پر اُسکا پروگرام سُنکر دِلّی سے ممبئی بُلا لِیا۔ سب سے پہلے اُسے فِلْم حقیقت میں مَوقع مِلا جہاں اُس نے" ہوکے مجبُور مُجھے اُس نے بُلایا ہوگا" غزل گائی۔ حالانکہ یہ غزل تو ہِٹ ہوئی لیکِن بھُوپینْدْر کو اِس سے کوئی خاص پہچان نہِیں مِلی۔ حالانکِہ وہ کم بجٹ کی فِلْموں کے لِیے برابر گاتے رہے۔[1]

اِسکے باد بھُوپینْدْر نے سْپینِش گِٹار اَور ڈْرم پر کُچھ غزلیں پیش کِیں۔ اِس سے قبل وہ 1968 میں اپنی لِکھی اَور گائی ہوئی غزلوں کی ایلپی لا چُکے تھے۔ مگر اِس نئے تجربےکو جب اُنھوں نے دُوسری ایلپی میں پیش کِیا تو سب کا دھْیان اُنکی جانب متوجہ ہوا۔ اِس کے بعد " وہ جو شہر تھا" نام سے 1978 میں جاری تِیسری ایلپی سے اُنہیں خاصی شہرت مِلی۔ گِیتکارگُلزار نے اِس ایلپی کے گانے 1980 میں لِکھے تھے۔

ذاتی زندگی[ترمیم]

بھوپندر سنگھ اپنی اہلیہ مِتالی سنگھ کے ساتھ ایک گانے کی ریہرسل کرتے ہوئے

1980ء کے دہے میں بھُوپینْدْر نے بنگلہ دیش کی ایک ہِنْدُو گلوکارہ مِتالی سِنگھ سے شادی کر لی۔ اُسکے بعد اُنہوں نے پس پردہ گلوکاری رشتہ مضبوط کر لِیا۔ مِتالِی-بھُوپینْدْر سِنگھ کے نام سے دونوں کی یکساں گلوکاری میں اُنھوں نے کئی اچھّے پروگرام پیش کِیے جِن سے اُن کی شہرت کو چار چاند لگ گئی۔ لیکِن جَیسا اُنھوں نے خود کہا ہَے "کبھی کِسی کو مُکمّل جہاں نہِیں مِلتا"، اُن دونوں کے یہاں کوئی اولاد نہِیں ہے۔[2]

بیہترِین نغمے[ترمیم]

بھُوپینْدْر سِنگھ کی گائی ہوئی بیہترِین یادگار گِیت و غزل اِس طرح ہَیں:

  • دِل ڈھُونڈھتا ہَے،
  • دو دِوانے اِس شہر میں،
  • نام گُم جائیگا،
  • کروگے یاد تو،
  • مِیٹھے بول بولے،
  • کبھی کِسی کو مُکمّل جہاں نہِیں مِلتا،
  • کِسی نذر کو تیرا اِنْتظار آج بھی ہَے
  • درودِیوار پہ ہسرت سے نذر کرتے ہَیں،
    خوش رہواہل وطن ہم تو سفر کرتے ہَیں [3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب "Down Memory Lane: Bhupinder Singh"۔ مورخہ 21 جون 2008 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 جنوری 2014۔
  2. "Bhupinder – Hauntingly 'Hummable'"۔ مورخہ 2006-05-03 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 جنوری 2014۔
  3. "درودیوار سے نظر کرتے ہیں"۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 جنوری 2014۔