بیعت عقبہ ثانیہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

13 نبوی میں حج کے موقعے پر مدینہ منورہ کے 75 آدمیوں نے عقبہ کے مقام پرحضور (ص) کے ہاتھ پر بیعت کی۔ اسے بیعت عقبہ ثانیہ کہتے ہیں۔ مدینے کے مسلمانوں نے رسول اللہ کو دعوت دی کہ آپ اور آپ کے رفقا مدینہ تشریف لے چلیں۔ وہاں اسلام کی تبلیغ کے لیے زیادہ کام ہوسکے گا۔ رسول اللہ نے آمادگی ظاہر کی۔ حضرت عباس بھی وہاں موجود تھے۔ مگر ابھی اسلام نہیں لائے تھے۔ انھوں نے کہا ’’محمد اپنے خاندان میں معزز ہیں ہم نے ان کی آج تک مدد کی ہے اور دشمن کے سامنے سینہ سپر رہے ہیں۔ اب یہ تمہارے ساتھ جانا چاہتے ہیں۔ اگر تم مرتے دم تک ان کا ساتھ دے سکو تو بہتر ورنہ ابھی سے جواب دے دو۔ اس پر بنو خزرج کے سرداروں نے دوبارہ وفاداری کا حلف اٹھایا۔