بیجنگ دار الحکومت بین الاقوامی ہوائی اڈا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بیجنگ دار الحکومت بین الاقوامی ہوائی اڈا
Beijing Capital International Airport

北京首都国际机场
BeijingCAH.svg
PEK-ZBAA鸟瞰图.png
خلاصہ
ہوائی اڈے کی قسم عوامی
عامل بیجنگ دار الحکومت بین الاقوامی ہوائی اڈا کمپنی لمیٹڈ
خدمت بیجنگ
محل وقوع چیاویانگ ضلع، بیجنگشونیئی ضلع
مرکز برائے
فوکس شہر برائے
بلندی سطح سمندر سے 116 فٹ / 35 میٹر
متناسقات 40°04′21″N 116°35′51″E / 40.07250°N 116.59750°E / 40.07250; 116.59750متناسقات: 40°04′21″N 116°35′51″E / 40.07250°N 116.59750°E / 40.07250; 116.59750
ویب سائٹ en.bcia.com.cn
نقشہs
سی اے اے سی ایئرپورٹ چارٹ
سی اے اے سی ایئرپورٹ چارٹ
PEK is located in بیجنگ
PEK
PEK
PEK is located in چین
PEK
PEK
PEK is located in ایشیا
PEK
PEK
PEK is located in زمین
PEK
PEK
رن وے
سمت لمبائی سطح
میٹر فٹ
18L/36R 3,810 12,500 اسفالٹ
18R/36L 3,445 11,302 اسفالٹ
01/19 3,810 12,500 کنکریٹ[1]
اعداد و شمار (2018)
مسافر 100,980,000
ہوائی جہاز نقل و حرکت 606,086
کارگو کے ٹن 1,831,167
اقتصادی اور سماجی اثر $6.5 بلین & 571.7 ہزار[2]

بیجنگ دار الحکومت بین الاقوامی ہوائی اڈا یا بیجنگ کیپٹل انٹرنیشنل ایئرپورٹ (انگریزی: Beijing Capital International Airport) (چینی: 北京首都国际机场) بیجنگ کا بنیادی بین الاقوامی ہوائی اڈا ہے۔ یہ بیجنگ کے شہر کے مرکز کے شمال مشرق میں 32 کلومیٹر (20 میل) کے فاصلے پر ضلع چیاویانگ کے ایک محصورہ میں واقع ہے۔ اس محصورہ علاقے کے ارد گرد ضلع شونیئی واقع ہے۔ [4] ہوائی اڈا ایک حکومتی کمپنی بیجنگ دار الحکومت بین الاقوامی ہوائی اڈا کمپنی لمیٹڈ کی ملکیت ہے اور اسی کے زیر انتظام بھی ہے۔ اس کا آیاٹا ایئرپورٹ کوڈ پی ای کے (PEK) ہے جو شہر کے سابقہ نام پیکنگ کے نام کی وجہ سے ہے۔

گزشتہ دہائی میں بیجنگ کیپٹل کا بطور مصروف ترین ہوائی اڈوں کی درجہ بندی میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ 2009ء میں مسافر نقل و حمل اور مجموعی ٹریفک نقل و حرکت کے لحاظ سے یہ ایشیا کا مصروف ترین ہوائی اڈا بن گیا تھا۔ 2010ء سے مسافر نقل و حمل کے لحاظ سے یہ دنیا کا دوسرا مصروف ترین ہوائی اڈا ہے۔

ہوائی اڈے پر 557،167 طیاروں کی نقل و حمل پر درج (اڑان اور لینڈنگ) کی گئی جس کے مطابق 2012ء میں یہ دنیا کا چھٹا مصروف ترین ہوائی اڈا تھا۔ [3] کارگو نقل و حمل کے لحاظ سے بھی بیجنگ ہوائی اڈے نے بہت تیزی سے ترقی کی ہے۔ 2012ء میں کارگو نقل و حمل کے لحاظ سے ہوائی اڈا دنیا کا تیرہواں مصروف ترین ہوائی اڈا بنا گیا تھا جہاں 1،787،027 ٹن سامان کی نقل و حمل ہوئی۔ [3]

تاریخ[ترمیم]

بیجنگ ہوائی اڈے کا افتتاح 2 مارچ 1958ء کو ہوا۔ ہوائی اڈے کی ایک چھوٹا سی ٹرمینل عمارت تھی جو کہ آج بھی موجود ہے تاہم اب یہ وی آئی پی اور چارٹر پروازوں کے استعمال کی جاتی ہے۔ 1 جنوری 1980ء کو ایک نیا "ٹرمینل 1" کھولا گیا جس کا رنک رنگ سبز ہے۔ اس میں 10 سے 12 طیاروں کے لیے گودیاں موجود ہیں۔ یہ ٹرمینل 1950ء کے دہائی میں بننے والے ٹرمینل سے کافی بڑا تھا تاہم 1990ء کی دہائی کے وسط میں یہ ناکافی ہو گیا۔ 1999ء آخر میں عوامی جمہوریہ چین کے بانی کی 50 ویں سالگرہ کے موقع پر ہوائی اڈے نے توسیع کی گئی اور نئے "ٹرمینل 2" کا افتتاح کیا گیا۔ 2007ء میں توسیع کا ایک نیا دور شروع ہوا۔ 29 اکتوبر 2007ء کو پہلے سے موجود دو رن ویز کی بھیڑ کو کم کرنے کے لیے تیسرے رن وے کا افتتاح کیا گیا۔ [5] فروری 2008ء میں بیجنگ اولمپکس کے موقع ہر "ٹرمینل 3" مکمل کیا گیا۔

چین اور بیجنگ دار الحکومت بین الاقوامی ہوائی اڈے کی پہلی بین الاقوامی پرواز اسلام آباد سے پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز کی تھی۔

شماریات[ترمیم]

نقل و حمل بلحاظ سال
مسافر گزشتی سال کے مقابلے میں بندیلی نقل و حرکت کارگو
(ٹن)
2007[6] 53,611,747 399,209 1,416,211.3
2008[6] 55,938,136 Increase2.svg4.3% 429,646 1,367,710.3
2009[7] 65,375,095 Increase2.svg16.9% 487,918 1,475,656.8
2010[8] 73,948,114 Increase2.svg13.1% 517,585 1,551,471.6
2011[9] 78,674,513 Increase2.svg6.4% 533,166 1,640,231.8
2012[3] 81,929,359 Increase2.svg4.1% 557,167 1,787,027
2013[10] 83,712,355 Increase2.svg2.2% 567,759 1,843,681
2014[11] 86,128,313 Increase2.svg2.9% 581,952 1,848,251
2015 89,900,000 Increase2.svg4.4% 594,785 1,843,543
2016 94,393,000 Increase2.svg5.6% 606,086 1,831,167
2017 95,786,296 Increase2.svg1.5% 597,259 2,029,583

تصاویر[ترمیم]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Boeing.com Beijing Capital International Airport وثق شدہ بتاریخ 16 جنوری 2013 در وے بیک مشین
  2. "Beijing Capital International airport – Economic and social impact"۔ Ecquants۔ مورخہ 24 مئی 2014 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 7 ستمبر 2013۔
  3. ^ ا ب پ ت "31 مارچ 2014 Preliminary world airport traffic and rankings 2013" (PDF)۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 اپریل 2014۔
  4. Map from Maptown.cn. (Archive)
  5. "Beijing Airport's third runway opens on Monday"۔ اخذ شدہ بتاریخ 1 جون 2015۔
  6. ^ ا ب ۔ Civil Aviation Administration of China https://web.archive.org/web/20110524111655/http://www.caac.gov.cn/I1/K3/200903/P020090316404943831137.xls۔ مورخہ 24 مئی 2011 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 مارچ 2011۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  7. ۔ Civil Aviation Administration of China https://web.archive.org/web/20110718220856/http://www.caac.gov.cn/I1/K3/201002/P020100205397375196564.xls۔ مورخہ 18 جولا‎ئی 2011 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 مارچ 2011۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  8. ۔ Civil Aviation Administration of China https://web.archive.org/web/20110923003400/http://www.caac.gov.cn/I1/K3/201103/P020110315385388029023.xls۔ مورخہ 23 ستمبر 2011 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 مارچ 2011۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  9. (چینی زبان میں)۔ Civil Aviation Administration of China https://web.archive.org/web/20120417030817/http://www.caac.gov.cn/I1/K3/201203/P020120321570053265625.xls۔ مورخہ 17 اپریل 2012 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 مارچ 2012۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  10. (چینی زبان میں)۔ Civil Aviation Administration of China https://web.archive.org/web/20140325050130/http://www.caac.gov.cn/I1/K3/201403/P020140324403180721900.xls۔ مورخہ 25 مارچ 2014 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 مارچ 2013۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)
  11. (چینی زبان میں)۔ Civil Aviation Administration of China https://web.archive.org/web/20150419022627/http://www.caac.gov.cn/I1/K3/201504/P020150403321490187521.xls۔ مورخہ 19 اپریل 2015 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2015-04-03۔ |title= غیر موجود یا خالی ہے (معاونت)